• ☚ گیس بحران بڑھتے ہی ایل پی جی گیس ری فلنگ کا دھندہ چمک اٹھا
  • ☚ گجرات: ڈی ایس پیز کے دفاتر میں ویڈیو لنک کانفرنس روم قائم
  • ☚ گجرات:ایف آئی اے کو 10سال سے مطلوب 2 انسانی اسمگلرگرفتار
  • ☚ راجہ ارشد محمود جماعت اسلامی کی فری لیگل کمیٹی کے صدر مقرر
  • ☚ گجرا ت پریس کلب اور بار کابینہ کے اعزاز میں ظہرانہ
  • ☚ ایلیٹ سٹوڈنٹس فیڈریشن کے عہدیداران کا اجلاس‘ مختلف امور پر گفتگو
  • ☚ چوہدر ی بنگش خاں کی دعوت ولیمہ ‘ اہم شخصیات کے اکٹھ میں تبدیل
  • ☚ حاجی یوسف گل کا دورہ گجرات بار‘ نومنتخب کابینہ کیلئے نیک خواہشات
  • ☚ پنجاب گروپ آف کالجز کے زیر اہتمام طالبات کیلئے ایلیٹ ٹیسٹ
  • ☚ اقساط پرموٹر سائیکلیں فروخت کرنیوالوں نے وصولی کیلئے غنڈے پال لیے
  • ☚ عمران پانچ سال پورے نہیں کریں گے، اتنا دیوار سے نہ لگائو کہ عوام میرے ہاتھ میں نہ رہیں، آصف زرداری
  • ☚ گوشوارے جمع نہ کرنے پر،فواد چوہدری اور4وزراء سمیت332ارکان پارلیمنٹ کی رکنیت معطل
  • ☚ آپ لوگ کام نہیں کرسکتے، ملک سے محبت بھی کم ہوگئی، چیف جسٹس اسد عمر پر برہم
  • ☚ قرضے آرمی چیف کی وجہ سے ملے، عمران کا کمال نہیں، فوجی عدالتوں سے دہشت گردی ختم ہوئی، شہبازشریف
  • ☚ شریف فیملی سے ایک اور خاتون کی سیاسی انٹری
  • ☚ ’دوائی نہ دینے والی حکومت نوکریاں کیا دے گی‘
  • ☚ بزم غنیمت وشریف کنجاہی کی نئی تنظیم سازی کردی گی صدرسخی کنجاہی جنرل سیکرٹری ڈاکٹرمحمدعبدالمالک ہونگے
  • ☚ عوام مہنگائی کے سونامی میں ڈوب گئے،اسلام آباد پر چڑھائی کی توحکومتی تابوت میں آخری کیل ہوگی،بلاول بھٹو
  • ☚ ایف اے ٹی ایف نے پاکستانی موقف تسلیم کرلیا
  • ☚ علیمہ خان کی امریکی ریاست نیو جرسی میں بھی جائیداد نکل آئی
  • ☚ یورپ وا مریکہ میں شدید برف باری کا سلسلہ جاری
  • ☚ یوٹیوب نے متنازع ٹامی رابنسن کے اکائونٹ پر اشتہارات معطل کردیئے
  • ☚ برطانوی ڈرائیوروں کو نوڈیل بریگزٹ وارننگ دیدی گئی
  • ☚ 2افرادلوٹ مار کے دوران چاقو گھونپے جانے کے بعد اسپتال میں زیر علاج
  • ☚ یورپی یونین سے نکلنے کے متعلق نیا ریفرنڈم کرایا جائے،نکولا سٹرجن
  • ☚ برطانوی حکومت کو پارلیمنٹ میں شکست،یورپی یونین سے نکلنے کے متعلق نیا ریفرنڈم کرایا جائے،نکولا سٹرجن
  • ☚ تھریسامے اپنی حکومت بچانے میں کامیاب، تحریک عدم اعتماد 19ووٹوں سے ناکام
  • ☚ ویسٹ مڈلینڈز پولیس نے 16 ہزار600 پرتشدد جرائم ریکارڈ ہی نہیں کئے
  • ☚ مانچسٹر،ابوظہی جانے والی پرواز کے کیبن میں سموک پر ایمرجنسی لینڈنگ
  • ☚ بریگزٹ پر حکومت کی ڈیل نامنظور، 3 دن میں پلان B پیش کرنا ہوگا
  • ☚ پاکستانی اداکارہ ایمان علی بھی شادی کی تیاریوں میں مصروف
  • ☚ ملک کے ناموراداکارگلاب چانڈیو انتقال کرگئے
  • ☚ کراچی میں میوزیکل کنسرٹس کا دور واپس آگیا
  • ☚ انوشکا شرما کو تمباکو کے اشتہار میں کام کرنا مہنگا پڑگیا
  • ☚ فلم سے کیوں نکالا؟ تاپسی پنو پھٹ پڑیں
  • ☚ ایشین جونیئر اسکواش، پاکستان کی کامیابی
  • ☚ خواتین کرکٹ ٹیم کا تربیتی کیمپ شروع
  • ☚ کراچی میں کھیلنے کا تجربہ ناقابل یقین تھا، ڈومینی
  • ☚ میراتھن ریس کے روٹ کی منظوری
  • ☚ نئے ہاکی عالمی چیمپئن بیلجیم پر میچز فکس کرنے کا شبہ
  • آج کا اخبار

    نواز شریف کو پاکستانی سیاست سے کوئی نہیں نکال سکتا،یہ باب بند ہوگیا،پاکستانی کمیونٹی

    Published: 09-07-2018

    Cinque Terre

    لوٹن:برطانیہ میں مقیم پاکستانی کمیونٹی شخصیات نے احتساب عدالت کی جانب سے سابق وزیراعظم اور مسلم لیگ ن کے قائد محمد نوازشریف کو دی گئی سزا پر مختلف آرا کا اظہار کیا ہے۔ لوٹن میں مقیم پاکستانی اور کشمیری کمیونٹی سے جنگ سروے کے دوران جب میاں نوازشریف کو سزا ہوجانے کے بعد پاکستان کی سیاست میں نوازشریف کے کردار کے بارے میں پوچھا گیا تو ملا جلا رحجان پایا گیا۔ راجہ زاروب خان پاکستان مسلم لیگ (ن) لوٹن کے صدر نے اس فیصلے کے پاکستان کی سیاست پر انتہائی منفی اثرات پڑنے کا خدشہ ظاہر کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ میاں نواز شریف کو وزارت، صدارت یا کسی عہدے سے ہٹانے سے فرق نہیں پڑتا۔ میاں نواز شریف عوام کے دلوں میں رہتے ہیں اس لئے انہیں پاکستان کی سیاست سے نہیں نکالا جاسکتا اور ایسا سوچنے والے خوابوں کی دنیا میں رہتے ہیں۔ میاں نواز شریف اور پاکستان ایک دوسرے کے لئے لازم و ملزوم ہیں پاکستان تحریک انصاف لوٹن کے حافظ طارق کے مطابق میاں نواز شریف اور ان کے خاندان نے کرپشن کی اور اس کی سزاعدالتوں نے دی اب ن لیگ یا نواز شریف کا مقدر صرف جیل ہے۔ اپنی ناجائز کمائی کو بچانے کے لئے میاں نواز شریف سیاست کی آڑ میں چھپ رہے ہیں۔عام انتخابات میں عوام واضح کردیں گے کہ کون پاکستان کا ہمدرد ہے اور کس کو صرف اپنی دولت سے غرض ہے۔ میاں نواز شریف اور ان کی (ن) لیگ 25جولائی کے بعد ڈھونڈنے کو نہیں ملے گی۔ عبدالغفور میاں نواز شریف کو سزا دینا ایک سازش قرار دیتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف اگر جیل جاتے ہیں تو اس سے ان کے چاہنے والوں میں اضافہ ہوگا اور یقیناً مسلم لیگ (ن) کو ہمدردی کا ووٹ بھی ملے گا۔ یوں میاں نواز شریف نیلسن منڈیلا کا کردار ادا کرنے میں کامیاب ہوجائیں گے۔ میاں نواز شریف اس سے قبل قید اور جیل کو دیکھ چکے ہیں۔صفدر بخاری اس فیصلے کو تاریخی کہتے ہیں کہ پاکستان میں اس سے قبل سزائیں صرف کمزوروں کے لئے تھیں اس فیصلے سے پاکستان میں عدالتیں آزاد ہوگئی ہیں۔ طاقتور اور کمزور ہر ایک کے لئے ایک جیسا قانون ہو تو معاشرہ ترقی کرتا ہے۔ میاں نواز شریف اپنی جائیدادوں کی تفصیل دینے میں ناکامرہے تو انہیں سزا دی گئی۔اب پاکستان ایک نئی سمت کی طرف بڑھے گا۔ میاں نواز شریف کے جیل جانے سے طاقتور اور کرپٹ عناصر کو ایک سخت پیغام گیا ہے جس سے اب کوئی بھی کرپشن کرنے سے پہلے سوچے گا۔ میاں نواز شریف جس طرح نیلسن منڈیلا یا بھٹو بننے کا خواب دیکھ رہے ہیں ایسا کچھ نہیں ہونے والا بلکہ ن لیگ کا وجود خطرے میں لگ رہا ہے۔ عمران یوسف کا کہنا ہے کہ میاں نواز شریف نے تین بار وزارت عظمیٰ کا عہدے پاس رکھنے کے باوجود عوام کے لئے کچھ ایسا نہیں کیا جو انہیں لوگ یاد رکھیں۔ انہوں نے صرف اپنے بنک بیلنس کا خیال رکھا اور وہی اب ان کی رسوائی کا سبب بن رہا ہے۔ میاں نواز شریف کا نہ صرف سیاست سے باب ختم ہوچکا ہے بلکہ نشان عبرت بن جائے گا۔ اب عوام الیکشن میں اپنے درست نمائندے کا چناؤ کریں تاکہ پاکستان کی ترقی کا درست سمت میں تعین ہوسکے۔ بیڈ فورڈ سے کونسلر محمد نواز نے کہا کہ جس طرح نواز شریف کی فیملی کے خلاف فیصلہ آیا ہے انہیں اب واپس سیاست میں نہیں آنا چاہئے۔ وہ لوگ جو پہلے حکومت کر چکے ہیں اور آزمائے جا چکے ہیں ان کی جگہ اب وہ لوگ جن کا مقصد خالصتاً پاکستان اور عوام کی خدمت کرناہو ان کو موقع دیا جانا چاہئے۔ انھوں نے مزید کہا کہ خواہ وہ عمران خان ہو ںیا جو کوئی بھی ہو پاکستان اور پاکستان کے عوام کے مفاد میں کام کرے ملک کو گرداب سے نکال کر کامیابی کی طرف لے جائے۔ راجہ امجد فاروق ایڈووکیٹ نے کہا کہ نواز شریف اوران کی فیملی کے خلاف اس قسم کے فیصلے سے وہ نہیں سمجھتے کہ انکی سیاست ختم ہو گئی ہے۔ ابھی ایک فیصلہ آنا باقی ہے وہ ہے عوام کا فیصلہ ہے۔ پاکستان کو اسوقت ایک مضبوط جمہو ریت کی ضرورت ہے تاکہ ملک پروان چڑھ سکے۔ محمد عثمان نیایک سوال کے جواب کہا کہ وہ سمجھتے ہیں کہ اس فیصلہ سے نواز شریف کی سیاست کو اتنا زیادہ نقصان نہیں ہو گا۔ وقت کے ساتھ ساتھ حالات بھی تبدیل ہوتے رہتے ہیں ماضی میں بھی نواز شریف کی سیاست پر پابندی لگائی گئی تھی لیکن وہ دوبارہ سیاست میں آنے میں کامیاب ہو گئے تھے۔ مختار چوہدری نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ وہ نہیں سمجھتے کہ میاں برادران کا اب سیاست میں کوئی اچھا مستقبل ہو گا۔ خاص کر اس فیصلہ کے بعد نواز شریف کی سیاست ختم ہو کر رہ جائے گی۔ انھوں مزید نے کہا کہ پاکستان میں جتنے بھی کرپٹ لوگ ہیں خواہ ان کا تعلق کسی بھی جماعت سے ہو سب پر اسی طرح مقدمات چلا کر سزا دینی چاہئے تا کہ آئندہ آنے والے سیاستدان ملک و قوم کو لوٹنے کی بجائے ملک و قوم کی بقا کے لیے کام کریں۔