• ☚ ربیع الاول کا مہینہ اللہ کی رحمتیں سمیٹنے کا ذریعہ ہے :چوہدری راشد پنوں
  • ☚ لین دین کے معاملے میں تاجروں کو 7لاکھ کا جعلی چیک تھما دیا گیا
  • ☚ چوہدری مونس الٰہی عوامی توقعات پر پورا اتریں گے : محمد یونس قمر
  • ☚ چوہدری برادران عوامی مفادات کے بہترین محافظ ہیں:امیر حسن شاہ
  • ☚ ربیع الاول رحمتوں اور برکتوں والا مہینہ ہے: محمد افضل بٹ
  • ☚ ریونیو ٹیموں کے سموگ پھیلانے والے زمینداروں کیخلاف چھاپے
  • ☚ گجرات: لڑائی جھگڑے کے واقعات’ چھریاں چلنے سے متعدد افراد زخمی
  • ☚ چوہدری مظفر خالد کے صاحبزادے چوہدری اسامہ خالد کی دعوت ولیمہ
  • ☚ چوہدری برادران عوامی توقعات پر پورا اترینگے : چوہدری وسیم سہیل
  • ☚ کنجاہ: مرکزی میلاد کمیٹی کے زیر اہتمام20نومبر کومشعل بردار جلوس نکالا جائیگا
  • ☚ حکومت کا نواز، شہباز اور مریم کے خلاف مزید 4 کیس نیب کو بھجوانے کا اعلان
  • ☚ چیئرمین سینیٹ، وزیراطلاعات آمنے سامنے، معافی نہ مانگی تو فواد چوہدری سینیٹ کے موجودہ سیشن میں نہ آسکیں گے، سنجرانی
  • ☚ سپریم کورٹ کیساتھ کھڑے ہیں،عدالتی فیصلوں پر سمجھوتہ نہیں ہوگا،عمل نہ کیا جائے تو ریاست نہیںچل سکتی،آج ایسے انکشاف کروںگا میڈیابھی انجوائے
  • ☚ نیب کا چھاپہ،سابق سرکاری افسر کے گھر سے 33 کروڑ برآمد
  • ☚ ادائیگیوں کا بحران ختم، 12 ارب ڈالر کا خلا تھا، 6 ارب سعودیہ باقی رقم چین سے ملی، وزیرخزانہ
  • ☚ معاملات احتساب عدالت بھیجنا نہیں چاہئے تھا، چیف جسٹس، نوا زشریف فیملی کی رہائی کا فیصلہ ختم کرنے کے سوا کوئی چارہ نہیں، سپریم کورٹ
  • ☚ پاک روس اسٹریٹجک تعاون بڑھانے پر اتفاق، عمران خان کی روسی وزیراعظم سے ملاقات
  • ☚ نوشہرہ خوشحال ڈگری کالج میں مولانا سمیع الحق کی نمازجنازہ ادا کر دی گئی
  • ☚ لاہور کے مختلف علاقوں میں بوندا باندی، سردی میں اضافہ، سموگ میں کمی
  • ☚ سربراہ جمعیت علمائے اسلام (س) مولانا سمیع الحق قاتلانہ حملے میں شہید
  • ☚ خشوگی کیس،سعودی پبلک پراسیکیوٹر5مشتبہ ملزمان کیلئے سزائے موت کا خواہش مند
  • ☚ تھریسامے برطانیہ کیلئے بدترین ڈیل پر مذاکرات کر رہی ہیں، فیصل رشید
  • ☚ اخراج پلان منظوری، کابینہ میں بغاوت، بریگزٹ منسٹر سمیت 8 وزرا و معاونین مستعفی، وزارت عظمیٰ نہیں چھوڑ رہی، تھریسامے
  • ☚ بریگزٹ ڈیل برطانیہ کو تقسیم کردے گی، ڈی یوپی لیڈر ارلین فوسٹر
  • ☚ تھریسامے کے بریگزٹ پلان سے تمام کنٹرول یورپی یونین کے پاس رہے گا
  • ☚ برطانوی کابینہ کا 5 گھنٹے طویل اجلاس، بریگزٹ ڈیل کی منظوری دیدی گئی
  • ☚ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج نے مظالم کی انتہا کردی، راجہ فاروق حیدر
  • ☚ بریگزٹ پر ایک اور ریفرنڈم کرایا جانا چاہیے، جو جانسن
  • ☚ بریگزٹ کے بعد برطانوی معیشت میں تیز ی سے ترقی
  • ☚ لوٹن کونسل میں بن سروسز کا سابقہ شیڈول بحال کرنے کا مطالبہ مسترد، پاکستانیوں سمیت ایشیائی کمیونٹی کو مایوسی
  • ☚ شاہ رخ خان نے اپنی انتھک محنت کا سہرا سروج خان کے سر باندھ دیا
  • ☚ دپیکا پڈوکون کے شادی کے دوپٹے پرلکھا گیا پیغام سوشل میڈیا پروائرل
  • ☚ جسٹن بیبر نے امریکی ماڈل ہیلی بالڈوین سے شادی کی تصدیق کردی
  • ☚ برج عقرب سے تعلق رکھنے والے سپر اسٹارز
  • ☚ وِل اسمتھ‘‘ ہالی ووڈ کا لاجواب اداکار
  • ☚ ہاکی کھلاڑیوں کو بھارتی ویزے مل گئے،کوچز کو انتظار
  • ☚ بنگلہ دیش ڈھاکا ٹیسٹ میں 218 رنز سے کامیاب، سیریز برابر
  • ☚ زون اور ریجنز بتائیں کتنے کھلاڑی نکالے،پیسوں کا حساب دیں،میانداد
  • ☚ ڈھاکاٹیسٹ میچ فیصلہ کن مرحلے میں داخل
  • ☚ قائد اعظم ٹرافی،سوئی ناردرن نے لاہور کو ایک اننگز سےہرادیا
  • آج کا اخبار

    نوازشریف کی وطن واپسی سے جمہوریت مستحکم ہوگی، عوام اب تبدیلی چاہتے ہیں، کمیونٹی رہنماؤں کی مختلف آراء

    Published: 11-07-2018

    Cinque Terre

    بولٹن/ مانچسٹر/ اولڈہم/ بری: احتساب عدالت کا فیصلہ آنے کے بعد یہاں کے سیاسی اور سماجی حلقوں میں پاکستان کے سابق وزیراعظم میاں نوازشریف کی وطن واپسی اور25جولائی کو ہونے والے انتخابات پر سیاسی اثرات کے حوالے سے مختلف قیاس آرائیاں کی جارہی ہیں۔ ایک فریق کا خیال ہے کہ میاں نوازشریف واپس نہیں جائیں گے اور اپنی اہلیہ کی بیماری کو طول دے کر کسی بھی سیاسی بارگین ہونے کا انتظار کریں گے، جبکہ دوسرے فریق کا خیال ہے کہ میاں نوازشریف کو اگر سیاست میں زندہ رہنا ہے تو انہیں پاکستان جاکر گرفتاری دینی چاہئے۔ میاں نواز شریف کے جانے سے پاکستان کا سیاسی پس منظر کیا ہوگا یہ ایک ایسا سوال ہے جو ہر پاکستانی کے ذہن میں اٹکا ہوا ہے۔ نمائندہ جنگ نے سروے کے دوران مختلف لوگوں سے رائے معلوم کی جس پر بولٹن کے سماجی رہنما ڈاکٹر سرور اشرف نے اپنے خیال کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ میاں نوازشریف سزا ہونے کے بعد سیاست میں تنہا ہوگئے ہیں۔ میاں برادران کی راہیں جدا ہو چکی ہیں اور میاں نوازشریف اڈیالہ جیل میں ایک رات بھی مشکل سے گزاریں گے۔ میاں نواز شریف کو اگر سیاست میں زندہ رہنا ہے اور پاکستان کی سیاسی شطرنج پر کھیلنا ہے تو انہیں گرفتاری دینا ہوگی، ورنہ مسلم لیگ ن کا یہ شیر عوام کی نظروں میں گیدڑ بن جائے گا اور آنے والے انتخابات میں اس کے منفی اثرات مرتب ہوں گے۔ سماجی رہنما راجہ عباس خان کا کہنا تھا کہ مسلم لیگ ن ایک پختہ اور حالات کا مقابلہ کرنے والی جماعت بن چکی ہے۔ میاں نوازشریف کے لیے اب جیل یا جلاوطن کی صعوبتیں برداشت کرنا کوئی بڑی بات نہیں۔ ان کی وطن واپسی سے مسلم لیگی کارکنوں کے حوصلے بلند ہوں گے، جس سے مسلم لیگ ن ایک بار پھر انتخابات میں کامیاب ہوکر ملک کی ایک نئی سیاسی سمت کا تعین کرے گی۔ مانچسٹر میں کمیونٹی رہنما بلیک سٹون کے ایم ڈی چوہدری طاہر صدیق نے کہا ہے کہ نوازشریف کی پاکستان واپسی خوش آئند عمل ہے، انہیں پاکستان جاکر عوامی اور پاکستانی عدالتوں میں اپنے مافی الضمیر کو واضح کرنا چاہئے، ان کی واپسی سے ان کی پارٹی مسلم لیگ ن کو بھی فائدہ ہوگا اور پاکستان میں حالیہ انتخابات میں بھی اور شعور پیدا ہوگا۔ تاہم کسی کو بھی قانون کو ہاتھ میں نہیں لینا چاہیے۔ استاد محمد صفدر کا کہنا ہے کہ میاں نوازشریف عدالت سے استثنا لے کر برطانیہ اپنی بیمار اہلیہ کی عیادت کے لیے آئے تھے، انہیں وطن واپس جاکر عدالتوں کا سامنا کرنا چاہیے۔ ان کی واپسی سے مسلم لیگ ن بھی الیکشن میں متحرک ہوگی۔ ان کا وطن واپس جانا پاکستان میں احتساب عمل اور قانون کی بالادستی کے لیے بھی بہترین ثابت ہوگا۔ استاد محمد صفدر نے کہا کہ پاکستان میں انتخابات کو صاف و شفاف ہونا چاہئے اور تمام سیاست دانوں کو انتخابی مہم چلانے کی آزادی دی جانی بھی ضروری ہے۔ چوہدری نصر اللہ خان رہنما پیپلز پارٹی برطانیہ نے کہا ہے کہ میاں نوازشریف سیاسی لیڈر ہیں۔ سیاسی لیڈر کی زندگی ان کے اپنے وطن اور عوام کے ساتھ رہنے میں ہی ہے، یہ میاں نوازشریف کا احسن اقدام ہے۔ ماضی میں پیپلز پارٹی کے مرد آہن سابق صدر پاکستان آصف زرداری بھی جیلوں میں رہے ہیں۔ مسلم لیگ ن نارتھ ویسٹ کے چیف پیٹرن ہارون کھٹانہ نے کہا ہے میاں نوازشریف کی وطن واپسی سے پاکستان میں انتخابات میں نئی روح پڑے گی، مسلم لیگ ن کے کارکنوں، لیڈروں میں نیا ولولہ و جوش بیدار ہوگا اور انتخابات غیر جانبدار ہونے کے امکانات بڑھ جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ احتساب کا عمل بھی غیر جانبدار ہونا چاہیے، صرف سیاستدان ہی نہیں بلکہ تمام کرپٹ افراد کا احتساب کیا جانا چاہیے، ہارون کھٹانہ، میاں نواز شریف کے گھر پر حملہ قابل مذمت اقدام ہے، چوہدری عبدالکریم چیئرمین مسلم لیگ ن نارتھ ویسٹ نے کہا ہے کہ میاں نوازشریف سچے محب وطن پاکستانی ہیں۔ وہ اپنے خلاف مقدمات میں آخری دن تک پابندی کے ساتھ عدالتی کارروائی میں کھڑے رہے، اب اہلیہ کی بیماری کے لیے وہ برطانیہ آئے تھے۔ ان کی واپسی میاں نوازشریف کی سچائی اور حب الوطنی کو ظاہر کرے گی اور جمہوریت کے لیے ان کی قربانی سنہری حروف میں لکھی جائے گی۔ میاں نوازشریف کی سخت سزاؤں کے بعد وطن واپسی کا فیصلہ قومی مفاد اور انتخابات کے لیے بہت اہمیت کا حامل ہے۔ اس سے جمہوریت کو استحکام ملے گا اور مسلم لیگ ن کی اہمیت بڑھے گی۔ اولڈہم کی کمیونٹی نے میاں نوازشریف کی نیب کورٹ کے فیصلے کے بعد وطن واپسی کے فیصلے کو ملکی سیاست میں اثرانداز ہونے کے امکان کو مسترد کردیا ہے۔ راجہ عبدالمعروف کا کہنا تھا کہ میاں نوازشریف کا وطن واپسی کا فیصلہ بہت اچھا ہے تاہم ملکی سیاست پر اس کے اثرات کم ہی ہونگے۔ عوامی سوچ اور شعور تبدیل ہو چکا ہے ووٹ کی عزت کی بات کرنے والے ووٹ کی حرمت کو نہیں بچا سکے، میاں مظفر علی کا کہنا تھا کہ نوازشریف کا عدالتوں کا اور سزا کا سامنا کرنے کا فیصلہ وقت کی اہم ضرورت ہے اگر میاں صاحب ایسا نہیں کرتے تو ان کی سیاست تقریباً ختم ہوجاتی۔ میاں صاحب کے بیانیہ کو تقویت ملی ہے لیکن سزا کے فیصلہ پر بھی عوامی اور پارٹی ردعمل کمزور نظر آیا۔ اسی ردعمل کے تناظر میں میاں نوازشریف کی وطن واپسی پر بھی سیاست میں ہلچل نظر نہیں آتی۔ نون لیگ کے بڑے بڑے نام یا تو پارٹی چھوڑ چکے ہیں یا انہیں بھی مقدمات اور نااہلی کا سامنا ہے ایسی بے یقینی کی صورتحال میں وطن واپسی کا فیصلہ خوش آئند لیکن اثرانداز ہونے کے امکانات نہایت کم ہیں۔ ملک الطاف کا کہنا تھا کہ نیب کورٹ کے فیصلہ کے بعد نوازشریف کی سیاست ختم ہوگی ہے۔ وطن واپسی کا فیصلہ سیاست کو بچانے کی ایک آخری کوشش ہے لیکن اس سے عوامی تاثر پر کوئی خاص اثر نہیں پڑے گا۔ عوام اب تبدیلی کی خواہاں ہے اور میاں نوازشریف کی وطن واپسی پر بھی عوامی رائے تبدیل نہیں ہوگی۔ بری میں مقیم پاکستانی اور کشمیری کمیونٹی شخصیات نے نوازشریف کی پاکستان واپسی اور انتخابی مہم پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ ایون فیلڈ ریفرنس میں اگرچہ میاں نوازشریف، ان کی صاحبزادی مریم نواز اور داماد کیپٹن محمد صفدر کو سزا ہوچکی ہے۔ گرفتاری کی صورت میں بھی مسلم لیگ ن کو آمدہ عام انتخابات میں فائدہ پہنچ سکتا ہے۔ مسلم کانفرنس برطانیہ کے صدر چوہدری بشیر رٹوی کا کہنا تھا کہ یقیناً نوازشریف کی ملک میں موجودگی سے ن لیگ کا ووٹ بینک برقرار رہے گا۔ پاکستانی عوام باشعور ہیں۔ سابق وزیراعظم کرپشن اور منی لانڈرنگ میں ملوث پائے گئے ہیں۔ 25جولائی کو ووٹرز قوم کے خون پسینے کی کمائی لوٹنے والوں کو مسترد کرکے سبق سکھائیں گے۔ ن لیگ یوتھ ونگ کے رہنما راجہ احمد نے کہا کہ قوم اچھی طرح جانتی ہے کہ نوازشریف کو دیوار سے لگاکر اس کو فائدہ پہنچایا گیا۔ مخالفین نوازشریف کو ٹارگٹ کرکے انتخابی عمل کو متاثر کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔ چوہدری عنصر محمود نے کہا کہ نوازشریف پاکستانی عدالتوں سے سزا یافتہ ہیں، وطن واپسی پر گرفتار کرکے جیل بھیجا جائے۔ پاکستانی عوام اب ن لیگ کے دھوکے میں نہیں آئیں گے۔ عوام25جولائی کو کرپٹ سیاستدانوں کا راستہ ووٹ کی طاقت سے روکیں گے۔ نواز شریف کی پاکستانی سیاست میں اب کوئی جگہ نہیں