• ☚ ربیع الاول کا مہینہ اللہ کی رحمتیں سمیٹنے کا ذریعہ ہے :چوہدری راشد پنوں
  • ☚ لین دین کے معاملے میں تاجروں کو 7لاکھ کا جعلی چیک تھما دیا گیا
  • ☚ چوہدری مونس الٰہی عوامی توقعات پر پورا اتریں گے : محمد یونس قمر
  • ☚ چوہدری برادران عوامی مفادات کے بہترین محافظ ہیں:امیر حسن شاہ
  • ☚ ربیع الاول رحمتوں اور برکتوں والا مہینہ ہے: محمد افضل بٹ
  • ☚ ریونیو ٹیموں کے سموگ پھیلانے والے زمینداروں کیخلاف چھاپے
  • ☚ گجرات: لڑائی جھگڑے کے واقعات’ چھریاں چلنے سے متعدد افراد زخمی
  • ☚ چوہدری مظفر خالد کے صاحبزادے چوہدری اسامہ خالد کی دعوت ولیمہ
  • ☚ چوہدری برادران عوامی توقعات پر پورا اترینگے : چوہدری وسیم سہیل
  • ☚ کنجاہ: مرکزی میلاد کمیٹی کے زیر اہتمام20نومبر کومشعل بردار جلوس نکالا جائیگا
  • ☚ حکومت کا نواز، شہباز اور مریم کے خلاف مزید 4 کیس نیب کو بھجوانے کا اعلان
  • ☚ چیئرمین سینیٹ، وزیراطلاعات آمنے سامنے، معافی نہ مانگی تو فواد چوہدری سینیٹ کے موجودہ سیشن میں نہ آسکیں گے، سنجرانی
  • ☚ سپریم کورٹ کیساتھ کھڑے ہیں،عدالتی فیصلوں پر سمجھوتہ نہیں ہوگا،عمل نہ کیا جائے تو ریاست نہیںچل سکتی،آج ایسے انکشاف کروںگا میڈیابھی انجوائے
  • ☚ نیب کا چھاپہ،سابق سرکاری افسر کے گھر سے 33 کروڑ برآمد
  • ☚ ادائیگیوں کا بحران ختم، 12 ارب ڈالر کا خلا تھا، 6 ارب سعودیہ باقی رقم چین سے ملی، وزیرخزانہ
  • ☚ معاملات احتساب عدالت بھیجنا نہیں چاہئے تھا، چیف جسٹس، نوا زشریف فیملی کی رہائی کا فیصلہ ختم کرنے کے سوا کوئی چارہ نہیں، سپریم کورٹ
  • ☚ پاک روس اسٹریٹجک تعاون بڑھانے پر اتفاق، عمران خان کی روسی وزیراعظم سے ملاقات
  • ☚ نوشہرہ خوشحال ڈگری کالج میں مولانا سمیع الحق کی نمازجنازہ ادا کر دی گئی
  • ☚ لاہور کے مختلف علاقوں میں بوندا باندی، سردی میں اضافہ، سموگ میں کمی
  • ☚ سربراہ جمعیت علمائے اسلام (س) مولانا سمیع الحق قاتلانہ حملے میں شہید
  • ☚ خشوگی کیس،سعودی پبلک پراسیکیوٹر5مشتبہ ملزمان کیلئے سزائے موت کا خواہش مند
  • ☚ تھریسامے برطانیہ کیلئے بدترین ڈیل پر مذاکرات کر رہی ہیں، فیصل رشید
  • ☚ اخراج پلان منظوری، کابینہ میں بغاوت، بریگزٹ منسٹر سمیت 8 وزرا و معاونین مستعفی، وزارت عظمیٰ نہیں چھوڑ رہی، تھریسامے
  • ☚ بریگزٹ ڈیل برطانیہ کو تقسیم کردے گی، ڈی یوپی لیڈر ارلین فوسٹر
  • ☚ تھریسامے کے بریگزٹ پلان سے تمام کنٹرول یورپی یونین کے پاس رہے گا
  • ☚ برطانوی کابینہ کا 5 گھنٹے طویل اجلاس، بریگزٹ ڈیل کی منظوری دیدی گئی
  • ☚ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج نے مظالم کی انتہا کردی، راجہ فاروق حیدر
  • ☚ بریگزٹ پر ایک اور ریفرنڈم کرایا جانا چاہیے، جو جانسن
  • ☚ بریگزٹ کے بعد برطانوی معیشت میں تیز ی سے ترقی
  • ☚ لوٹن کونسل میں بن سروسز کا سابقہ شیڈول بحال کرنے کا مطالبہ مسترد، پاکستانیوں سمیت ایشیائی کمیونٹی کو مایوسی
  • ☚ شاہ رخ خان نے اپنی انتھک محنت کا سہرا سروج خان کے سر باندھ دیا
  • ☚ دپیکا پڈوکون کے شادی کے دوپٹے پرلکھا گیا پیغام سوشل میڈیا پروائرل
  • ☚ جسٹن بیبر نے امریکی ماڈل ہیلی بالڈوین سے شادی کی تصدیق کردی
  • ☚ برج عقرب سے تعلق رکھنے والے سپر اسٹارز
  • ☚ وِل اسمتھ‘‘ ہالی ووڈ کا لاجواب اداکار
  • ☚ ہاکی کھلاڑیوں کو بھارتی ویزے مل گئے،کوچز کو انتظار
  • ☚ بنگلہ دیش ڈھاکا ٹیسٹ میں 218 رنز سے کامیاب، سیریز برابر
  • ☚ زون اور ریجنز بتائیں کتنے کھلاڑی نکالے،پیسوں کا حساب دیں،میانداد
  • ☚ ڈھاکاٹیسٹ میچ فیصلہ کن مرحلے میں داخل
  • ☚ قائد اعظم ٹرافی،سوئی ناردرن نے لاہور کو ایک اننگز سےہرادیا
  • آج کا اخبار

    اسلام آباد ہائیکورٹ نے فہد ملک کیس میں انسداد دہشت گردی کی دفعہ بحال کر دی

    Published: 13-07-2018

    Cinque Terre

    لندن : اسلام آباد ہائیکورٹ کی جسٹس عامر فاروق اور جسٹس محسن اختر کیانی پر مشتمل2 رکنی بینچ نے گزشتہ روز برطانوی شہری فہد ملک کیس میں مقتول کے بھائی کی رٹ پٹیشن منظور کرتے ہوئے انسداد دہشت گردی کی عدالت کی جانب سے انسداد دہشت گردی کی دفعات نکالنے کی ہدایت کو منسوخ کرتے ہوئے کیس میں انسداد دہشت گردی کی دفعہ7 بحال کرنے کاحکم دیتے ہوئے مقدمہ ڈسٹرکٹ اور سیشن جج کی عدالت میں منتقل کرنے کی ہدایت کی ہے۔ سینیٹ کے سابق چیئرمین اور سابق نگراں وزیراعظم میاں محمد سومرو کے بھانجے جواد ملک نے اپنے وکلا خواجہ حارث، اکرم قریشی، خواجہ نوید، زین قریشی اور عاصمہ جہانگیر کے توسط سے درخواست میں انسداد دہشت گردی کی عدالت کی جانب سے انسداد دہشت گردی کی دفعات نکالنے کے فیصلے کو چیلنج اور مقدمہ نچلی عدالت میں منتقل کرنے کی استدعا کی تھی جبکہ ملزم نے دسمبر2016 میں مقدمے سے انسداد دہشت گردی کی دفعات نکالنے کی استدعا کی تھی۔ انسداد دہشت گردی کی عدالت نمبر ایک کے جج کوثر عباس زیدی نے ملزم کی یہ درخواست منظور کرتےہوئے مقدمہ مزید سماعت کیلئے سیشن عدالت میں بھیج دیا تھا۔ فیصلے کے بعد جواد ملک نے کہا کہ انھیں انصاف کے حصول کی راہ کی پہلی رکاوٹ ہٹانے میں 18 ماہ لگے، مجھے خوشی ہے کہ اسلام آباد ہائیکورٹ نے میری درخواست منظور کی، انسداد دہشت گردی کی دفعہ7 بحال کرنے اور میرے بھائی کے قتل کا مقدمہ دوبارہ انسداد دہشت گردی کی عدالت میں بھیجنے کا حکم دیا۔ اللہ نے ہم پر فضل کیا اور ہم شکر گزار ہیں کہ ہمارے مقدمے کی میرٹ پر سماعت کی گئی۔ میں ان تمام لوگوں کا بھی مشکور ہوں کہ جنھوں نے ہماری مہم کی حمایت کی۔ میرا بھائی معصوم تھا اور اسے بیدردی سے قتل کیا گیا۔ ہمیں ابھی طویل راہ طے کرنا ہے لیکن ہمیں خوشی ہے کہ اس بنیادی اور اہم مرحلے میں انصاف کیا گیا۔ جواد ملک نے اپنے بھائی کے قتل پر انصاف کے حصول کیلئے طویل مہم چلائی اور برطانیہ میں سابق وزیر داخلہ امبر رڈ سمیت کئی برطانوی ارکان پارلیمنٹ سے بھی ملاقاتیں کیں، سابق برطانوی وزیر داخلہ امبر رڈ نے پاکستانی حکام کو اس مقدمے پر توجہ دینے کیلئے خط بھی لکھا تھا، یہ معاملہ امور داخلہ کی سیلکٹ کمیٹی میں بھی زیرغور آیا تھا۔ لیبر پارٹی کی رکن پارلیمنٹ ناز شاہ، سعیدہ وارثی اور کئی دوسرے ارکان پارلیمنٹ نے فہد ملک کے قتل پر تشویش کا اظہار کیا تھا اور ناز شاہ نے اس قتل کو دہشت گردی قرار دیا تھا، جواد ملک نے اپنے بھائی کیلئے آواز اٹھانے پر برطانوی ارکان پارلیمنٹ کا شکریہ ادا کیا تھا۔ بیرسٹر فہد ملک کو15 اگست2016 کو اسلام آباد میں قتل کیا گیا تھا