• ☚ جعلی ڈگری کیس : حاجی ناصر محمود تاحیات نااہل قرار
  • ☚ تھانہ لاری اڈا کی مصالحتی کمیٹی کا اجلاس‘عرفان اسحاق بانٹھ کنونیئر منتخب
  • ☚ معمولی رنجش پر نوجوان کو موت کے گھاٹ اتارنیوالا سفاک قاتل گرفتار
  • ☚ حسین کالونی میں دو بہنوں سے زیادتی کے واقعہ کا نوٹس لے لیا گیا
  • ☚ محمد امین سیال کے بیٹے وحید سیال اور بھتیجے زاہد سیال کی دعوت ولیمہ
  • ☚ گجرات اور منڈی بہاؤالدین میں بجلی چوروں کیخلاف کریک ڈاؤن
  • ☚ گجرات اور منڈی بہاؤالدین میں بجلی چوروں کیخلاف کریک ڈاؤن
  • ☚ شاہدولہ روڈ پر لکڑی کے گودام میں آتشزدگی‘ لاکھوں کا سامان جل گیا
  • ☚ کنجاہ : بجلی چوروں کا گھیرا تنگ‘ نصف درجن چوروں کیخلاف مقدمات درج
  • ☚ چوہدری اخلاق وڑائچ کو چیف آفیسر کا عہدہ سنبھالنے پر مبارکباد
  • ☚ وزیراعلیٰ جس جھونپڑی میں رہتے ہیں اُس کا پتا بتادیں، مریم اورنگزیب
  • ☚ ’سعد رفیق کے پروڈکشن آرڈر جاری نہ ہوئے تو ایوان نہیں چلے گا‘
  • ☚ عمران خان کے 6 غیر ملکی دوروں کے اخراجات سامنے آگئے
  • ☚ نیب نے آصف زرداری اور بلاول بھٹو کو 13 دسمبر کو طلب کرلیا
  • ☚ کراچی: ایم کیو ایم پاکستان کی محفل میلاد میں دھماکا، 6 زخمی
  • ☚ صدر مملکت کا ٹیلی فون لگوانے کیلئے رشوت کا انکشاف
  • ☚ میڈیا 6 ماہ صرف ترقی دکھائے، آگے وقت بہت اچھا یا بہت خراب، آج پرانی فوج نہیں، ایک ایک اینٹ لگاکر پاکستان دوبارہ بنارہے ہیں، فوجی ترجمان
  • ☚ ’’مریم اورنگزیب جھوٹی ہیں، کسی سے مخلص نہیں‘‘
  • ☚ قطری شہزادے کو نئے پاکستان میں بھی ’تلور‘ کے شکار کی اجازت
  • ☚ ہوسکتا ہے کچھ وزراء کو ہٹا دیں، وزیراعظم
  • ☚ برطانوی پارلیمنٹ بھی ’’یوٹرن‘‘ ’’لیڈی ٹرن‘‘ کے نعروں سے گونج اٹھی
  • ☚ یمنی حکومت اور حوثی باغیوں کا جنگ بندی پر اتفاق
  • ☚ فرانس: کرسمس بازار پر حملہ کرنے والا ملزم مارا گیا
  • ☚ یورپی یونین کا بریگزٹ معاہدے پر دوبارہ مذاکرات نہ کرنے کا اعلان
  • ☚ بریگزٹ معاہدے کو بچانے کیلئے یورپی رہنمائوں سے تھریسامے کی ملاقاتیں
  • ☚ وزیراعظم تھریسامے کے خلاف تحریک عدم اعتماد ناکام
  • ☚ معاشی و سیاسی دبائو،فرانس کی طرح برسلز میں بھی احتجاجی مظاہرے،نوجوانوں کی بھر پور شرکت
  • ☚ دہشت گرد کیمیائی حملوں کا منصوبہ بنا رہے ہیں، برطانوی حکام کا انتباہ
  • ☚ بریگزٹ ڈیل مسترد کی تو غیر معمولی خطرناک صورتحال کا سامنا ہوسکتا ہے،تھریسامے
  • ☚ فواد چوہدری کی برطانوی اور ہالی ووڈ اداکاروں کو پاکستان آنے کی دعوت
  • ☚ تازہ بہ تازہ: ناکامی سے کیا ڈرنا...
  • ☚ نئی نسل کے گلوکاروں نے فلم انڈسٹری کو نئی زندگی دی
  • ☚ ٹی وی ڈراموں کا سنہرا دور
  • ☚ کترینہ نے فلم ’’ٹھگس آف ہندوستان‘‘ کی ناکامی کی ذمہ داری تسلیم کرلی
  • ☚ ’’اے آر رحمان‘‘ موسیقی کی دنیا کی ایک سحر انگیز شخصیت
  • ☚ بھارتی کرکٹ بورڈنےپاکستان سے 15کروڑ روپے مانگ لیے
  • ☚ ورلڈکپ میں شکست خوردہ ہاکی ٹیم آج وطن لوٹے گی
  • ☚ دلیری دکھائیں، نیچرل گیم کھیلیں، سرفراز کا کھلاڑیوں کو پیغام، کرکٹ ٹیم آج جنوبی افریقا روانہ
  • ☚ ویسٹ انڈیز نے بنگلہ دیش کو ہرادیا
  • ☚ قومی ٹی20، کراچی کوملتان سے شکست،پشاور نے فاٹا کو ہرادیا
  • آج کا اخبار

    سوئی گیس مہنگی، LPG سستی، قیمت میں 10 سے 143 فیصد اضافہ، LPG کے تمام ٹیکس ختم، صرف 10 فیصد GST لگے گا، بلوچستان،سندھ کیلئے CNG بھی مہنگی

    Published: 19-09-2018

    Cinque Terre

    اسلام آباد :وفاقی حکومت نے تردیدوں کے باوجود گیس کی قیمتوں میں اضافہ کر دیا، کابینہ کی اقتصادی رابطہ کمیٹی نے گیس کی قیمتوں میں اضافے کی منظوری دیدی، ایل پی جی سلنڈر کی قیمت میں 200روپے کمی کر دی گئی ،ایل پی جی پر ڈیوٹی اور دیگر ٹیکس ختم کر کے صرف 10فیصد جی ایس ٹی نافذ کیا گیا ہے ، صوبہ سند ھ میں سی این جی کی قیمت 700فی ایم ایم بی ٹی یو سے بڑھا کر 980روپے فی ایم ایم بی ٹی یو کر دی گئی ہے ، برآمدی صنعت کیلئے گیس کی قیمت میں کوئی اضافہ نہیں کیا گیا ، گیس کی قیمت میں 10سے 143فیصد اضافہ کیا گیا،گیس کی قیمت کے 3سلیب کوبڑھا کر 7کر دیا گیا ہے ، سیمنٹ سیکٹر کیلئے گیس کی قیمتوں میں 30فیصد، کمرشل، تندور، کیپٹوپاور پلانٹس اور سی این جی سیکٹر کیلئے 40فیصد اور فرٹیلائزر انڈسٹری کے فیڈ پارٹس کیلئے 50فیصداضافے کی منظوری دی گئی ہے۔ بجلی گھروں کے لئے گیس کی قیمتوں میں 57فیصداضافہ کرکےوزیر پیٹرولیم غلام سرور خان نے دعویٰ کیا   کہ پاور سیکٹر بجلی کی قیمتوں میں اضافہ نہیں کریگا۔ گزشتہ روز اقتصادی رابطہ کمیٹی کا اجلاس وزیر خزانہ اسد عمر کی زیر صدارت ہوا بعد ازاںوفاقی وزیر اطلاعات و نشریات اور وزیر پیٹرولیم غلام سرور خان نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے اقتصادی رابطہ کمیٹی کے فیصلوں سے آگاہ کیا ، انہوں نے بتایا کہ گیس قیمتوں میں اضافے سے ٹیکسٹائل کی صنعت بحال ہو گی جس سے 5لاکھ بےروزگار ہونیوالے افراد کی ملازمت بحال ہو گی ، وزیر پیٹرولیم نے بتایا کہ عام آدمی کے لیے گیس کی قیمت میں 10سے 20فیصد جبکہ امیر افراد کے لیے 143فیصد اضافہ کیا گیا ،گیس کی قیمت کے 3سلیب کوبڑھا کر 7کر دیا گیا ہے ، پہلے 2سلیب کم گیس استعمال کرنیوالے افراد کے لیے ہے ، 50کیوبک میٹر تک گیس استعمال کرنے والے 38صارفین کے لیے ماہانہ اضافہ 23روپے ہوگا جس سے ان کا ماہانہ بل 252روپےسے بڑھ کر 275روپے ہو جائے گا، دوسرا سلیب 100کیوبک میٹر تک ہے ، جس کے تحت 28فیصد گیس صارفین کاماہانہ بل بڑھ کر 480روپے سے 551روپے ہو جائے گا، ان دونوںسلیب پر گیس کی قیمت میں 10سے 15فیصد اضافہ کیا گیا ، تیسرا سلیب 200کیوبک میٹر تک گیس استعمال کرنے والے19فیصد گیس صارفین کے لیے ہے ، جن کیلئے گیس کی قیمت میں 20فیصد اضافہ کیا گیا ،ان سے 1851 روپے ماہانہ بل بڑھا کر 2216روپے کردیا جائیگا، 300کیوبک میٹر سے زیادہ گیس استعمال کرنیوالے5 فیصد صارفین کو چوتھے سلیب میں شامل کیاگیا ہےجن کےلئے گیس کی قیمتوں میں 25 فیصد اضافہ کیاگیا ہےاور اب ان کا ماہانہ گیس کا بل 2764روپےسے بڑھ کر 3449روپے ہوجائیگا۔ 400کیوبک میٹر گیس استعمال کرنیوالے6فیصد صارفین کو پانچویں سلیب میں شامل کیاگیا ہےجن کےلئے گیس کی قیمتوں میں 30فیصد اضافہ کیاگیا ہےاور اب ان کا ماہانہ گیس کا بل 9990روپےسے بڑھ کر 12980روپے ہوجائیگا۔500کیوبک گیس استعمال کرنے والے صارف12ہزار 482روپے بل ادا کرتے تھے جو اب 30ہزار 339 روپے بل ادا کریں گے اس طرح ان کے لئے گیس کی قیمتوں میں 143فیصد اضافہ کیا گیاہے۔آخری ا ور ساتھویں سلیب میں ایسے صارفین کو رکھاگیا ہے جو 500کیوبک میٹر سے زائد گیس استعمال کرتے ہیں ، ان کے ماہانہ بل میں143فیصد اضافہ کیاگیا ہے اور اب ان کے لئے گیس کابل 14973روپے سے بڑھ کر 36402روپے ہوجائیگا۔ گیس بڑھانے کے حکومتی فیصلے سے سب سے زیادہ مزدور متاثر ہونگے کیوں کہ تندور کےلئے استعمال کی جانے والی گیس کی قیمتوں میں40 فیصد اضافے کی منظوری دیدی گئی ہے جس کے ساتھ ہی تنڈور کےلئے گیس ٹیرف 700روپے ایم ایم بی ٹی یو سے بڑھ کر 980روپے ایم ایم بی ٹی یو ہوگیا ہے۔کمرشل گیس صارفین کیلئے قیمتوں میں40 فیصد اضافے کی منظوری دی گئی ہے اور اب نئی قیمتیں 700روپے ایم ایم بی ٹی یو سے بڑھ کر 980روپے ایم ایم بی ٹی یو ہوگیا ہے۔ فرٹیلائزر فیڈ کی قیمتیں بھی 123 روپےسے بڑھا کر 185روپے ایم ایم بی ٹی یو کردی گئی ہیں۔ وزیر پیٹرولیم غلام سرور خان نے بتایا کہ جب مسلم لیگ ن کی حکومت آئی تو سوئی سدرن گیس لمیٹڈ اور سوئی ناردرن گیس لمیٹڈدونوں منافع پر چل رہے تھے اور جب ن لیگ کی حکومت ختم ہوئی تو ان دونوں اداروں کا خسارہ 152ارب روپے تھا ، گیس مہنگی خرید کر سستی فروخت کرنی پڑتی ہے اس کو برابر لانے کی ضرورت تھی گیس نیٹ ورک میں ملک کی کل آبادی میں سے 23فیصد لوگ استعمال کرتے ہیں جبکہ باقی 77فیصد میں سے 60فیصد ایل پی جی اور دیگر ذرائع استعمال کرتے ہیں