• ☚ پاک فوج کی زیر نگرانی NA69 میں ضمنی انتخابات پر امن ماحول میں جاری رہے
  • ☚ 32سال میں ہاتھ سے تیارکیاگیاقرآنی نسخہ خاتون نےمدینہ منورہ کےقرآن میوزیم میں رکھ دیا
  • ☚ پاکستان مسلم لیگ کے امیدوار چوہدری مونس الٰہی بھاری اکثریت سے کامیاب
  • ☚ اراکین چیمبر کیلئے پاسپورٹ دفتر میں خصوصی سروس فراہم کرنیکا اعلان
  • ☚ گجرات :15روزہ انسداد خسرہ مہم کے انتظامات مکمل376ٹیمیں تشکیل
  • ☚ مسلم لیگ ن کے جنرل کونسلر سجاد احمد ٹونی کی ق لیگ میں شمولیت
  • ☚ جٹووکل کے قریب پولیس کی کاروائی ‘ 2مبینہ ڈاکو گرفتار کر لیے گئے
  • ☚ گجرات: ضمنی الیکشن کے بعد تجاوزات کیخلاف آپریشن کی تیاریاں مکمل
  • ☚ ڈنگہ میں خاتون کے گھر کا صفایا‘ سرائے عالمگیر میں مکان پر قبضہ
  • ☚ نواز شریف پارک کے باہر مسلح افراد کا مزدور پر تشدد‘ لہولہان کردیا
  • ☚ کراچی: مبینہ پولیس مقابلہ، 3 ملزمان ہلاک
  • ☚ شہری کے مرنے کے بعد بینک اکاؤنٹ کھل گئے، اربوں روپے کا لین دین
  • ☚ لاہور: نوازشریف شناختی کارڈ نہ ہونے کے باعث ووٹ نہ ڈال سکے
  • ☚ ضمنی انتخابات: پہلی بار بیرون ملک مقیم پاکستانی بھی انتخابی عمل کا حصہ بن گئے
  • ☚ کراچی میں 2 مبینہ پولیس مقابلے، اہلکار زخمی، 3 ڈکیت گرفتار
  • ☚ حکومت کی نیا پاکستان ہاوٴسنگ سکیم میں گھر کی کل قیمت اور ماہانہ قسط کتنی ہو گی؟ غریب عوام کیلئے انتہائی اچھی خبر آ گئی
  • ☚ جسٹس شوکت عزیز صدیقی عہدے سے فارغ
  • ☚ سستا گھر اسکیم کا سب سے بڑا فائدہ۔۔۔ نوکریاں ہی نوکریاں! وزیر اعظم عمران خان نے عوام کو خوشخبری سنا دی
  • ☚ گجرات فسادات : بھارتی جنرل کا’ ضمیر‘ 16 سال بعد جاگ گیا
  • ☚ نادان لوگ وقت سے پہلے پاؤں پر کلہاڑی ماررہے ہیں ، نواز شریف
  • ☚ ٹوری کی ویلفیئر سکیم سے لاکھوں افراد غربت کا شکار ہوجائیں گے،گورڈن براؤن
  • ☚ ٹومی رابنسن کے ساتھ فوجیوں کی تصویر پر آرمی نے تحقیقات شروع کر دی
  • ☚ چیف جسٹس ثاقب نثار مانچسٹر کے ڈیم فنڈ ریزنگ ایونٹ میں شرکت کرینگے
  • ☚ داعش30 ہزار جنونی دہشت گردوں کے سہاریمافیا کی شکل میں واپسی کیلئے تیار
  • ☚ سکاٹ لینڈ یارڈ نے جنید صفدراور زکریا شریف کو کلیئر کردیا
  • ☚ برطانیہ نے داعش سے تعلق رکھنے والے 9 برطانوی شہریوں کو واپس لینے سے انکار کردیا
  • ☚ پارلیمنٹری گروپ کے دورہ کشمیر سے مسئلہ اٹھانے میں مدد ملے گی، بیرسٹر عمران حسین ایم پی
  • ☚ مے کی لیبر ووٹرز سے اپیل کے ساتھ سینٹر گراؤنڈ حاصل کرنے کی کوشش
  • ☚ پاکستان سے باہر لندن میں تو کیا دنیا میں کہیں کوئی جائیداد نہیں، اسحاق ڈار
  • ☚ آرٹیکل35اے پر کشمیر ی ڈائسفرا اسٹیئر نگ گروپ کا قیام ، کمیٹی تشکیل
  • ☚ گہری رنگت کی وجہ سے بچپن میں بہت تنگ کیا جاتا تھا، پریانکا چوپڑا
  • ☚ اداکارہ میرا پر شہری کے گھر پر قبضہ کا الزام
  • ☚ امیتابھ بچن نے بھی جنسی ہراسانی پر خاموشی توڑ دی
  • ☚ ایشوریا بھی بالی ووڈ میں جنسی ہراسانی کے خلاف میدان میں آگئیں
  • ☚ ہراسانی سے متعلق ’’می ٹو‘‘ مہم سے لوگوں کی سوچ تبدیل نہیں ہوگی، سشمیتا
  • ☚ ’ڈرا‘ نے گرین کیپس کو ڈرا دیا، سیریز داؤ پر لگ گئی
  • ☚ پی سی بی کی کرکٹ کمیٹی کیلئے وسیم اکرم اور مصباح الحق کے نام سر فہرست
  • ☚ آئی سی سی ٹی ٹوئینٹی اور ٹی ٹین لیگ کے بارے میں فیصلہ کریگا
  • ☚ دل برداشتہ لیفٹ آرم اسپنر عبدالرحمن انٹر نیشنل کرکٹ سے ریٹائر
  • ☚ دبئی ٹیسٹ، پاکستان جیت کی شاہراہ پر،محمد عباس کی7گیندوں پر 3وکٹ
  • آج کا اخبار

    آرٹیکل35اے پر کشمیر ی ڈائسفرا اسٹیئر نگ گروپ کا قیام ، کمیٹی تشکیل

    Published: 07-10-2018

    Cinque Terre


    لوٹن: جموں کشمیر لبریشن فرنٹ سفارتی شعبہ کے انچارج ظفر خان نے آرٹیکل 35اے کے حوالیسے بھارتی سازش کو بے نقاب کرنیکے لیے ایک اجلاس کا اہتمام کیا جس میں متعدد تنظیموں سے متعلق کمیونٹی کے مختلف طبقات سے متعلق رہنماؤں نے شرکت کی۔ اجلاس الخدمت سنٹر لوٹن میں منعقد ہوا۔ شرکاء کو جموں کشمیر لبریشن فرنٹ کے برطانیہ کے صدر صابر گل، جنرل سیکرٹری سید تحسین گیلانی، ملک اعجاز اور صدر لوٹن راجہ کمان افسر نیخوش آمدید کیا۔اس موقع پر 5 رکنی کشمیری ڈائیسفرا سٹیرنگ گروپ آن 35 اے کا قیام عمل میں لایا گیا جس میں سید نذیر گیلانی، ظفر خان ، عتیق ملک، طاہر بوستان اور صادق سبہانی کو شامل کیا گیا ہے۔ یہ گروپ اس بات کا جائزہ لے گا کہ کیا سپریم کورٹ آف بھارت میں پہلے سے دائر پٹیشن کشمیری عوام کے حق میں ہے یا بھارت کے حق میں ہے اور کیا ڈائیسفرا کے کشمیری اس کیس میں ایک پارٹی بن سکتے ہیں اجلاس کے بعد فرنٹ کے سینئر اور دیرینہ رہنما ملک اعجاز نے جنگ کو بتایا کہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنے کی اس بھارتی سازش کو اجلاس میں تفصیل سے ڈسکس کیا گیا، کشمیری رہنماوں نے اس بات پر سخت تشویش کا اظہارکیا ہے کہ بھارت رائے شماری کے عمل کو متاثر کرنے کے لیے کشمیر کی خصوصی حیثیت کو ختم کرنے کی منصوبہ بندی کر رہاہے اور اس حوالے سے آرٹیکل 35 اے کی کلیدی اہمیت ہے۔ مگر برطانیہ میں کشمیری ڈائیسفرا اس بات کا عزم کرتی ہے کہ وہ اپنے قومی تشخص ، پہچان اور اپنے وجود کو برقرار رکھنے کے لیے کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کرے گی۔ فرنٹ کے بزرگ رہنما ملک اعجاز نے کہا کہ یہ امر خوش آئندہے کہ جے کے ایل ایف کی کال پر نہ صرف آزادی پسند قوم پرست کشمیری رہنما بھی اجلاس میں شریک ہوئے بلکہ مختلف الفکر عمائدین نے شرکت کی۔ یہ پروگرام مکمل طور پر غیر سیاسی تھا۔ شرکاء میں کشمیر میں لندن سے کشمیر میں حقوق انسانی کے حوالے کام کرنے والی معروف شخصیت سید نذیر گیلانی، لوٹن کی ابھرتی ہوئی سیاسی شخصیت عتیق ملک، چیئرمین بلڈنگ راجہ اکبرداد خان ، سابق میئر لوٹن چوہدری مسعود اختر ، کونسلر راجہ وحید اکبر، کونسلر طاہر ملک، پی پی ایکشن کمیٹی کے اعظم خان راجہ، صدر کشمیر تحریک انصاف لوٹن چوہدری محمد شفاعت پوٹھی، ملک رفیق، برمنگھم سے چیئرمین جموں کشمیر لبریشن الائنس نجیب افسر ، چوہدری جاوید ملک، قوم پرست کشمیری طاہر بوستان،راجہ منور خان اور صادق سبہانی شرکاء میں شامل تھے۔ اس موقع پر واضح کیا گیا کہ بھارتی سپریم کورٹ کو اقوام متحدہ کی قراردادوں کی روشنی میں کشمیر میں مداخلت کا کوئی اختیار ہی نہیں اس لیے اگر آرٹیکل 35 اے کے حوالے کوئی بھی فیصلہ کیا گیا تو اسے انٹرنیشل کورٹ آف جسٹس میں چیلنج کیا جائے گا۔ اس ایشو پر تمام کشمیری متحد ہیں اور کشمیری ڈائیسفر ہر پلیٹ فارم سے بھارت کی اس سازش کے خلاف آواز بلند کرے گی کشمیری رہنماوں نے کہا کہ کشمیر کی مسلم اکثریتی ریاست کو اقلیت میں تبدیلی کی کوشش، ہر سطح پر مذمت کرتے ہیں۔ مختلف رہنماؤں نے کہا کہ آرٹیکل 35 اے کے حوالے سے برطانیہ کے ہر شہر میں کشمیری سخت ردعمل کا اظہار کر رہے ہیں۔ جموں کشمیر لبریشن فرنٹ برطانیہ کے سنیئر رہنماء ملک اعجاز نے کہا ہے کہ بھارتی حکومت کی سازش کو وسیع سطح پر بے نقاب کیا جائے گا یہ کشمیر کے خصوصی سٹیٹس کو ختم کرنیکی ناپاک جسارت ہے کشمیر کے مسئلہ کے حل سے دلچسپی رکھنے والے تمام احباب کو اس حوالے سے متحد ہو کر اس سازش پر آواز اٹھانے کی اشد ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ آرٹکل 35A کے باریمیں واضح تھا کہ بھارتی حکومت اور عدلیہ کو اسے ختم کرنے یاترمیم کرنے کا کوئی اختیار نہیں اس سے کشمیر کی خصوصی حیثیت قائم ہے۔انہوں نے جنگ سے خصوصی بات چیت میں کہا کہ 1927 سے بیرون ریاست لوگوں کو ریاستی زمین خریدنے یا اسے حاصل کرنے پر پابندی عائد کرکے کشمیرکے عوام کے خصوصی اختیارات اور ان کے مالکانہ حقوق کا تحفظ کیا گیا تھا مگر اتنے سال گزرنے کے بعد اس پر شب خون مارنے کی کوشش کی جارہی ہے مودی سرکار ریاستی مسلم اکثریت کو ختم کرنے کے لیے مختلف حربے استعمال کر رہی ہے لیکن برطانیہ کے کشمیری بیدار ہیں اور وہ بھارت کی اس طرح کی کوشش کو ہر سطح پر ایکسپوز کریں گے انہوں نے کہا اس حوالے سے آزادکشمیر حکومت اور وہاں کے سیاسی زعماء کا کردار بھی قابل غور ہے جو اپنے حصے کا کردار ادا کرنے میں ناکام رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ کشمیری یہ سمجھتے ہیں کہ بھارت ہر حربہ استعمال کرنے کے بعد اب عدالتی طریقے سے ہماری شناخت ختم کرنے کے درپے ہے اور برطانوی کشمیری متنبہ کرتے ہیں کہ اگر کشمیر کی خصوصی حیثیت کو ختم کرنے کی ساش کو بند نہ کیا گیا تو برٹش کشمیری اعلی سطح پر احتجاج کریں گے انہوں نے کہا کہ بھارت کی سپریم کورٹ کو اس قانون کو کالعدم کرنے یا اس میں ترمیم کرنے کا کوئی اختیار نہیں ہے اور سٹیٹ سبجکٹ قانوں پر اثر انداز ہونے کی ہر سازش کا تمام کشمیری مل کر توڑ کریں گے۔ اس حوالیسے کشمیر کی مزاحمتی تحریک کی جانب سے احتجاج کال کی برطانیہ کے کشمیری مکمل حمایت کرتے ہیں۔