• ☚ معروف نعت خواں قاری غلام سرور نقشبندی کا صاحبزادہ ماکو کی پہاڑیوں میں سیکورٹی گارڈز کی فائرنگ سے جاں بحق
  • ☚ ون ڈش کی خلاف وزری پر جلالپورجٹاں کے میرج ہال میں چھاپے ،رنگ برنگے کھانے قبضہ کرلئے گئے
  • ☚ پالتوکتے کوچھریاں مارکرقتل کرنیکامعاملہ،واقعہ کاسخٹ نوٹس لے لیاگیا
  • ☚ ناروالی سنٹر میں پانچویں جماعت کا امتحان پر امن طریقہ سے ہو رہا ہے
  • ☚ ککرالی ہلاکت کیس ،DSPکھاریاں میاں محمد ارشد کومعطل کردیاگیا
  • ☚ علی بٹ اور فیصل بٹ کی سید مصطفی گیلانی کو ایس پی انویسٹی گیشن تعینات ہونے پر مبارکباد
  • ☚ جھیورنوالی سے 87پتنگیں برآمد ،کنجاہ پولیس کامیاب آپریشن
  • ☚ پنجاب پولیس نے اپنا ویب ٹی وی چینل بنانیکافیصلہ کرلیا،میگزین بھی شائع ہوگا
  • ☚ فاران انسٹی ٹیوٹ کی قابل قدرکاوشیں ہیں،طارق جاوید چوہدری کوخراج تحسین پیش کرتے ہیں:ڈاکٹراعجاز
  • ☚ ایس پی انویسٹی گیشن کے آتے ہی ایس پی ہیڈکوارٹر کاتبادلہ ،چارج چھوڑدیا
  • ☚ پاک بھارت کشیدگی، سعودی ولی عہد کے دورہ بھارت کی چکا چوند ماند پڑنے کا خطرہ
  • ☚ پی ٹی آئی کے پاس ہے کیا جو این آر او لیں، خواجہ آصف
  • ☚ قطرکی پاکستان کو ادھارLNGدینے سے معذرت، معاشی دباؤبڑھنے کاامکان
  • ☚ نیب نےن لیگ کے رہنما کامران مائیکل کو گرفتار کرلیا
  • ☚ ’’وزیر ِجھوٹ و خرافات نے جھوٹوں سے بھرپور پریس کانفرنس کی ‘‘
  • ☚ ’’وزیر ِجھوٹ و خرافات نے جھوٹوں سے بھرپور پریس کانفرنس کی ‘‘
  • ☚ عمران خان نے سہانے خواب دکھا کر عوام کو دھوکا دیا، احسن اقبال
  • ☚ ’’مڈٹرم الیکشن کی باتیں قیاس آرائیاں ہیں‘‘
  • ☚ سوات اور گردونواح میں زلزلے کے جھٹکے
  • ☚ اسلام آباد سمیت ملک کے مختلف شہروں میں زلزلے کے جھٹکے
  • ☚ عمران خان نے بھارتی دھمکیوں کا دو ٹوک جواب دے کر قوم کے دل جیت لئے، کمیٹی رہنما
  • ☚ تھریسامے کے ’’مخالفانہ ماحول‘‘میں 5 سال قبل گرفتار طالب علم اب تک زیرحراست
  • ☚ کلبھوشن بھارتی خفیہ ایجنسی ’’را‘‘ کیلئے کام کر رہا تھا، پاکستانی اٹارنی جنرل
  • ☚ کشمیر میںانسانی حقوق کی خلاف ورزیاں روکنے کیلئے یورپی و برطانوی ارکان پارلیمنٹ کو کردار ادا کرنا ہوگا، امجد بشیر ایم ای پی
  • ☚ زلفی بخاری کا ’’اوورسیز پاکستانی سوشل کونسل ‘‘ کے قیام کا اعلان
  • ☚ بریگزٹ، تھریسامے ایم پیز سے ڈیل میں تبدیلی کیلئے مزید وقت مانگیں گی
  • ☚ حکومت نو ڈیل بریگزٹ کی صورت میں سڑکوں پر فسادات کی تیاری کررہی ہے، لارڈ باب
  • ☚ لیورپول سٹی سینٹر کے قریب فائرنگ سے 30سالہ شخص ہلاک
  • ☚ عوامی مینڈیٹ کی تکمیل حکومت کی ذمہ داری، یورپی یونین سے برطانیہ کی علیحدگی کا عمل بروقت مکمل کرلوں گی، تھریسامے
  • ☚ عوامی مینڈیٹ کی تکمیل حکومت کی ذمہ داری، یورپی یونین سے برطانیہ کی علیحدگی کا عمل بروقت مکمل کرلوں گی، تھریسامے
  • ☚ کرینہ کپور کی پریانکا چوپڑا کو ماضی نہ بھولنے کی تلقین
  • ☚ سدھو کو کپل شرما شو سے نکالنے میں سلمان خان ملوث نکلے
  • ☚ علی ظفر کی ٹوئٹ پر بھارتی آپے سے باہر ہوگئے
  • ☚ کرن جوہرکی چہیتی کہنے پرکنگنا کوعالیہ کا کرارجواب
  • ☚ فلم کے سیٹ پررنبیر کو دیکھ کر عالیہ ڈائیلاگ کیوں بھول جاتی ہیں؟ اداکارہ کا اہم انکشاف
  • ☚ آسٹریلیا سے سیریز،حارث رئوف سلیکٹرز کی نظر میں آگئے
  • ☚ سپرلیگ پاکستان کیلئے مفید، اچھے کرکٹر ملیں گے، شاہد آفریدی، ٹیلنٹ کو پرکھا جائے
  • ☚ چیئرمین احسان مانی اور ایم ڈی وسیم خان آج دبئی روانہ ہونگے
  • ☚ پاکستان ویمن کرکٹ ٹیم نے تاریخ رقم کردی
  • ☚ آئی سی سی T20 رینکنگ، پاکستان کی پہلی پوزیشن برقرار
  • آج کا اخبار

    لوٹن کونسل میں بن سروسز کا سابقہ شیڈول بحال کرنے کا مطالبہ مسترد، پاکستانیوں سمیت ایشیائی کمیونٹی کو مایوسی

    Published: 10-11-2018

    Cinque Terre

    لوٹن : لوٹن بن پٹیشن پر کونسل اجلاس کے دوران لوٹن بن سروسز پہلے کی طرح برقرار رکھنے کا مطالبہ لیبر کونسل نے مسترد کردیا۔ جس پر پاکستانی کمیونٹی سمیت ایشیائی کمیونٹی نے شدید مایوسی کا اظہار کیا ہے۔ لوٹن کمیونٹی کی بن پٹیشن کو لوٹن کونسل چیمبر ٹائون ہال میں 6نومبر شام6بجے فل کونسل اجلاس میں ڈسکس کیا گیا اور بن مہم کے محرک راجہ اکبر داد خان کو ساڑھے سات منٹ بن سروسز پہلے کی طرح برقرار رکھنے کا کمیونٹی مطالبہ پیش کرنے کا موقع دیا گیا۔ انہوں نے بن شیڈول میں نظر ثانی کے لئے مدلل دلائل پیش کئے اور واضح کیا کہ ہفتے کے بجائے دو ہفتے بعد بن کولیکشنز نہایت متاثر کرنے والا فیصلہ ہے لیکن لیبر ہولڈ کونسل نے کمیونٹی کو شدید متاثر کرنے والے ایشو جس کو جمہوری طور پر کمیونٹی نے ایک یاد داشت کی صورت میں پیش کیا تھا کو مسترد کردیا اس مسئلہ پر باضابطہ ووٹنگ کی گئی۔ فکر انگیز طور پر بن مسئلہ پر منگل کی شب اجلاس میں موجود لیبر کونسلرز نے بن شیڈول میں تبدیلی کے فیصلہ کو برقرار رکھنے کی حمایت اور پہلے کی طرح سروسز فراہم کرنے کے خلاف ووٹ دیئے۔ حالانکہ کمیونٹی کی اکثریت لیبر پارٹی سے وابستہ ہے۔ البتہ لوٹن کے پہلے پاکستانی میئر کا اعزاز حاصل کرنے والے سینئر کونسلر چوہدری محمد اشرف نے کمیونٹی پٹیشن کے حق میں ووٹدیا۔ انہوں نے نمائندہ سے بات چیت میں واضح کیا کہ وہ اس عرصہ میں لوٹن جہاں بھی گئے ہر طرف کالے بن پڑے دیکھے۔ انہوں نے کہا کہ لوٹن کونسل کے پاس لوٹن ائر پورٹ کی مد میں خطیر رقم موجود ہے جو کہ اس ضمن میں خرچ کی جاسکتی تھی انہوں نے دو ہزار کے دھائی میں لوٹن کے ایک سروے کا حوالہ بھی دیا کہ اس وقت شہریوں نے شہر کو صاف ستھرا رکھنے کو اپنی پہلی ترجیح قرار دیا تھا اور جب وہ فنانس کے پورٹ فولیو ہولڈر تھے انہوں نے اس امر کو یقینی بنایا تھا کہ قصبہ کی صفائی ستھرائی سے متعلق سروسز مکمل طور پر جاری رہیں۔ مگر اب شیڈول میں تبدیلی کر دی گئی ہے جس سے بہت لوگ متاثر ہورہے ہیں۔ لوٹن کونسل میں لب ڈیم کے تمام کونسلرز اور ٹوری کے ایک کونسلرز کے سوا سب نے لوٹن کمیونٹی کی بن ایشو پر پٹیشن کے حق میں ووٹ دیئے مگر چونکہ ٹائون ہال میں واضح اکثریت لیبر پارٹی کے کونسلرز کی ہے جن کی قابل ذکر تعداد پاکستان کشمیری اوریجن کونسلرز پر مشتمل ہے لیکن سینکڑوں افراد کی پٹیشن کے باعث کونسل رولز کے تحت ووٹ کا حق ملنے کے باوجود لیبر کونسلرز نے پہلے کی طرح بن سروسز کوجاری رکھنے کے کمیونٹی مطالبہ کے خلاف ووٹ ڈالے۔ متعلقہ پورٹ فولیو ہولڈر کونسلر ٹام شو کا موقف تھا کہ وہ اس طرح کے منصوبے سے ری سائیکلنگ کے عمل میں اضافہ کرنا چاہتے ہیں لیبر ایگزیکٹو کونسلر راجہ محمد اسلم خان کا کہنا تھا کہ ٹوری اور لب ڈیم کی مرکزی مخلوط حکومت نے کٹوتیوں کا جو عمل شروع کیا تھا اس سے لوٹن کونسل بھی متاثر ہوئی اور آج یہ اسی کا نتیجہ ہے کہ ہم یہ فیصلہ کرنے پر مجبور ہیں۔ ایگزیکٹو کونسلر راجہ وحید اکبر نے لوٹن کونسل کی طرح کی متعدد دیگر کونسلوں کی مثالیں دیں جہاں پر پہلے سے ہی بن شیڈول میں تبدیلی کی جاچکی ہے۔ جبکہ لب ڈیم کے کونسلر ڈیوڈ فرینک اور کونسلر پیٹر چیپ مین نے لوٹن کمیونٹی کی بن ایشو پر پٹیشن کے حق میں بھرپور دلائل دیئے اور یہ واضح کرنے کی کوشش کی کہ ہر کونسل اپنے حالات کے مطابق فیصلے کرتی ہے اور جو ہم لوٹن کے کونسلرز ہیں ہمیں یہاں کے حالات اور ضروریات کے مطابق وسیع مشورہ جات سے ایسے اہم فیصلے کرنے چاہئیں۔ اس کارروائی کو دیکھنے کے گیلری میں کمیونٹی کی چیدہ شخصیات موجود تھیں ان کا حوالہ دیتے ہوئے لب ڈیم کونسلر پیٹر چیپ مین نے کہا کہ آخر کوئی مسئلہ ہے کہ جس باعث لوگ گیلری میں آئے ہوئے ہیں۔ اس موقع پر خطیب مرکزی جامع مسجد غوثیہ لوٹن حافظ اعجاز احمد، سابق میئر لوٹن چوہدری مسعود اختر، چیئرمین پاکستان پیپلزپارٹی کشمیر فورم یوکے چوہدری محمد بشیر، اسلامک کلچرل سوسائٹی کے حاجی چوہدری محمد قربان اور حاجی چوہدری محمد نثار، پی پی ایکشن کمیٹی کے پیر سید اعجاز محی الدین قادری، مسلم کانفرنس کے شبیر ملک، ممتاز بٹ، سماجی شخصیت چوہدری منشی اکبر سمیت متعدد عمائدین موجود تھے؎۔ اجلاس کو لیڈی میئر لوٹن کونسلر نسیم ایوب نے کنڈکٹ کیا، جبکہ آغاز علامہ قاضی عبدل عزیز چشتی کی تلاوت سے کیا گیا یہاں خیال رہے کہ لوٹن کونسل نے 2اکتوبر سے دو ہفتے بعد بن کولیکشنز کرنے کا اقدام اٹھایا ہے جس پر بالخصوص ٹائون کے پاکستانی کشمیری کمیونٹی اور بنگلہ دیشی باشندوں کی قابل ذکر تعداد جن کے خاندان کے سائز بڑے ہیں نے عدم اعتماد کا اظہار کیا تھا اورایک پٹیشن لانچ کی۔ نئی صورت حال پر پٹیشن کے محرک راجہ اکبر داد خان نے تبصرہ کرتے ہوئے جنگ کو بتایا ہے کہ ویک اینڈ پر کمیونٹی عمائدین کا اجلاس طلب کرکے آئندہ کا لائحہ عمل طے کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ محسوس یہی ہوتا ہے کہ کونسل کے ذمہ دار ہماری کمیونٹی کے طرز معاشرت کو تبدیل کرنا چاہتے ہیں۔ سابق ڈپٹی لیڈر اور کونسلر حلقہ ڈالو چوہدری محمد اشرف نے کہا کہ وہ اس مسئلے پر کمیونٹی کے شانہ بشانہ کھڑے ہو کر جدوجہد کریں گے۔ سابق میئر لوٹن چوہدری مسعود اختر نے کہا کہ ووٹنگ پر مایوسی ہوئی ہے۔ خطیب مرکزی جامع مسجد غوثیہ لوٹن حافظ اعجاز احمد نے بھی مایوسی کا اظہار کیا ہے، اسلامک کلچرل سوسائٹی لوٹن کے حاجی چوہدری محمد قربان نے کہا لیبر پارٹی کے کمیونٹی کونسلرز پر بہت مایوسی ہوئی۔ سابق چیئرمین لیبر پارٹی لوٹن نارتھ اعظم خان راجہ نے کہا کہ لوٹن کونسل میں غیر موثر کمیونٹی لیبر کونسلرز نے بن شیڈول میں تبدیلی کا فیصلہ کرکے کمیونٹی کو سخت مشکلات میں ڈال دیا ہے۔ جنرل سیکرٹری سنی کونسل لوٹن راجہ فیصل کیانی نے ایک اوپن ڈبیٹ اور ایک ایسی کمپین کی ضرورت پر زور دیا جس سے پاکستانی کشمیری کمیونٹی اور مقامی عوامی مفادات کے خلاف فیصلوں سے کمیونٹی کو بھرپور طریقے سے آگاہ کیا جائے۔ متعدد دیگر عمائدین نے بھی کہا ہے کہ کمیونٹی آئندہ الیکشن میں سوچ سمجھ کر ایسے کونسلرز کا انتخاب کرے جو ٹائون ہال میں کمیونٹی معاملات پر صیح معنوں میں مثبت کردار ادا کرسکنے کی اہلیت سے بہرہ ور ہوں۔