• ☚ مریضو ں کی سہولیات کیلئے بی ایچ یوز چوبیس گھنٹے کھلے رکھنے کا فیصلہ
  • ☚ میونوال :بینک کی اقساط نہ دینے پر رکشہ ڈرائیور کو گولیاں مار دی گئیں
  • ☚ پولیس کو ایمرجنسی کال پر گمراہ کرنیوالے کی سختی ‘گرفتاری کیلئے چھاپے
  • ☚ واپڈا نے بجلی چوروں کا گھیرا تنگ کر دیا‘ گجرات اور کنجاہ میں آپریشن
  • ☚ گجرات پولیس کا اسلحہ برداروں اور منشیات فروشوں کیخلاف آپریشن
  • ☚ طلبا گروپوں میں تصادم اور فائرنگ ‘ تعلیمی اداروں میں سرچ آپریشن کا فیصلہ
  • ☚ ٹریفک حادثات میں نوجوان جاں بحق‘ خاتون سمیت نصف درجن افراد زخمی
  • ☚ حکومت کی نئی لیبر پالیسی کے مثبت اثرات مرتب ہونگے:دلدار جٹ
  • ☚ ٹریفک حادثے میں جاں بحق ہونیوالا نوجوان سفیان سپردخاک
  • ☚ ریسکیو 1122کے زیر اہتمام نجی سکول میں تربیتی ورکشاپ کا انعقاد
  • ☚ عمران خان کے 6 غیر ملکی دوروں کے اخراجات سامنے آگئے
  • ☚ نیب نے آصف زرداری اور بلاول بھٹو کو 13 دسمبر کو طلب کرلیا
  • ☚ کراچی: ایم کیو ایم پاکستان کی محفل میلاد میں دھماکا، 6 زخمی
  • ☚ صدر مملکت کا ٹیلی فون لگوانے کیلئے رشوت کا انکشاف
  • ☚ میڈیا 6 ماہ صرف ترقی دکھائے، آگے وقت بہت اچھا یا بہت خراب، آج پرانی فوج نہیں، ایک ایک اینٹ لگاکر پاکستان دوبارہ بنارہے ہیں، فوجی ترجمان
  • ☚ ’’مریم اورنگزیب جھوٹی ہیں، کسی سے مخلص نہیں‘‘
  • ☚ قطری شہزادے کو نئے پاکستان میں بھی ’تلور‘ کے شکار کی اجازت
  • ☚ ہوسکتا ہے کچھ وزراء کو ہٹا دیں، وزیراعظم
  • ☚ شاہ محمود قریشی کا سشما سوراج کو کرارا جواب
  • ☚ لاڈلے کوکھیلنے کیلئے ملک دیدیاگیا، یوٹرن لینا اچھا ہے تو بجلی، گیس کی بڑھائی ہوئی قیمتوں اور مہنگائی پرلیں، بلاول بھٹو
  • ☚ معاشی و سیاسی دبائو،فرانس کی طرح برسلز میں بھی احتجاجی مظاہرے،نوجوانوں کی بھر پور شرکت
  • ☚ دہشت گرد کیمیائی حملوں کا منصوبہ بنا رہے ہیں، برطانوی حکام کا انتباہ
  • ☚ بریگزٹ ڈیل مسترد کی تو غیر معمولی خطرناک صورتحال کا سامنا ہوسکتا ہے،تھریسامے
  • ☚ فواد چوہدری کی برطانوی اور ہالی ووڈ اداکاروں کو پاکستان آنے کی دعوت
  • ☚ ناروے پلس تھریسا مے پلان کا معقول متبادل آپشن ہو سکتا ہے، امبر رڈ
  • ☚ فواد چوہدری لندن میں پکنک پر ہیں،وزیر اعظم نے وزارت اطلاعات میں آنے کی پیشکش کی ہے،شیخ رشید
  • ☚ مسئلہ کشمیر حل کئے بغیر امن کا خواب بلا جواز ہے،بیرسٹر عبدالمجید ترمبو
  • ☚ منی لانڈرنگ سے نمٹنے کی برطانوی کوشش قابل تعریف ہیں، ایف اے ٹی ایف
  • ☚ ایم پیز کو بیک سٹاپ پر اختیار دینے کی تجویز پر تھریسامے کو تنقید کا سامنا
  • ☚ پاکستان نے فائنل اپیل رد کرکے18 فلاحی تنظیموں کوملک سے نکال دیا
  • ☚ ’دیپیکا اور رنویر‘ شادی کی تقاریب کا احوال
  • ☚ انسٹا گرام 2018 میں زیادہ فالو کی جانے والی سیلیبرٹیز
  • ☚ ’مائیکل جیکسن‘ دنیا کا مشہور ترین پاپ اسٹار
  • ☚ میکسیکو کی حسینہ مس ورلڈ منتخ
  • ☚ فواد اورماہرہ کی ’دی لیجنڈ آف مولا جٹ ‘ کب ریلیز ہوگی؟ تاریخ کا اعلان ہوگی
  • ☚ ایمر جنگ ایشیا کپ ، پاکستان کو شکست
  • ☚ لاہور قلندرز نے محمد حفیظ کو کپتان مقرر کردیا
  • ☚ بیرون ملک سے افسران کو لانے کا مقصد بورڈ کو پروفیشنل خطوط پر چلانا ہے،احسان مانی
  • ☚ قومی ٹیم کو نئے اسٹارز پی ایس ایل سے نہیں ملے، باسط عل
  • ☚ صرف میری وجہ سےٹیم ہار رہی ہوگی تو قیادت چھوڑ دوں گا، سرفراز احمد
  • آج کا اخبار

    فلمی لوریاں بھی ماضی کا حصہ بن گئیں

    Published: 06-12-2018

    Cinque Terre

    ایک زمانہ تھا،جب ہندوستان اور پاکستان کی فلموں میں بہت اعلیٰ درجے کی لوریاں گائی جاتی تھیں،جوطویل مدت تک سامعین کے ذہنوں پر گہرا تاثر چھوڑتی تھیں،لیکن اب نہ مائیں بچوں کو لوریاں سنا کر انہیں سلاتی ہیں،نہ فلموں میں لوریوں کا رجحان ہے،طویل عرصے بعدگزشتہ دنوں ریلیز ہونے والی بھارتی فلم ’’ٹھگز آف ہندوستان ‘‘میں امیتابھ بچن کی آواز میں ایک لوری کو شامل کیا گیاہے۔اس ہفتےماضی کی چند مقبول لوریاں نذر قارئین ہیں:

    ماضی کی مقبول بھارتی فلم ’’البیلا‘‘میں شامل ہونے والی شاعر راجندر کرشن کی لوری ایک عرصے تک یاد رکھی گئی،جس کے بول تھے،

    دھیرے سے آجا ری اکھین میں نندیا‘

    آجا ری آجا دھیرے سے آجا

    لے کر سہانے سپنوں کی کلیاں‘

    آکے بسا دے پلکوں کی گلیاں

    چپکے سے نینن کی بگین میں نندیا آ جا ری آ جا‘

    دھیرے سے آجا

    لتا منگیشکر کی مدھرآواز میں،موسیقی رام چندرا نے ترتیب دی تھی۔اس لوری میں لتا کی آواز کا جادو سر چڑھ کر بولا اور اسے بچوں اور بڑوں میں بے حد پسند کیا گیا۔اسی طرز پر1955میں پاکستان کی پہلی گولڈن جوبلی فلم ’’نوکر‘‘کے لیےقتیل شفائی کی لکھی ہوئی لوری یا نظم’’راج دلارے توہے دل میں بساؤں، توہے گیت سناؤں‘‘بے حد مقبول ہوئی۔اس کی موسیقی جی اے چشتی نے دی تھی اور اسے ماضی کی گلوکارہ کوثر پروین نے گایا تھا۔کہا جاتا ہے کہ اس مقبول لوری کی بنا پر ہی فلم ’نوکر‘ نے گولڈن جوبلی کی تھی۔یہ وہ زمانہ تھا جب پاکستان اور بھارت کی فلموں میں ایک لوری شامل کرنا ٹرینڈ بن چکا تھا۔اسی تاثر کو لے کر 1955میں ریلیز ہونے والی بھارتی فلم ’’وچن‘‘میں آشا بھونسلے کی آواز میں گائی جانے والی لوری ’’چندا ماما دور کے‘‘کو بھی بہت پسند کیا گیا،اسے آج بھی یاد کیا جاتا ہے۔اس کی موسیقی شاعر و موسیقار روی نے دی تھی۔ساحر لدھیانوی نے فلم ’’جیون جیوتی‘‘کے لیے ایک لوری لکھی جسے لتا منگیشکر کی آواز میں ریکارڈ کروایا گیا تھا۔اُن دنوں لتا کی آوازمیں گائے جانے والے نغمے فلم کی کامیابی کی ضمانت سمجھے جاتے تھے،لیکن جب لوری کا رجحان بڑھا تو لتا منگیشکرکی آواز میںگائی جانے والے لوری کے بول فلم بینوں کے دلوں کو چھو گئے۔یہی وجہ ہے کہ طویل عرصے تک ایسے کلاسک شاہ کاروں کو یاد رکھا گیا،تاہم پر اثر شاعری کی بدولت لکھی جانے والی لوریوں کے لیےلتا کے علاوہ دیگر گلوکاراؤں کی آوازوں کو بھی پسند کیا گیا۔ 1958ء میں ریلیز ہونے والی کامیاب بھارتی فلم ’’لاجونتی‘‘ میں مجروح سلطان پوری کی لکھی گئی لوری ’’چندا رے چندا رے چھپے رہنا‘‘ بہت پسند کی گئی،اسے گیتا دت نے گایا تھا،انہیں سریلی آواز کی ملکہ کہا جاتا تھا۔گیتا دت کی ہی آواز میں1959میں بمل رائے کی فلم ’’سجاتا‘‘کے لیے گائی گئی لوری ،جسے مجروح سلطان پوری نے لکھاتھااور اس کی موسیقی ایس ڈی برمن نے ترتیب دی تھی،اس کے بول تھے،

    ننھی کلی سونے چلی، ہوا دھیرے آنا

    نیند بھرے پنکھ لیے جھولا جھلانا

    چاند کے رنگ سی گڑیا، نازوں کی ہے پلی

    چاندنی آج آنا میری گلی‘ ننھی پری سونے چلی

    اس لوری کے بول بے حد مشہور ہوئے۔ 1963میں فلم ’’ایک دل سو افسانے‘‘ کے لیے شاعرشیلیندرا کی لوری کولتا منگیشکر کی آواز میں ڈھالا گیا،یہ لوریفلم کی کامیابی کی ضمانت بنی اور اسے بہت پسند کی گیا،اس کے بول تھے،’’دور کے او چاند‘‘۔محمد رفیع کی آواز میں 1966 میںریلیز ہونے والی فلم ’’برہم چاری‘‘ میں ایک لوری شامل کی گئی ،جو ان کی مدھر گائیکی کی مثال ہے۔اس کے بول تھے۔ ’’میں گائوتم سو جائو‘