• ☚ وزیراعلی پنجاب کی زیرصدارت صوبائی کابینہ کا اجلاس
  • ☚ پاک ‘ سعودی عرب دوستی لا زوال ہے:صادق سنجرانی
  • ☚ راولاکوٹ کو سیاحتی ترقی کا مرکز بنائیں گے ‘بین الاقوامی سیاحت کے لیے یہ علاقہ موزوں ترین ہےراجہ فاروق حیدر
  • ☚ کنجاہ:شراب کی چالو بھٹی پر چھاپہ‘بدنام زمانہ منشیات فروش گرفتار
  • ☚ ضعیف العمر خاتون پر بھتیجے کا بدترین تشدد
  • ☚ میر شکیل احمد کے ایصال ثواب کیلئے ختم قل‘ ممتاز شخصیا ت کی شرکت
  • ☚ فتح پور میں شیشہ فلیورز برآمد ہونے پر صابر حسین کیخلا ف مقدمہ درج
  • ☚ کنجاہ پولیس نے ناجائز اسلحہ بردار گرفتار کر لیا ‘ پستول برآمد
  • ☚ ڈنگہ چوک کنجاہ سے منشیات فروش محمد احسن گرفتار‘ مقدمہ در ج
  • ☚ ڈپٹی کمشنر گجرات آج ایگریکلچرایڈوائزری کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کرینگے
  • ☚ سی ایس ایس امتحان رولز میں تبدیلی کا معاملہ : نظرثانی پٹیشن بحال
  • ☚ چاہے وقت لگے ملک لوٹنے والوں کو نشان عبرت بنائوں گا، عمران خان
  • ☚ سری لنکا میں گرجا گھروں اور ہوٹل دھماکوں میں 207 افراد ہلاک، کرفیو نافذ
  • ☚ ایمنسٹی یا کریک ڈائون، کابینہ کے دوسرے اجلاس میں بھی اسکیم پر اختلافات برقرار، متعدد ارکان FBR سے ناراض، ذائع
  • ☚ ہیموفیلیا کے عالمی دن کے موقع پرخصوصی تقریب کا انعقاد
  • ☚ فیض آباد دھرنا کیس، فیصلے سے افواج پاکستان کے حوصلے پر منفی اثرات مرتب ہوئے، وزارت دفاع
  • ☚ گجرات میں 5 افراد سے منشیات اور اسلحہ برآمد کر کے مقدمات درج کر لیے گئے
  • ☚ عمران خان چند برسوں میں اثاثے کئی گنا ہوجانےکا حساب دیں، سلیمان شہباز
  • ☚ IMF سے معاہدہ اسی ماہ،معاملات طے پاگئے، 6 سے 8 ارب ڈالر قرض ملے گا، کچھ چیزیں مہنگی ہوں گی،عام آدمی متاثر نہیں ہوگا، وزیرخزانہ
  • ☚ پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان معاملات طے ‘ اربوں ڈالر کا پیکج ملے گا:کڑے معاشی بحران کا سامنا ہے: وزیر خزانہ
  • ☚ انگلینڈ کے ایک تہائی شہریوں کو یقین ہے کہ سکاٹش بنک نوٹ جعلی ہیں
  • ☚ تحریک آزادی کشمیر کو سفارتی محاذ پر اجاگر کرنے کیلئے قومی کونسل بنائی جائے، راجہ نجابت حسین
  • ☚ تبدیلی کیلئے مل کر کوششیں کی جائیں، ہمیں علامہ محمد اقبال ؒکی فکر اپنانا ہوگا، کمیونٹی رہنما
  • ☚ شہباز شریف کا جمعرات کو دوبارہ چیک اپ ہوگا، رائل فری ہسپتال کی تصدیق
  • ☚ برطانیہ مذہبی آزادی کی حمایت کرتا رہے گا، ایسٹر پر تھریسامے کا پیغام
  • ☚ تحفظ ماحولیات مظاہروں کا چھٹا دن، مزید 200 پولیس افسران طلب
  • ☚ سکاٹش کرکٹ ٹیم کے نائب کپتان چل بسے
  • ☚ معدومیت کے خلاف بغاوت،پولیس مظاہرین کے خلاف حرکت میں آگئی
  • ☚ تھریسامے کی ایم پیز کو ہدایت دینے کی بجائے10کے ریس میں شرکت
  • ☚ کوونٹری میں تارکین وطن مخالف بریگزسٹ پارٹی کا اجلاس، مقامی آبادی کا شدید احتجاج
  • ☚ فلم ’’باجی‘‘ سے میرا کی شوبز میں دھماکے دار واپسی
  • ☚ میشا شفیع کا لکس اسٹار ایوارڈ سے اپنا نام نکالنے کا مطالبہ
  • ☚ عاطف اسلم ننھے گلوکاروں کی حوصلہ افزائی کے لئے میدان میں آگئے
  • ☚ گلوکارہ حمیرا ارشد اوراحمد بٹ کے درمیان طلاق
  • ☚ گلوکار علی گل پیر نے والدین کی علیحدگی سے متاثرہ بچوں کے نام ویڈیو جاری کردی
  • ☚ پاکستان کےپاس دنیا کی مہنگی ترین کوچنگ ٹیم
  • ☚ ایشٹن ٹرنر مسلسل پانچ بار صفر پر آؤٹ
  • ☚ پاکستانی کرکٹ ٹیم دورہ انگلینڈ اور ورلڈ کپ کیلئے لندن پہنچ گئی
  • ☚ عامر خان کوعالمی ویلٹر ویٹ فائٹ میں کرافورڈ نے ہرا دیا
  • ☚ ایشین ویٹ لفٹنگ، طلحہ طالب آٹھویں پوزیشن پر
  • آج کا اخبار

    ایم پیز کو تیسری بریگزٹ ڈیل کو ووٹ دینے کیلئے قائل کروں گی، برطانوی وزیراعظم

    Published: 16-03-2019

    Cinque Terre

    لندن: برطانوی وزیراعظم تھریسا مے نے کہا ہے کہ وہ اپنی تیسری بریگزٹ ڈیل پر آئندہ دنوں میں ووٹ دینے کیلئے ایم پیز کو قائل کرنے کی کوشش کریں گی۔ ارکان پارلیمنٹ کے بریگزٹ کی مقررہ تاریخ 29 مارچ 2019 میں توسیع پر متفق ہونے کے بعد کامنز میں یورپی یونین سے علیحدگی کیلئے تیسری بار بریگزٹ معاہدے پر 20مارچ کو ووٹنگ ہوگی۔ اس سے قبل تھریسا مے کی پہلی ڈیل کو جنوری میں تاریخی شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا جبکہ ان کی نظرثانی شدہ ڈیل کو دو روز قبل ارکان نے مسترد کر دیا تھا۔ ارکان نے نوڈیل بریگزٹ کو بھی مسترد کیا۔ اس صورت حال کے بعد ٹوری ایم پیز اور حکومتی اتحادی جماعت ڈی یو پی بریگزٹ ڈیل کے حوالے سے مزید قانونی یقین دہانیوں کے خواہاں ہیں۔ کیبنٹ منسٹر ڈیوڈ لڈنگٹن نے کہا کہ جب تک ایم پیز ڈیل پر متفق نہیں ہوتے، اس وقت تک یورپ میں حقیقی عدم برداشت موجود ہے۔ یورپین کونسل کے صدر ڈونلڈ ٹسک نے کہا کہ اگر برطانیہ اپنی بریگزٹ سٹریٹجی پر غور کیلئے مزید مہلت ضروری سمجھے تو یورپی یونین بریگزٹ میں طویل

    توسیع کیلئے اوپن ہے۔ یورپی رہنمائوں نے کہا کہ برطانیہ کو بریگزٹ میں توسیع کیلئے سٹریٹجی کے حوالے سے بالکل کلیئر ہونا چاہئے۔ برطانیہ نے توسیع کی درخواست کی تو یورپی یونین کے 21 اور 22 مارچ کے اجلاس میں یورپی یونین کے ارکان اتقاق رائے سے فیصلہ کریں گے۔ کامنز میں گزشتہ چند روز کے دوران متعدد قرار دادوں پر ووٹنگ ہوئی۔ منگل کو ایم پیز نے تھریسا مے کی ڈیل دوسری بار مسترد کی تھی۔ بدھ کو کسی بھی صورت میں نوڈیل بریگزٹ کا آئیڈیا مسترد کر دیا گیا اور جمعرات کو کامنز نے آرٹیکل 50 میں مشروط توسیع کی منظوری دی۔ رپورٹس کے مطابق ان ووٹوں سے صورت حال میں کوئی تبدیلی نہیں آئی، کیونکہ قانون تبدیل نہیں ہوا ہے۔ بدھ اور جمعرات کے ووٹ کوئی قانونی پابندی عائد نہیں کرتے۔ اس کا مطلب یہ ہے کہ برطانیہ 29 مارچ کو ڈیل یا ڈیل کے بغیر یورپی یونین سے علیحدگی اختیار کر سکتا ہے۔ فی الوقت قانونی طور پر اسے موخر نہیں کیا جا سکتا اور شاید تھریسا مے کیلئے اس سے سیاسی طور پر بچنا مشکل ہوگا۔ جمعرات کی تحریک میں پارلیمنٹ نے تاخیر کے دو آپشنز سے اتفاق کیا۔ اگر یورپی یونین کے برسلز اجلاس سے قبل اگلے ہفتے ایم پیز تھریسا مے کی ڈیل پر متفق ہوتے ہیں تو پھر برطانوی وزیر اعظم یورپی یونین سے 30 جون تک تاخیر کرنے کی درخواست کر سکتی ہیں۔ اگر ایم پیز تھریسا مے کی ڈیل کو تیسری بار بھی مسترد کر دیتے ہیں تو اس صورت میں توسیع طویل ہو سکتی ہے اور برطانیہ مئی میں یورپی پارلیمنٹ کے الیکشنز کا حصہ ہو سکتا ہے۔ بریگزٹ میں کسی بھی توسیع کیلئے یورپی یونین کے 27 ملکوں کا اتفاق رائے ضروری ہے اور برسلز اجلاس سے قبل ممکنہ شرائط پر بات ہو سکتی ہے۔ یورپی یونین کا اجلاس 21 مارچ کو ہوگا۔ کیبنٹ منسٹر ڈیوڈ لڈنگٹن نے بی بی سی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ حالیہ ہفتے کے ووٹوں سے برطانیہ کے نوڈیل بریگزٹ کے امکانات معدوم ہو گئے ہیں لیکن یہ اب بھی ہو سکتا ہے تاوقتیکہ کوئی متبادل حل تلاش نہ کر لیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ ایم پیزکو چاہئے کہ وہ ویک اینڈ پر ٹیبل پر موجود ڈیل پر اپنی رائے کا اظہار کریں اور امکان ہے کہ اسے 27 یورپی ملکوں کی حمایت اور ممکنہ طور پر یورپی پارلیمنٹ کی بھی حمایت حاصل ہو جائے۔ انہوں نے کہا کہ برطانوی عوا م اور دیگر یورپی حکومتوں میں بھی ویسٹ منسٹر میں اتفاق رائے سے آگے نہ بڑھنے پر حقیقی عدم برداشت پایا جاتا ہے۔ بی بی سی ریڈیو فور کے پروگرام ٹوڈے میں انہوں نے کہا کہ برطانیہ کو مختصر ٹیکنیکل توسیع نہیں بلکہ خاصی طویل توسیع کی ضرورت ہوگی۔