• ☚ جعلی ڈگری کیس : حاجی ناصر محمود تاحیات نااہل قرار
  • ☚ تھانہ لاری اڈا کی مصالحتی کمیٹی کا اجلاس‘عرفان اسحاق بانٹھ کنونیئر منتخب
  • ☚ معمولی رنجش پر نوجوان کو موت کے گھاٹ اتارنیوالا سفاک قاتل گرفتار
  • ☚ حسین کالونی میں دو بہنوں سے زیادتی کے واقعہ کا نوٹس لے لیا گیا
  • ☚ محمد امین سیال کے بیٹے وحید سیال اور بھتیجے زاہد سیال کی دعوت ولیمہ
  • ☚ گجرات اور منڈی بہاؤالدین میں بجلی چوروں کیخلاف کریک ڈاؤن
  • ☚ گجرات اور منڈی بہاؤالدین میں بجلی چوروں کیخلاف کریک ڈاؤن
  • ☚ شاہدولہ روڈ پر لکڑی کے گودام میں آتشزدگی‘ لاکھوں کا سامان جل گیا
  • ☚ کنجاہ : بجلی چوروں کا گھیرا تنگ‘ نصف درجن چوروں کیخلاف مقدمات درج
  • ☚ چوہدری اخلاق وڑائچ کو چیف آفیسر کا عہدہ سنبھالنے پر مبارکباد
  • ☚ وزیراعلیٰ جس جھونپڑی میں رہتے ہیں اُس کا پتا بتادیں، مریم اورنگزیب
  • ☚ ’سعد رفیق کے پروڈکشن آرڈر جاری نہ ہوئے تو ایوان نہیں چلے گا‘
  • ☚ عمران خان کے 6 غیر ملکی دوروں کے اخراجات سامنے آگئے
  • ☚ نیب نے آصف زرداری اور بلاول بھٹو کو 13 دسمبر کو طلب کرلیا
  • ☚ کراچی: ایم کیو ایم پاکستان کی محفل میلاد میں دھماکا، 6 زخمی
  • ☚ صدر مملکت کا ٹیلی فون لگوانے کیلئے رشوت کا انکشاف
  • ☚ میڈیا 6 ماہ صرف ترقی دکھائے، آگے وقت بہت اچھا یا بہت خراب، آج پرانی فوج نہیں، ایک ایک اینٹ لگاکر پاکستان دوبارہ بنارہے ہیں، فوجی ترجمان
  • ☚ ’’مریم اورنگزیب جھوٹی ہیں، کسی سے مخلص نہیں‘‘
  • ☚ قطری شہزادے کو نئے پاکستان میں بھی ’تلور‘ کے شکار کی اجازت
  • ☚ ہوسکتا ہے کچھ وزراء کو ہٹا دیں، وزیراعظم
  • ☚ برطانوی پارلیمنٹ بھی ’’یوٹرن‘‘ ’’لیڈی ٹرن‘‘ کے نعروں سے گونج اٹھی
  • ☚ یمنی حکومت اور حوثی باغیوں کا جنگ بندی پر اتفاق
  • ☚ فرانس: کرسمس بازار پر حملہ کرنے والا ملزم مارا گیا
  • ☚ یورپی یونین کا بریگزٹ معاہدے پر دوبارہ مذاکرات نہ کرنے کا اعلان
  • ☚ بریگزٹ معاہدے کو بچانے کیلئے یورپی رہنمائوں سے تھریسامے کی ملاقاتیں
  • ☚ وزیراعظم تھریسامے کے خلاف تحریک عدم اعتماد ناکام
  • ☚ معاشی و سیاسی دبائو،فرانس کی طرح برسلز میں بھی احتجاجی مظاہرے،نوجوانوں کی بھر پور شرکت
  • ☚ دہشت گرد کیمیائی حملوں کا منصوبہ بنا رہے ہیں، برطانوی حکام کا انتباہ
  • ☚ بریگزٹ ڈیل مسترد کی تو غیر معمولی خطرناک صورتحال کا سامنا ہوسکتا ہے،تھریسامے
  • ☚ فواد چوہدری کی برطانوی اور ہالی ووڈ اداکاروں کو پاکستان آنے کی دعوت
  • ☚ تازہ بہ تازہ: ناکامی سے کیا ڈرنا...
  • ☚ نئی نسل کے گلوکاروں نے فلم انڈسٹری کو نئی زندگی دی
  • ☚ ٹی وی ڈراموں کا سنہرا دور
  • ☚ کترینہ نے فلم ’’ٹھگس آف ہندوستان‘‘ کی ناکامی کی ذمہ داری تسلیم کرلی
  • ☚ ’’اے آر رحمان‘‘ موسیقی کی دنیا کی ایک سحر انگیز شخصیت
  • ☚ بھارتی کرکٹ بورڈنےپاکستان سے 15کروڑ روپے مانگ لیے
  • ☚ ورلڈکپ میں شکست خوردہ ہاکی ٹیم آج وطن لوٹے گی
  • ☚ دلیری دکھائیں، نیچرل گیم کھیلیں، سرفراز کا کھلاڑیوں کو پیغام، کرکٹ ٹیم آج جنوبی افریقا روانہ
  • ☚ ویسٹ انڈیز نے بنگلہ دیش کو ہرادیا
  • ☚ قومی ٹی20، کراچی کوملتان سے شکست،پشاور نے فاٹا کو ہرادیا
  • آج کا اخبار

    اپنی ذمہ داریوں کو محسوس کر کے جیو

    Published: 01-03-2018

    Cinque Terre

    ابن فہیم ؒ سے منسوب ہے کہ وہ فرماتے ہیں کہ جس حیوان سے آدمی کو پیار ہو اس حیوان کی عادتیں غیر شعوری طور پر اس میں آجاتی ہیں اور جب اس کا گوشت کھاتے لگے تو حیوان کے ساتھ مشابہت میں اور اضافہ ہو جاتا ہے۔ عرب اونٹ کھانے کے شوقین ہوتے ہیں اس لئے ان کی طبیعت میں نحوت، میرث اور اکڑ پن کا عنصر زیادہ پایا جاتا ہے اس طرح انگریز سور کا گوشت پسند کرتے ہیں اس لئے ان میں فحاشی کا عنصر زیادہ پایا جاتا ہے ہمارے ہاں جب سے فارمی مرغی کھانے کا رواج آیا ہے تب سے ہم بحیثیت قوم چوں چوں شور شرابا تو بہت کرتے ہیں لیکن مقابلہ کرنے کی قوت ہم میں ختم ہو گئی ہمارے سامنے ایک سے ایک غلط کام ہوتا ہے ہم ٹس سے مس نہیں ہوتے ہمارے سیاستدان ہیں جی بھر کے لوٹتے ہیں ہمارے سامنے وہ اربوں ، کھربوں میں کھیلنے لگتے ہیں ان کی اولادیں غریبوں کو بھیڑ بکریاں سمجھتی ہیں وہ ہمارے خدا بن بیٹھتے ہیں ہم پھر بھیان کے آگے دم بھرتے رہتے ہیں ایک گلی، ایک سڑک یا بریانی کی ایک پلیٹ پر اپنی ووٹ کیط اقت کو نہ سمجھتے ہوئے دوبارہ اسی کرپٹ اشرافیہ کو ووٹ ڈال آتے ہیں اور پھر روتے بھی ہیں کہ ہمارے ملک کاب یڑہ غرق ہو گیا ہے جعلی پیر، عامل روز نئے جال کے ساتھ آتے ہیں ہم جانتے ہوئے ان کے چنگل میں پھنس جاتے ہیں میرا ایک دوست ایک بابے سے لاٹری کے نمبر پوچھتا تھا پاگل کو میں نے اتنا سمجھایا کہ اگر بابا نمبر جانتا ہوتا تو وہ اپنے لئے نکال لیتا پر اس کی سمجھ میں نہیں آیا۔ عامل لوگ ایک ایک شعبدہ بازی سے لاکھوں کماتے ہیں ان کے دعوے ایسے ہوتے ہیں کہ بندہ عقل سے سوچے تو کبھی یقین نہ کرے مگر لوگ ہزاروں لٹا دیتے ہیں ہمیں پتہ چل جائے کہ فلاں دکان دار فراڈیا ہے دھوکہ باز ہے ۔ ملاوٹ کرتا ہے ہم نے سو دوسو کی چیز خریدنی ہوتی ہے مگر ہم اس دکان دار کے پاس دوبارہ نہیں جاتے مگر سیاستان، جھوٹے عامل، جھوٹے پیر ہمیں پتہ ہونے کے باوجود لوٹتے رہتے ہیں مگر ہم فارمی مرغی کی طرح خود ذبح ہونے کے لئے تیار رہتے ہیں روز ہم نوجوان بیٹیوں کے جنازے اٹھا رہے ہیں ایک دو دن روکر تھوڑا سا شور ڈال کر چپ کر جاتے ہیں معاشرہ تو ویسے ہی سرنڈر کر گیا ہے کہ میرے تو اپنے ہی سیاپے ختم نہیں ہو رہے۔ میں پرائی آگ میں کیوں چھلانگ لگاؤں ہم پر تو فارمی مرغی کا اتنا اثر ہو گیا ہے کہ روز ٹریفک حادثات ون ویلنگ کی وجہ سے ہمارے پیارے ہم سے جدا ہو رہے ہیں پر ہم نہ تو اس کا کوئی حل تلاش کررہے ہیں اور تو اور ہم اپنی اولاد کو بھی نہیں روک رہے جو ہماری آنکھوں کے سامنے موٹر سائیکل گھر لے کر آتا ہے جو ون ویلنگ یا ریس کے لئے تیار کی گئی ہوتی ہے کیا ہمیں نظر نہیں آرہا ہوتا یا ہم فارمی مرغی کی طرح اتنی سستی اتنی کاہلی،ا تنی بزدلی آگئی ہوئی ہے کہ ہم اپنے بچوں کو بھی کنٹرول نہیں کر پا رہے۔ خدا کے لئے بحیثیت معاشرہ کے فرد کے بحیثیت گھر کے سربراہ کے اپنی ذمہ داریاں پوری کریں۔ پوری قوت سے پورے وسائل کے ساتھ جہالت کے خلاف آواز اٹھائیں یہ گیم نہیں خود کشی ہے۔ میری نوجوان نسل سے بھی گزارش ہے کہ دنیامیں سب سے بھاری چیز ایک بوڑھے باپ کے لئے نوجوان بیٹے کا جنازہ ہوتا ہے باپ کو یہ بوجھ نہ اٹھوائیں۔ ماؤں، بہنوں کو آپ سے بڑی امیدیں ہیں ان کی امیدوں کو نہ توڑیں رب کریم سے دعا ہے کہ وہ سب کی حفاظت فرمائے۔ ہمارے حق میں خیر والے فیصلے فرمائے۔ لوگوں کے لئے امید بنیں خوش رکھیں۔ خوش رہیں۔