• ☚ سری لنکا کیخلاف کیریئر کی یادگار اننگز کھیلی، رحمت شاہ
  • ☚ غیر قانونی گیس سلنڈر نصب کرانیوالے ٹرانسپوٹروں کیخلاف کاروائیاں
  • ☚ نواز شریف کی رہائی سے افواہوں کی پٹاری بند‘چہ مگوئیاں دم توڑ گئیں
  • ☚ تحریک انصاف کے رہنما راجہ نواز نے بیوہ خاتون کی عزت تار تار کردی
  • ☚ یوم عاشورہ کے تمام جلوسوں اور مجالس کی ویڈیو ریکاڈنگ کے احکامات
  • ☚ انجمن حیدریہ ہریہ والا کے زیر اہتمام مجالس کا سلسلہ جاری
  • ☚ چوہدری وجاہت حسین کو ضلعی چیئرمین منتخب کرائینگے : امیر حسین شاہ
  • ☚ گجرات ٹریولز ایجنٹس ایسوسی ایشن کا اجلاس‘اہم مطالبات پیش کر دیے
  • ☚ اجر رہنما جاوید بٹ کی راجہ نعیم کی والدہ کی وفات پر تعزیت
  • ☚ کھاریاں سے منشیات کی بڑی کھیپ پکڑی گئی ‘ سپلائر بھی گرفتار
  • ☚ نواز شریف لاہور کے بعد جاتی امرا پہنچ گئے
  • ☚ سوئی گیس مہنگی، LPG سستی، قیمت میں 10 سے 143 فیصد اضافہ، LPG کے تمام ٹیکس ختم، صرف 10 فیصد GST لگے گا، بلوچستان،سندھ کیلئے CNG بھی مہنگی
  • ☚ ایشیا کپ: پاکستان فیورٹ ہے بھارت نہیں، سنجے منجریکر
  • ☚ وزیراعظم ہائوس کی 8 بھینسوں کی تفصیل سامنے آگئی
  • ☚ شریف خاندان کے پیرول میں توسیع کا نوٹیفیکیشن جاری
  • ☚ ’شریف خاندان کو مفروضے پر دی گئی سزا برقرار نہیں رہ سکتی‘
  • ☚ جمہوریت مضبوط،مزیدمستحکم ہوگی،نئے صدر کی حلف برداری جمہوری عمل کے تسلسل کیلئے اہم ہے، آرمی چیف
  • ☚ جمہوریت مضبوط،مزیدمستحکم ہوگی،نئے صدر کی حلف برداری جمہوری عمل کے تسلسل کیلئے اہم ہے، آرمی چیف
  • ☚ شہباز شریف نےخود کو احتساب کے لئے پیش کردیا
  • ☚ بہت جلدنوازشریف کی رہائی کیلئے تحریک شروع کرینگے،مسلم لیگ ن
  • ☚ برطانیہ پاکستان کی سیاسی حساسیت سے واقف
  • ☚ بریگزٹ کے بعد انتقام کا خدشہ، ای یو مائیگرنٹس کو برطانوی ویزے دینے پر غور
  • ☚ سکھوں کا علیحدہ مملکت کیلئے خالصتان ایڈمنسٹریشن کا تاریخی اعلان
  • ☚ لندن: منی لانڈرنگ کے الزام میں پاکستانی سیاسی شخصیت اہلیہ سمیت گرفتار
  • ☚ بریگزٹ: یورپی یونین تھریسامے کو اپنی تجاویز پر قائل کرنے میں ناکام
  • ☚ ایم پیز کو میرے پلان یا پھر کوئی ڈیل نہیں کا انتخاب کرنا ہوگا، تھریسا مے
  • ☚ برطانیہ: منی لانڈرنگ کے الزام میں گرفتار پاکستانی کا نام سامنےآگیا
  • ☚ پاکستان کیلئے سرمایہ کاری کی کوشش کرتا رہا ہوں گا، صاحبزادہ جہانگیر
  • ☚ تھریسامے کا اپنی لیڈرشپ پر بحث سے پریشان ہونے کا اعتراف
  • ☚ بریگزٹ ،برطانیہ ای یو سے علیحدگی کا بل ادا کئے بغیر نہیں رہ سکتا
  • ☚ شاہد کپور بھی اقربا پروری کے خلاف میدان میں آگئے
  • ☚ ابھیشیک بچن کی فلم ’من مرضیاں‘ مشکلات کا شکار
  • ☚ ریمو ڈی سوزا نے فلم ’ریس تھری‘ کی ناکامی کی وجہ بتا دی
  • ☚ عالیہ کی والدہ بھی رنبیرکے ساتھ بیٹی کے رشتے پرخوش
  • ☚ پریانکا چوپڑا دمہ کے مرض میں مبتلا
  • ☚ کلب میں جھگڑنے والے بین اسٹوکس اور ہیلز پرفرد جرم عائد
  • ☚ پاکستانی فیلڈنگ میں بہتری، ہیڈ کوچ نے ٹیم کو ورلڈ کلاس بنادیا
  • ☚ پاکستان کی بھارت پر چار فاسٹ بولرز سے ہلہ بولنے کی تیاری
  • ☚ ایشیاکپ، پاک بھار ت ٹکراؤ کیلئے ٹیمیں تیار
  • ☚ بابر اعظم کے ون ڈے کیریئر میں دو ہزار رنز مکمل
  • آج کا اخبار

    2008 ء میں کوہلی کی حمایت وینگسارکر کو مہنگی پڑی

    Published: 09-03-2018

    Cinque Terre

    نئی دہلی:2008ء میں ویرات کوہلی کی حمایت اْس وقت کے چیف سلیکٹر دلیپ وینگسارکر کو بہت مہنگی پڑی، اْن کے عہدے کی مدت کم کردی گئی تھی۔بھارتی اخبار کے مطابق بھارت کے سابق ٹیسٹ کپتان دلیپ وینگسارکرکا کہنا ہے کہ بحیثیت چیف سلیکٹر بھارتی کرکٹ بورڈ2008ء میں اْن کے عہدے کی مدت صرف اس لئے کم کردی گئی تھی کہ انہوں نے تامل ناڈو کے ایس بدریناتھ کے مقابلے میں بھارتی ٹیم کے موجودہ کپتان ویرات کوہلی کی حمایت کی تھی، جو اْس وقت بورڈ کے خزانچی سری نواسن کو ناگوار گزری تھی۔ممبئی میں ایک تقریب کے دوران صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے وینگسارکر کا کہنا تھا کہ 2008ء کے جونیئر ورلڈ میں بھارتی ٹیم کی قیادت کرنے والے ویرات کوہلی کی دورہ سری لنکا کے لئے ون ڈے ٹیم میں شمولیت پر اصرار کی وجہ سے سری نواسن نے اْنہیں چیف سلیکٹر کے عہدے سے ہٹایا۔وینسارکر نے بتایا کہ دورہ سری لنکا کے لئے ٹیم منتخب کرنیسلیکشن کمیٹی کا اجلاس ہوا تو وہ چاہتے تھے کہ کوہلی ایک روزہ میچوں میں ڈیبیو کریں لیکن کپتان ایم ایس دھونی اور کوچ گیری کرسٹین اس پر قائل نہیں تھے۔سابق کرکٹر کا کہنا تھا کہ وہ سمجھتے تھیکوہلی کی اسکواڈ میں شمولیت کے لئے آئیڈیل صورتحال ہے حالانکہ دیگر چار سلیکٹرز میرے فیصلے پر راضی تھے لیکن دھونی اور کرسٹین ہچکچا رہے تھے کیونکہ انہوں نے کوہلی کو کھیلتے ہوئے زیادہ نہیں دیکھا تھا، میں نے ان سے کہا کہ ہمیں اْسے ٹیم میں ضرور شامل کرنا چاہئے۔وینگسارکر نے بتایا کہ میں جانتا تھا وہ کیوں ایس بدریناتھ کو ٹیم میں لینا چاہتے ہیں کیونکہ وہ چنئی سپر کنگز کا پلیئر تھا، اگر کوہلی ٹیم میں آتا تو بدریناتھ کو ڈراپ کردیا جائے گا۔انہوں نے بتایا کہ سری نواسن کو بدریناتھ کے ڈراپ ہونے کا ملال تھا کیونکہ وہ اْن کا پلیئر تھا۔بدریناتھ نے2008ء میں دورہ سری لنکا کے دوران دوسرے ایک روزہ میچ سے ڈیبیو کیا اور تین میچوں میں 27، 6 اور6 رنز بنائے جبکہ کوہلی نے پہلے ایک روزہ میچ میں ہی ڈیبیو کیا اور تمام پانچ میچز کھیلے جن میں 12،37،25، 54 اور 31 رنز بنائے۔