• ☚ NA70قمر زمان کائرہ کی حمایتوں کا سلسلہ زور پکڑ گیا‘جگہ جگہ گاؤں اعلان حمایت کے بڑے اکٹھ
  • ☚ چوہدری مختار ڈھل کی چوہدری محمد الیاس ‘لیاقت بھدر کی حمایتی کمپین زور و شور سے جاری
  • ☚ لطیف قریشی کی جانب سے وارڈ11میں ن لیگ دفتر قائم ‘ چوہدری جعفر اقبال‘چوہدری شبیر احمد نے افتتاح کیا
  • ☚ چوہدری مبشرکی کامیابی کیلئے ایڑھی چوٹی کا زور لگا دینگے:واصف رشید
  • ☚ سلیم سرور جوڑا کا نئی سبزی منڈی کا دورہ‘ تاجروں سے ملاقاتیں
  • ☚ اورنگزیب بٹ عوام کے دلوں کی دھڑکن ہیں کامیاب کرائینگے: صغیر وڑائچ
  • ☚ پائیدار ترقی کیلئے قدرتی وسائل کی اہمیت پر گجرات یونیورسٹی میں مذاکرہ
  • ☚ ڈینگی کے ممکنہ خطرات سے نمٹنے کیلئے تمام محکمہ جات کو الرٹ جاری
  • ☚ حسین الٰہی کے حق میں ریلی :کونسلرز سمیت 120کارکنوں کیخلاف مقدمہ درج
  • ☚ توصیف عبد اللہ ‘ مرزا شاہکار سمیت اہم شخصیات کا سلیم سرور جوڑا کی حمایت کا اعلان
  • ☚ مونس الٰہی کا مختلف دیہاتوں کا دورہ‘ وفود کی پرویز الٰہی سے ملاقاتیں
  • ☚ سلیم سرور جوڑا کے ہاتھوں تھانہ اے ڈویژن کے بالمقابل دفتر کا افتتاح
  • ☚ جھوٹے اور کھوکھلے وعدوں کے عادی نہیں چوہدری ظہور الٰہی خاندان نسل در نسل عوامی خدمت کر رہا ہے‘مونس الٰہی
  • ☚ احتساب عدالت کے فیصلے سے نئی تاریخ رقم ہوئی ہے: نعمان احمد
  • ☚ نواز شریف، مریم اور کیپٹن صفدر کے خلاف ایون فیلڈ ریفرنس کا فیصلہ محفوظ
  • ☚ عمران خان اقربا پروری اور جنسی ہراسگی میں ملوث ہیں، ریحام خان کا الزام
  • ☚ چین میں خام لوہے کی کان میں دھماکے سے 12 کان کن ہلاک
  • ☚ سربراہ پاک فوج جنرل قمر جاوید باجوہ کی نگراں وزیر اعظم ناصر الملک سے ملاقات
  • ☚ ریحام خان کی کتاب برطانیہ سے شائع ہوئی توہتک عزت کا دعویٰ کروں گی، جمائما
  • ☚ نگراں وزیراعظم کا توانائی شعبے کی بہتری کیلیے جامع منصوبہ مرتب کرنے کا حکم
  • ☚ تحریک انصاف کا منشور لفاظی کے سوا کچھ نہیں، الطاف شاہد
  • ☚ اسلام آباد ہائیکورٹ نے فہد ملک کیس میں انسداد دہشت گردی کی دفعہ بحال کر دی
  • ☚ نیٹو اتحادیوں کا دفاعی اخراجات میں 41 بلین ڈالر اضافے کا فیصلہ
  • ☚ نواز شریف اور مریم نے پاکستان واپسی کیلئے ٹکٹ بک کرالئے، استقبال کی تیاریاں تیز
  • ☚ لندن، ایون فیلڈ اپارٹمنٹس کے باہر پھر احتجاج، ہاتھاپائی، 3 افراد گرفتار
  • ☚ بورس جانسن کے استعفیٰ کے بعد تھریسامے نے جیرمی ہنٹ کو نیا وزیرخارجہ مقرر کردیا
  • ☚ برطانیہ میں 2016۔17 کے دوران تیزاب گردی کے 398 واقعات پیش آئے، شیڈومنسٹرافضل خان
  • ☚ برطانیہ میں 2016۔17 کے دوران تیزاب گردی کے 398 واقعات پیش آئے، شیڈومنسٹرافضل خان
  • ☚ نوازشریف کی وطن واپسی سے جمہوریت مستحکم ہوگی، عوام اب تبدیلی چاہتے ہیں، کمیونٹی رہنماؤں کی مختلف آراء
  • ☚ ٹرمپ، پیوٹن مجوزہ ملاقات پر نیٹواتحاد اندیشوں کا شکار
  • ☚ فنکار ملک میں جمہوریت کے فروغ کے خواہشمند ہیں
  • ☚ سنجو اور طیفا ان ٹربل کا بے چینی سے انتظار!!
  • ☚ ممبئی: بالی ووڈ اداکار سنجے دت کی اپنی پروڈکشن میں بننے والی پہلی فلم ’پراس تھانم‘ کا پوسٹر جاری کردیا گیا۔
  • ☚ راجیو گاندھی کیلیے نامناسب زبان استعمال کرنا نوازالدین کو مہنگا پڑگیا
  • ☚ پاکستان سینما انڈسٹری پہلے سے بہتر ہورہی ہے،علی ظفر
  • ☚ قومی ہاکی کیمپ کیلئے مدعو کھلاڑیوں سے سندھ مکمل نظرانداز
  • ☚ سرد موسم میں علی الصبح میچز سرفراز کیلئے پریشانی کا سبب
  • ☚ ون ڈے سیریز کا آج سے آغاز،سال میں پہلی فتح کے متلاشی پاکستان اور زمبابوے مدمقابل
  • ☚ ہرارے،پاکستانی کرکٹرزنے ون ڈے سیریز کی تیاری شروع کردی
  • ☚ حشیش کا استعمال ثابت،احمد شہزاد کو چارج شیٹ جاری،جواب طلب
  • آج کا اخبار

    نوازشریف کی وطن واپسی سے جمہوریت مستحکم ہوگی، عوام اب تبدیلی چاہتے ہیں، کمیونٹی رہنماؤں کی مختلف آراء

    Published: 11-07-2018

    Cinque Terre

    بولٹن/ مانچسٹر/ اولڈہم/ بری: احتساب عدالت کا فیصلہ آنے کے بعد یہاں کے سیاسی اور سماجی حلقوں میں پاکستان کے سابق وزیراعظم میاں نوازشریف کی وطن واپسی اور25جولائی کو ہونے والے انتخابات پر سیاسی اثرات کے حوالے سے مختلف قیاس آرائیاں کی جارہی ہیں۔ ایک فریق کا خیال ہے کہ میاں نوازشریف واپس نہیں جائیں گے اور اپنی اہلیہ کی بیماری کو طول دے کر کسی بھی سیاسی بارگین ہونے کا انتظار کریں گے، جبکہ دوسرے فریق کا خیال ہے کہ میاں نوازشریف کو اگر سیاست میں زندہ رہنا ہے تو انہیں پاکستان جاکر گرفتاری دینی چاہئے۔ میاں نواز شریف کے جانے سے پاکستان کا سیاسی پس منظر کیا ہوگا یہ ایک ایسا سوال ہے جو ہر پاکستانی کے ذہن میں اٹکا ہوا ہے۔ نمائندہ جنگ نے سروے کے دوران مختلف لوگوں سے رائے معلوم کی جس پر بولٹن کے سماجی رہنما ڈاکٹر سرور اشرف نے اپنے خیال کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ میاں نوازشریف سزا ہونے کے بعد سیاست میں تنہا ہوگئے ہیں۔ میاں برادران کی راہیں جدا ہو چکی ہیں اور میاں نوازشریف اڈیالہ جیل میں ایک رات بھی مشکل سے گزاریں گے۔ میاں نواز شریف کو اگر سیاست میں زندہ رہنا ہے اور پاکستان کی سیاسی شطرنج پر کھیلنا ہے تو انہیں گرفتاری دینا ہوگی، ورنہ مسلم لیگ ن کا یہ شیر عوام کی نظروں میں گیدڑ بن جائے گا اور آنے والے انتخابات میں اس کے منفی اثرات مرتب ہوں گے۔ سماجی رہنما راجہ عباس خان کا کہنا تھا کہ مسلم لیگ ن ایک پختہ اور حالات کا مقابلہ کرنے والی جماعت بن چکی ہے۔ میاں نوازشریف کے لیے اب جیل یا جلاوطن کی صعوبتیں برداشت کرنا کوئی بڑی بات نہیں۔ ان کی وطن واپسی سے مسلم لیگی کارکنوں کے حوصلے بلند ہوں گے، جس سے مسلم لیگ ن ایک بار پھر انتخابات میں کامیاب ہوکر ملک کی ایک نئی سیاسی سمت کا تعین کرے گی۔ مانچسٹر میں کمیونٹی رہنما بلیک سٹون کے ایم ڈی چوہدری طاہر صدیق نے کہا ہے کہ نوازشریف کی پاکستان واپسی خوش آئند عمل ہے، انہیں پاکستان جاکر عوامی اور پاکستانی عدالتوں میں اپنے مافی الضمیر کو واضح کرنا چاہئے، ان کی واپسی سے ان کی پارٹی مسلم لیگ ن کو بھی فائدہ ہوگا اور پاکستان میں حالیہ انتخابات میں بھی اور شعور پیدا ہوگا۔ تاہم کسی کو بھی قانون کو ہاتھ میں نہیں لینا چاہیے۔ استاد محمد صفدر کا کہنا ہے کہ میاں نوازشریف عدالت سے استثنا لے کر برطانیہ اپنی بیمار اہلیہ کی عیادت کے لیے آئے تھے، انہیں وطن واپس جاکر عدالتوں کا سامنا کرنا چاہیے۔ ان کی واپسی سے مسلم لیگ ن بھی الیکشن میں متحرک ہوگی۔ ان کا وطن واپس جانا پاکستان میں احتساب عمل اور قانون کی بالادستی کے لیے بھی بہترین ثابت ہوگا۔ استاد محمد صفدر نے کہا کہ پاکستان میں انتخابات کو صاف و شفاف ہونا چاہئے اور تمام سیاست دانوں کو انتخابی مہم چلانے کی آزادی دی جانی بھی ضروری ہے۔ چوہدری نصر اللہ خان رہنما پیپلز پارٹی برطانیہ نے کہا ہے کہ میاں نوازشریف سیاسی لیڈر ہیں۔ سیاسی لیڈر کی زندگی ان کے اپنے وطن اور عوام کے ساتھ رہنے میں ہی ہے، یہ میاں نوازشریف کا احسن اقدام ہے۔ ماضی میں پیپلز پارٹی کے مرد آہن سابق صدر پاکستان آصف زرداری بھی جیلوں میں رہے ہیں۔ مسلم لیگ ن نارتھ ویسٹ کے چیف پیٹرن ہارون کھٹانہ نے کہا ہے میاں نوازشریف کی وطن واپسی سے پاکستان میں انتخابات میں نئی روح پڑے گی، مسلم لیگ ن کے کارکنوں، لیڈروں میں نیا ولولہ و جوش بیدار ہوگا اور انتخابات غیر جانبدار ہونے کے امکانات بڑھ جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ احتساب کا عمل بھی غیر جانبدار ہونا چاہیے، صرف سیاستدان ہی نہیں بلکہ تمام کرپٹ افراد کا احتساب کیا جانا چاہیے، ہارون کھٹانہ، میاں نواز شریف کے گھر پر حملہ قابل مذمت اقدام ہے، چوہدری عبدالکریم چیئرمین مسلم لیگ ن نارتھ ویسٹ نے کہا ہے کہ میاں نوازشریف سچے محب وطن پاکستانی ہیں۔ وہ اپنے خلاف مقدمات میں آخری دن تک پابندی کے ساتھ عدالتی کارروائی میں کھڑے رہے، اب اہلیہ کی بیماری کے لیے وہ برطانیہ آئے تھے۔ ان کی واپسی میاں نوازشریف کی سچائی اور حب الوطنی کو ظاہر کرے گی اور جمہوریت کے لیے ان کی قربانی سنہری حروف میں لکھی جائے گی۔ میاں نوازشریف کی سخت سزاؤں کے بعد وطن واپسی کا فیصلہ قومی مفاد اور انتخابات کے لیے بہت اہمیت کا حامل ہے۔ اس سے جمہوریت کو استحکام ملے گا اور مسلم لیگ ن کی اہمیت بڑھے گی۔ اولڈہم کی کمیونٹی نے میاں نوازشریف کی نیب کورٹ کے فیصلے کے بعد وطن واپسی کے فیصلے کو ملکی سیاست میں اثرانداز ہونے کے امکان کو مسترد کردیا ہے۔ راجہ عبدالمعروف کا کہنا تھا کہ میاں نوازشریف کا وطن واپسی کا فیصلہ بہت اچھا ہے تاہم ملکی سیاست پر اس کے اثرات کم ہی ہونگے۔ عوامی سوچ اور شعور تبدیل ہو چکا ہے ووٹ کی عزت کی بات کرنے والے ووٹ کی حرمت کو نہیں بچا سکے، میاں مظفر علی کا کہنا تھا کہ نوازشریف کا عدالتوں کا اور سزا کا سامنا کرنے کا فیصلہ وقت کی اہم ضرورت ہے اگر میاں صاحب ایسا نہیں کرتے تو ان کی سیاست تقریباً ختم ہوجاتی۔ میاں صاحب کے بیانیہ کو تقویت ملی ہے لیکن سزا کے فیصلہ پر بھی عوامی اور پارٹی ردعمل کمزور نظر آیا۔ اسی ردعمل کے تناظر میں میاں نوازشریف کی وطن واپسی پر بھی سیاست میں ہلچل نظر نہیں آتی۔ نون لیگ کے بڑے بڑے نام یا تو پارٹی چھوڑ چکے ہیں یا انہیں بھی مقدمات اور نااہلی کا سامنا ہے ایسی بے یقینی کی صورتحال میں وطن واپسی کا فیصلہ خوش آئند لیکن اثرانداز ہونے کے امکانات نہایت کم ہیں۔ ملک الطاف کا کہنا تھا کہ نیب کورٹ کے فیصلہ کے بعد نوازشریف کی سیاست ختم ہوگی ہے۔ وطن واپسی کا فیصلہ سیاست کو بچانے کی ایک آخری کوشش ہے لیکن اس سے عوامی تاثر پر کوئی خاص اثر نہیں پڑے گا۔ عوام اب تبدیلی کی خواہاں ہے اور میاں نوازشریف کی وطن واپسی پر بھی عوامی رائے تبدیل نہیں ہوگی۔ بری میں مقیم پاکستانی اور کشمیری کمیونٹی شخصیات نے نوازشریف کی پاکستان واپسی اور انتخابی مہم پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ ایون فیلڈ ریفرنس میں اگرچہ میاں نوازشریف، ان کی صاحبزادی مریم نواز اور داماد کیپٹن محمد صفدر کو سزا ہوچکی ہے۔ گرفتاری کی صورت میں بھی مسلم لیگ ن کو آمدہ عام انتخابات میں فائدہ پہنچ سکتا ہے۔ مسلم کانفرنس برطانیہ کے صدر چوہدری بشیر رٹوی کا کہنا تھا کہ یقیناً نوازشریف کی ملک میں موجودگی سے ن لیگ کا ووٹ بینک برقرار رہے گا۔ پاکستانی عوام باشعور ہیں۔ سابق وزیراعظم کرپشن اور منی لانڈرنگ میں ملوث پائے گئے ہیں۔ 25جولائی کو ووٹرز قوم کے خون پسینے کی کمائی لوٹنے والوں کو مسترد کرکے سبق سکھائیں گے۔ ن لیگ یوتھ ونگ کے رہنما راجہ احمد نے کہا کہ قوم اچھی طرح جانتی ہے کہ نوازشریف کو دیوار سے لگاکر اس کو فائدہ پہنچایا گیا۔ مخالفین نوازشریف کو ٹارگٹ کرکے انتخابی عمل کو متاثر کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔ چوہدری عنصر محمود نے کہا کہ نوازشریف پاکستانی عدالتوں سے سزا یافتہ ہیں، وطن واپسی پر گرفتار کرکے جیل بھیجا جائے۔ پاکستانی عوام اب ن لیگ کے دھوکے میں نہیں آئیں گے۔ عوام25جولائی کو کرپٹ سیاستدانوں کا راستہ ووٹ کی طاقت سے روکیں گے۔ نواز شریف کی پاکستانی سیاست میں اب کوئی جگہ نہیں