• ☚ معروف نعت خواں قاری غلام سرور نقشبندی کا صاحبزادہ ماکو کی پہاڑیوں میں سیکورٹی گارڈز کی فائرنگ سے جاں بحق
  • ☚ ون ڈش کی خلاف وزری پر جلالپورجٹاں کے میرج ہال میں چھاپے ،رنگ برنگے کھانے قبضہ کرلئے گئے
  • ☚ پالتوکتے کوچھریاں مارکرقتل کرنیکامعاملہ،واقعہ کاسخٹ نوٹس لے لیاگیا
  • ☚ ناروالی سنٹر میں پانچویں جماعت کا امتحان پر امن طریقہ سے ہو رہا ہے
  • ☚ ککرالی ہلاکت کیس ،DSPکھاریاں میاں محمد ارشد کومعطل کردیاگیا
  • ☚ علی بٹ اور فیصل بٹ کی سید مصطفی گیلانی کو ایس پی انویسٹی گیشن تعینات ہونے پر مبارکباد
  • ☚ جھیورنوالی سے 87پتنگیں برآمد ،کنجاہ پولیس کامیاب آپریشن
  • ☚ پنجاب پولیس نے اپنا ویب ٹی وی چینل بنانیکافیصلہ کرلیا،میگزین بھی شائع ہوگا
  • ☚ فاران انسٹی ٹیوٹ کی قابل قدرکاوشیں ہیں،طارق جاوید چوہدری کوخراج تحسین پیش کرتے ہیں:ڈاکٹراعجاز
  • ☚ ایس پی انویسٹی گیشن کے آتے ہی ایس پی ہیڈکوارٹر کاتبادلہ ،چارج چھوڑدیا
  • ☚ پی ٹی آئی کے پاس ہے کیا جو این آر او لیں، خواجہ آصف
  • ☚ قطرکی پاکستان کو ادھارLNGدینے سے معذرت، معاشی دباؤبڑھنے کاامکان
  • ☚ نیب نےن لیگ کے رہنما کامران مائیکل کو گرفتار کرلیا
  • ☚ ’’وزیر ِجھوٹ و خرافات نے جھوٹوں سے بھرپور پریس کانفرنس کی ‘‘
  • ☚ ’’وزیر ِجھوٹ و خرافات نے جھوٹوں سے بھرپور پریس کانفرنس کی ‘‘
  • ☚ عمران خان نے سہانے خواب دکھا کر عوام کو دھوکا دیا، احسن اقبال
  • ☚ ’’مڈٹرم الیکشن کی باتیں قیاس آرائیاں ہیں‘‘
  • ☚ سوات اور گردونواح میں زلزلے کے جھٹکے
  • ☚ اسلام آباد سمیت ملک کے مختلف شہروں میں زلزلے کے جھٹکے
  • ☚ 8 کروڑ افراد کیلئے مفت علاج، اسکیم کا آغاز، صحت کارڈ کے تحت غریب خاندان 7 لاکھ 20 ہزار روپے تک کا علاج حکومتی خرچے پر کراسکے گا، وزیراعظم
  • ☚ کشمیر میںانسانی حقوق کی خلاف ورزیاں روکنے کیلئے یورپی و برطانوی ارکان پارلیمنٹ کو کردار ادا کرنا ہوگا، امجد بشیر ایم ای پی
  • ☚ زلفی بخاری کا ’’اوورسیز پاکستانی سوشل کونسل ‘‘ کے قیام کا اعلان
  • ☚ بریگزٹ، تھریسامے ایم پیز سے ڈیل میں تبدیلی کیلئے مزید وقت مانگیں گی
  • ☚ حکومت نو ڈیل بریگزٹ کی صورت میں سڑکوں پر فسادات کی تیاری کررہی ہے، لارڈ باب
  • ☚ لیورپول سٹی سینٹر کے قریب فائرنگ سے 30سالہ شخص ہلاک
  • ☚ عوامی مینڈیٹ کی تکمیل حکومت کی ذمہ داری، یورپی یونین سے برطانیہ کی علیحدگی کا عمل بروقت مکمل کرلوں گی، تھریسامے
  • ☚ عوامی مینڈیٹ کی تکمیل حکومت کی ذمہ داری، یورپی یونین سے برطانیہ کی علیحدگی کا عمل بروقت مکمل کرلوں گی، تھریسامے
  • ☚ جرمن فوج میں مسلم آئمہ کی تقرری کیلئے مشاورت
  • ☚ حکومت پاکستان نے الطاف حسین کیخلاف مقدمات کی پیروی کے واجبات ادا کر دیئے
  • ☚ یورپی رہنمائوں کو بیک سٹاپ میں تبدیلی پر قائل کرلوں گی، تھریسامے، وزیراعظم برسلز پہنچ گئیں
  • ☚ کرن جوہرکی چہیتی کہنے پرکنگنا کوعالیہ کا کرارجواب
  • ☚ فلم کے سیٹ پررنبیر کو دیکھ کر عالیہ ڈائیلاگ کیوں بھول جاتی ہیں؟ اداکارہ کا اہم انکشاف
  • ☚ رنویر سنگھ نے راکھی ساونت کو دوسری ماں قرار دے دیا
  • ☚ ماضی میں سلمان خان کے سہارا دینے پرشاہ رخ خان آج بھی آبدیدہ
  • ☚ ماہرہ خان نے ایک اور بین الاقوامی اعزاز اپنے نام کرلیا
  • ☚ چیئرمین احسان مانی اور ایم ڈی وسیم خان آج دبئی روانہ ہونگے
  • ☚ پاکستان ویمن کرکٹ ٹیم نے تاریخ رقم کردی
  • ☚ آئی سی سی T20 رینکنگ، پاکستان کی پہلی پوزیشن برقرار
  • ☚ دبئی میں دوسرا ون ڈے پاکستان ویمن ٹیم نے جیت لیا
  • ☚ ثانیہ مرزا کی ٹینس کورٹ میں واپسی کی تیاری شروع
  • آج کا اخبار

    نوازشریف کی وطن واپسی سے جمہوریت مستحکم ہوگی، عوام اب تبدیلی چاہتے ہیں، کمیونٹی رہنماؤں کی مختلف آراء

    Published: 11-07-2018

    Cinque Terre

    بولٹن/ مانچسٹر/ اولڈہم/ بری: احتساب عدالت کا فیصلہ آنے کے بعد یہاں کے سیاسی اور سماجی حلقوں میں پاکستان کے سابق وزیراعظم میاں نوازشریف کی وطن واپسی اور25جولائی کو ہونے والے انتخابات پر سیاسی اثرات کے حوالے سے مختلف قیاس آرائیاں کی جارہی ہیں۔ ایک فریق کا خیال ہے کہ میاں نوازشریف واپس نہیں جائیں گے اور اپنی اہلیہ کی بیماری کو طول دے کر کسی بھی سیاسی بارگین ہونے کا انتظار کریں گے، جبکہ دوسرے فریق کا خیال ہے کہ میاں نوازشریف کو اگر سیاست میں زندہ رہنا ہے تو انہیں پاکستان جاکر گرفتاری دینی چاہئے۔ میاں نواز شریف کے جانے سے پاکستان کا سیاسی پس منظر کیا ہوگا یہ ایک ایسا سوال ہے جو ہر پاکستانی کے ذہن میں اٹکا ہوا ہے۔ نمائندہ جنگ نے سروے کے دوران مختلف لوگوں سے رائے معلوم کی جس پر بولٹن کے سماجی رہنما ڈاکٹر سرور اشرف نے اپنے خیال کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ میاں نوازشریف سزا ہونے کے بعد سیاست میں تنہا ہوگئے ہیں۔ میاں برادران کی راہیں جدا ہو چکی ہیں اور میاں نوازشریف اڈیالہ جیل میں ایک رات بھی مشکل سے گزاریں گے۔ میاں نواز شریف کو اگر سیاست میں زندہ رہنا ہے اور پاکستان کی سیاسی شطرنج پر کھیلنا ہے تو انہیں گرفتاری دینا ہوگی، ورنہ مسلم لیگ ن کا یہ شیر عوام کی نظروں میں گیدڑ بن جائے گا اور آنے والے انتخابات میں اس کے منفی اثرات مرتب ہوں گے۔ سماجی رہنما راجہ عباس خان کا کہنا تھا کہ مسلم لیگ ن ایک پختہ اور حالات کا مقابلہ کرنے والی جماعت بن چکی ہے۔ میاں نوازشریف کے لیے اب جیل یا جلاوطن کی صعوبتیں برداشت کرنا کوئی بڑی بات نہیں۔ ان کی وطن واپسی سے مسلم لیگی کارکنوں کے حوصلے بلند ہوں گے، جس سے مسلم لیگ ن ایک بار پھر انتخابات میں کامیاب ہوکر ملک کی ایک نئی سیاسی سمت کا تعین کرے گی۔ مانچسٹر میں کمیونٹی رہنما بلیک سٹون کے ایم ڈی چوہدری طاہر صدیق نے کہا ہے کہ نوازشریف کی پاکستان واپسی خوش آئند عمل ہے، انہیں پاکستان جاکر عوامی اور پاکستانی عدالتوں میں اپنے مافی الضمیر کو واضح کرنا چاہئے، ان کی واپسی سے ان کی پارٹی مسلم لیگ ن کو بھی فائدہ ہوگا اور پاکستان میں حالیہ انتخابات میں بھی اور شعور پیدا ہوگا۔ تاہم کسی کو بھی قانون کو ہاتھ میں نہیں لینا چاہیے۔ استاد محمد صفدر کا کہنا ہے کہ میاں نوازشریف عدالت سے استثنا لے کر برطانیہ اپنی بیمار اہلیہ کی عیادت کے لیے آئے تھے، انہیں وطن واپس جاکر عدالتوں کا سامنا کرنا چاہیے۔ ان کی واپسی سے مسلم لیگ ن بھی الیکشن میں متحرک ہوگی۔ ان کا وطن واپس جانا پاکستان میں احتساب عمل اور قانون کی بالادستی کے لیے بھی بہترین ثابت ہوگا۔ استاد محمد صفدر نے کہا کہ پاکستان میں انتخابات کو صاف و شفاف ہونا چاہئے اور تمام سیاست دانوں کو انتخابی مہم چلانے کی آزادی دی جانی بھی ضروری ہے۔ چوہدری نصر اللہ خان رہنما پیپلز پارٹی برطانیہ نے کہا ہے کہ میاں نوازشریف سیاسی لیڈر ہیں۔ سیاسی لیڈر کی زندگی ان کے اپنے وطن اور عوام کے ساتھ رہنے میں ہی ہے، یہ میاں نوازشریف کا احسن اقدام ہے۔ ماضی میں پیپلز پارٹی کے مرد آہن سابق صدر پاکستان آصف زرداری بھی جیلوں میں رہے ہیں۔ مسلم لیگ ن نارتھ ویسٹ کے چیف پیٹرن ہارون کھٹانہ نے کہا ہے میاں نوازشریف کی وطن واپسی سے پاکستان میں انتخابات میں نئی روح پڑے گی، مسلم لیگ ن کے کارکنوں، لیڈروں میں نیا ولولہ و جوش بیدار ہوگا اور انتخابات غیر جانبدار ہونے کے امکانات بڑھ جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ احتساب کا عمل بھی غیر جانبدار ہونا چاہیے، صرف سیاستدان ہی نہیں بلکہ تمام کرپٹ افراد کا احتساب کیا جانا چاہیے، ہارون کھٹانہ، میاں نواز شریف کے گھر پر حملہ قابل مذمت اقدام ہے، چوہدری عبدالکریم چیئرمین مسلم لیگ ن نارتھ ویسٹ نے کہا ہے کہ میاں نوازشریف سچے محب وطن پاکستانی ہیں۔ وہ اپنے خلاف مقدمات میں آخری دن تک پابندی کے ساتھ عدالتی کارروائی میں کھڑے رہے، اب اہلیہ کی بیماری کے لیے وہ برطانیہ آئے تھے۔ ان کی واپسی میاں نوازشریف کی سچائی اور حب الوطنی کو ظاہر کرے گی اور جمہوریت کے لیے ان کی قربانی سنہری حروف میں لکھی جائے گی۔ میاں نوازشریف کی سخت سزاؤں کے بعد وطن واپسی کا فیصلہ قومی مفاد اور انتخابات کے لیے بہت اہمیت کا حامل ہے۔ اس سے جمہوریت کو استحکام ملے گا اور مسلم لیگ ن کی اہمیت بڑھے گی۔ اولڈہم کی کمیونٹی نے میاں نوازشریف کی نیب کورٹ کے فیصلے کے بعد وطن واپسی کے فیصلے کو ملکی سیاست میں اثرانداز ہونے کے امکان کو مسترد کردیا ہے۔ راجہ عبدالمعروف کا کہنا تھا کہ میاں نوازشریف کا وطن واپسی کا فیصلہ بہت اچھا ہے تاہم ملکی سیاست پر اس کے اثرات کم ہی ہونگے۔ عوامی سوچ اور شعور تبدیل ہو چکا ہے ووٹ کی عزت کی بات کرنے والے ووٹ کی حرمت کو نہیں بچا سکے، میاں مظفر علی کا کہنا تھا کہ نوازشریف کا عدالتوں کا اور سزا کا سامنا کرنے کا فیصلہ وقت کی اہم ضرورت ہے اگر میاں صاحب ایسا نہیں کرتے تو ان کی سیاست تقریباً ختم ہوجاتی۔ میاں صاحب کے بیانیہ کو تقویت ملی ہے لیکن سزا کے فیصلہ پر بھی عوامی اور پارٹی ردعمل کمزور نظر آیا۔ اسی ردعمل کے تناظر میں میاں نوازشریف کی وطن واپسی پر بھی سیاست میں ہلچل نظر نہیں آتی۔ نون لیگ کے بڑے بڑے نام یا تو پارٹی چھوڑ چکے ہیں یا انہیں بھی مقدمات اور نااہلی کا سامنا ہے ایسی بے یقینی کی صورتحال میں وطن واپسی کا فیصلہ خوش آئند لیکن اثرانداز ہونے کے امکانات نہایت کم ہیں۔ ملک الطاف کا کہنا تھا کہ نیب کورٹ کے فیصلہ کے بعد نوازشریف کی سیاست ختم ہوگی ہے۔ وطن واپسی کا فیصلہ سیاست کو بچانے کی ایک آخری کوشش ہے لیکن اس سے عوامی تاثر پر کوئی خاص اثر نہیں پڑے گا۔ عوام اب تبدیلی کی خواہاں ہے اور میاں نوازشریف کی وطن واپسی پر بھی عوامی رائے تبدیل نہیں ہوگی۔ بری میں مقیم پاکستانی اور کشمیری کمیونٹی شخصیات نے نوازشریف کی پاکستان واپسی اور انتخابی مہم پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ ایون فیلڈ ریفرنس میں اگرچہ میاں نوازشریف، ان کی صاحبزادی مریم نواز اور داماد کیپٹن محمد صفدر کو سزا ہوچکی ہے۔ گرفتاری کی صورت میں بھی مسلم لیگ ن کو آمدہ عام انتخابات میں فائدہ پہنچ سکتا ہے۔ مسلم کانفرنس برطانیہ کے صدر چوہدری بشیر رٹوی کا کہنا تھا کہ یقیناً نوازشریف کی ملک میں موجودگی سے ن لیگ کا ووٹ بینک برقرار رہے گا۔ پاکستانی عوام باشعور ہیں۔ سابق وزیراعظم کرپشن اور منی لانڈرنگ میں ملوث پائے گئے ہیں۔ 25جولائی کو ووٹرز قوم کے خون پسینے کی کمائی لوٹنے والوں کو مسترد کرکے سبق سکھائیں گے۔ ن لیگ یوتھ ونگ کے رہنما راجہ احمد نے کہا کہ قوم اچھی طرح جانتی ہے کہ نوازشریف کو دیوار سے لگاکر اس کو فائدہ پہنچایا گیا۔ مخالفین نوازشریف کو ٹارگٹ کرکے انتخابی عمل کو متاثر کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔ چوہدری عنصر محمود نے کہا کہ نوازشریف پاکستانی عدالتوں سے سزا یافتہ ہیں، وطن واپسی پر گرفتار کرکے جیل بھیجا جائے۔ پاکستانی عوام اب ن لیگ کے دھوکے میں نہیں آئیں گے۔ عوام25جولائی کو کرپٹ سیاستدانوں کا راستہ ووٹ کی طاقت سے روکیں گے۔ نواز شریف کی پاکستانی سیاست میں اب کوئی جگہ نہیں