• ☚ وزیراعلی پنجاب کی زیرصدارت صوبائی کابینہ کا اجلاس
  • ☚ پاک ‘ سعودی عرب دوستی لا زوال ہے:صادق سنجرانی
  • ☚ راولاکوٹ کو سیاحتی ترقی کا مرکز بنائیں گے ‘بین الاقوامی سیاحت کے لیے یہ علاقہ موزوں ترین ہےراجہ فاروق حیدر
  • ☚ کنجاہ:شراب کی چالو بھٹی پر چھاپہ‘بدنام زمانہ منشیات فروش گرفتار
  • ☚ ضعیف العمر خاتون پر بھتیجے کا بدترین تشدد
  • ☚ میر شکیل احمد کے ایصال ثواب کیلئے ختم قل‘ ممتاز شخصیا ت کی شرکت
  • ☚ فتح پور میں شیشہ فلیورز برآمد ہونے پر صابر حسین کیخلا ف مقدمہ درج
  • ☚ کنجاہ پولیس نے ناجائز اسلحہ بردار گرفتار کر لیا ‘ پستول برآمد
  • ☚ ڈنگہ چوک کنجاہ سے منشیات فروش محمد احسن گرفتار‘ مقدمہ در ج
  • ☚ ڈپٹی کمشنر گجرات آج ایگریکلچرایڈوائزری کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کرینگے
  • ☚ سی ایس ایس امتحان رولز میں تبدیلی کا معاملہ : نظرثانی پٹیشن بحال
  • ☚ چاہے وقت لگے ملک لوٹنے والوں کو نشان عبرت بنائوں گا، عمران خان
  • ☚ سری لنکا میں گرجا گھروں اور ہوٹل دھماکوں میں 207 افراد ہلاک، کرفیو نافذ
  • ☚ ایمنسٹی یا کریک ڈائون، کابینہ کے دوسرے اجلاس میں بھی اسکیم پر اختلافات برقرار، متعدد ارکان FBR سے ناراض، ذائع
  • ☚ ہیموفیلیا کے عالمی دن کے موقع پرخصوصی تقریب کا انعقاد
  • ☚ فیض آباد دھرنا کیس، فیصلے سے افواج پاکستان کے حوصلے پر منفی اثرات مرتب ہوئے، وزارت دفاع
  • ☚ گجرات میں 5 افراد سے منشیات اور اسلحہ برآمد کر کے مقدمات درج کر لیے گئے
  • ☚ عمران خان چند برسوں میں اثاثے کئی گنا ہوجانےکا حساب دیں، سلیمان شہباز
  • ☚ IMF سے معاہدہ اسی ماہ،معاملات طے پاگئے، 6 سے 8 ارب ڈالر قرض ملے گا، کچھ چیزیں مہنگی ہوں گی،عام آدمی متاثر نہیں ہوگا، وزیرخزانہ
  • ☚ پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان معاملات طے ‘ اربوں ڈالر کا پیکج ملے گا:کڑے معاشی بحران کا سامنا ہے: وزیر خزانہ
  • ☚ انگلینڈ کے ایک تہائی شہریوں کو یقین ہے کہ سکاٹش بنک نوٹ جعلی ہیں
  • ☚ تحریک آزادی کشمیر کو سفارتی محاذ پر اجاگر کرنے کیلئے قومی کونسل بنائی جائے، راجہ نجابت حسین
  • ☚ تبدیلی کیلئے مل کر کوششیں کی جائیں، ہمیں علامہ محمد اقبال ؒکی فکر اپنانا ہوگا، کمیونٹی رہنما
  • ☚ شہباز شریف کا جمعرات کو دوبارہ چیک اپ ہوگا، رائل فری ہسپتال کی تصدیق
  • ☚ برطانیہ مذہبی آزادی کی حمایت کرتا رہے گا، ایسٹر پر تھریسامے کا پیغام
  • ☚ تحفظ ماحولیات مظاہروں کا چھٹا دن، مزید 200 پولیس افسران طلب
  • ☚ سکاٹش کرکٹ ٹیم کے نائب کپتان چل بسے
  • ☚ معدومیت کے خلاف بغاوت،پولیس مظاہرین کے خلاف حرکت میں آگئی
  • ☚ تھریسامے کی ایم پیز کو ہدایت دینے کی بجائے10کے ریس میں شرکت
  • ☚ کوونٹری میں تارکین وطن مخالف بریگزسٹ پارٹی کا اجلاس، مقامی آبادی کا شدید احتجاج
  • ☚ فلم ’’باجی‘‘ سے میرا کی شوبز میں دھماکے دار واپسی
  • ☚ میشا شفیع کا لکس اسٹار ایوارڈ سے اپنا نام نکالنے کا مطالبہ
  • ☚ عاطف اسلم ننھے گلوکاروں کی حوصلہ افزائی کے لئے میدان میں آگئے
  • ☚ گلوکارہ حمیرا ارشد اوراحمد بٹ کے درمیان طلاق
  • ☚ گلوکار علی گل پیر نے والدین کی علیحدگی سے متاثرہ بچوں کے نام ویڈیو جاری کردی
  • ☚ پاکستان کےپاس دنیا کی مہنگی ترین کوچنگ ٹیم
  • ☚ ایشٹن ٹرنر مسلسل پانچ بار صفر پر آؤٹ
  • ☚ پاکستانی کرکٹ ٹیم دورہ انگلینڈ اور ورلڈ کپ کیلئے لندن پہنچ گئی
  • ☚ عامر خان کوعالمی ویلٹر ویٹ فائٹ میں کرافورڈ نے ہرا دیا
  • ☚ ایشین ویٹ لفٹنگ، طلحہ طالب آٹھویں پوزیشن پر
  • آج کا اخبار

    ۭلندن میں مودی کے حامیوں نے سکھوں اور کشمیریوں پر ہلہ بول دیا، لاتوں گھونسوں سے 3 افراد زخمی

    Published: 11-03-2019

    Cinque Terre

    لندن / فرینکفرٹ : بھارتی حکومت کی جانب سے سکھوں اور کشمیری عوام پر مظالم کے خلاف احتجاج کرنے والوں پر گزشتہ روز مودی کے حامیوں نے حملہ کر دیا اور مظاہرین پر گھونسوں اور لاتوں کی بارش کر دی، جس کے نتیجے میں ایک صحافی سمیت 3افراد زخمی ہوگئے، بھارتی جیلوں میں قید سکھ قیدیوں کی رہائی کیلئے مظاہرے کا اہتمام سکھوں کی مختلف تنظیموں نے مشترکہ طور پر کیا تھا جبکہ کشمیری گروپوں نے سکھوں کی حمایت میں مظاہرے میں شرکت کی۔ کشمیری اپنے ہاتھوں میں کشمیر کا پرچم اٹھائے ہوئے تھے، سکھ مظاہرین بینر اٹھائے ہوئے تھے، جن پر خالصتان کے قیام اور فیس بک پر میسیج پوسٹ کرنے پر گرفتار کئے گئے اور جعلی اور جھوٹے الزامات پر قید کئے گئے درجنوں سکھوں کو فوری طور پر رہا کرنے کے مطالبات درج تھے، مظاہرین کا کہنا تھا کہ بھارتی حکومت نے جن لوگوں کو حراست میں لیا ہے، ان میں متعدد برطانوی شہری شامل ہیں، جو اپنے رشتہ داروں سے ملنے بھارت گئے ہوئے تھے۔ مظاہرین نے اس حوالے سے

    رنجیت سنگھ، سرجیت سنگھ اور اروندر سنگھ کے نام خاص طورپر لئے، جنھیں فیس بک پر میسیج پوسٹ کرنے پر جیل میں ڈال دیاگیا ہے۔ مظاہرہ پرامن طورپر جاری تھا کہ اچانک مودی کا حامی ایک گروپ اچانک نمودار ہوا اور پرامن مظاہرین کے خلاف اشتعال انگیز نعرے لگانا شروع کردیئے، ان لوگوں نے ایسے پلے کارڈ اٹھا رکھے تھے، جن پر سکھ مذہب کے خلاف توہین آمیز نعرے درج تھے، جس کے بعد دونوں گروپوں میں ہاتھا پائی شروع ہوگئی اور ہولبرن اور لندن سکول آف اکنامکس کا پورا علاقہ اس کی لپیٹ میں آگیا اور کچھ دیر کیلئے اس علاقے میں آمدورفت رک گئی۔ مظاہرین کو روکنے کیلئے فوری طورپر درجنوں پولیس وینز موقع پر پہنچ گئیں اور انھوں نے دونوں گروپوں کو الگ کرنے کی کوشش کی، اس دوران مودی کے حامیوں نے خالصتانی اورکشمیری مظاہرین پر بوتلیں پھینکیں اور دونوں جانب کے لوگوں نے ایک دوسرے پر گھونسوں اورلاتوں کی بارش کردی۔ سکھ مظاہرین نے بھارتی ہائی کمیشن کے سامنے بھارتی پرچم زمین پر گرا دیا، اس دوران ایک نجی چینل کیلئے کام کرنے والے پاکستانی رپورٹر فرید قریشی بھی زخمی ہوگئے، ان کی ناک اور آنکھ پر چوٹ لگی۔ انھوں نے بتایا کہ وہ اپنے فرائض انجام دے رہے تھے، جب انھیں حملے کا نشانہ بنایا گیا۔ پولیس کی ایمبولنس سے زخمیوں کو ابتدائی طبی امداد فراہم کی گئی۔ فرید قریشی نے کہا کہ اگرچہ میری آنکھ پر لگنے والی چوٹ معمولی نظر آرہی ہے لیکن یہ خطرناک بھی ثابت ہوسکتی ہے۔ انھوں نے کہا کہ میں بہت زیادہ درد محسوس کر رہا ہوں۔ انھوں نے بتایا کہ ہاتھا پائی میں شریک دو افراد کو پولیس نے گرفتار کرلیا۔ انھوں نے ان دونوں کے ہاتھوں میں ہتھکڑی دیکھی ہے۔ اس تصادم کے دوران زخمی ہونے والے ایک شخص کے سر سے خون بہتا ہوا نظر آرہا تھا۔ ورلڈ سکھ پارلیمنٹ کے جوگاسنگھ نے بین الاقوامی میڈیا سے باتیں کرتے ہوئے جنگ روکنے کیلئے فوری اقدامات کا مطالبہ کیا اور کہا کہ جنگ کی صورت میں سکھوں کا وطن اور سکھ آبادی تباہ ہوجائے گی۔ خالصتان کونسل کے امریک سنگھ سہوتا نے بھارت کے زیر قبضہ علاقوں کے سکھوں اور کشمیریوں پر زور دیا کہ وہ جنگ روکنے کیلئے کوششیں کریں اور سکھ فوجیوں سے کہا کہ مکمل جنگ چھڑجانے کی صورت میں وہ پنجاب واپس چلے جائیں اور اپنے لوگوں کو تحفظ فراہم کرنے کی کوشش کریں۔ سکھ فار جسٹس کے ڈوپنڈر جیت سنگھ اور پرماجیت سنگھ پما نے مطالبہ کیا کہ بھارت کے زیر قبضہ پنجاب میں ریفرنڈم اور کشمیر میں رائے شماری کرائی جائے تاکہ جمہوری طورپر ان تنازعات کا مستقل حل نکل سکے۔ سکھ ریلیف کے بلبیر سنگھ بینس نے بھارت سے تمام سیاسی سکھ قیدیوں کو فوری طورپر رہا کرنے اور متنازع علاقے میں حق خود اختیاری کا دیرینہ وعدہ پورا کرنے کا مطالبہ کیا۔ کشمیری رہنمائوں نے اقوام متحدہ کے انسانی حقوق سے متعلق کمشنر کی رپورٹ پر فوری کاررروائی کرنے اور بھارتی حکومت کو کشمیر میں مظالم بند کرنے اور متنازع علاقے میں حق خود ارادی کا دیرینہ وعدہ پورا کرنے کا مطالبہ کیا۔ اوورسیز پاکستانیز ویلفیئر آرگنائزیشن کے نعیم عباسی نے کہا کہ بین الاقوامی میڈیا کی جانب سے بھارت کے فضائی حملوں کے بارے میں جھوٹے دعوئوں کی پول کھول دیئے جانے سے مودی کے پروپیگنڈے کی کوششوں کو بری طرح جھٹکا لگا ہے۔ انھوں نے کہا کہ لندن میں آج ہونے والے ایونٹ کے بعد اب ہندوتوا کو اگلے ہفتوں اور مہینوں کے دوران مزید چیلنجوں کا سامنا کرنا پڑے گا۔ صباح نیوز کے مطابق لندن میں بھارتی ہائی کمیشن کے باہر سکھوں اور کشمیریوں کے احتجاج پر بھارتی انتہا پسندوں نے دھاوا بول دیا اور مظاہرین سے جھنڈے اور پلے کارڈ چھیننے کی کوشش کی۔ جرمنی میں بھی مسلمانوں اور سکھوں نے مقبوضہ وادی میں کشمیریوں پر مظالم کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا۔ بھارتی جارحیت کے خلاف جرمنی کے شہر فرینکفرٹ میں انٹرنیشنل خالصہ فیڈریشن جرمنی اور ای یو پاک فرینڈشپ فیڈریشن یورپ کے زیراہتمام احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔ مظاہرے میں سکھ برادری اور یورپ میں بسنے والے تمام مکاتب فکر کے افراد نے بھارتی جارحیت کے خلاف شرکت کی۔