• ☚ گیس بحران بڑھتے ہی ایل پی جی گیس ری فلنگ کا دھندہ چمک اٹھا
  • ☚ گجرات: ڈی ایس پیز کے دفاتر میں ویڈیو لنک کانفرنس روم قائم
  • ☚ گجرات:ایف آئی اے کو 10سال سے مطلوب 2 انسانی اسمگلرگرفتار
  • ☚ راجہ ارشد محمود جماعت اسلامی کی فری لیگل کمیٹی کے صدر مقرر
  • ☚ گجرا ت پریس کلب اور بار کابینہ کے اعزاز میں ظہرانہ
  • ☚ ایلیٹ سٹوڈنٹس فیڈریشن کے عہدیداران کا اجلاس‘ مختلف امور پر گفتگو
  • ☚ چوہدر ی بنگش خاں کی دعوت ولیمہ ‘ اہم شخصیات کے اکٹھ میں تبدیل
  • ☚ حاجی یوسف گل کا دورہ گجرات بار‘ نومنتخب کابینہ کیلئے نیک خواہشات
  • ☚ پنجاب گروپ آف کالجز کے زیر اہتمام طالبات کیلئے ایلیٹ ٹیسٹ
  • ☚ اقساط پرموٹر سائیکلیں فروخت کرنیوالوں نے وصولی کیلئے غنڈے پال لیے
  • ☚ عمران پانچ سال پورے نہیں کریں گے، اتنا دیوار سے نہ لگائو کہ عوام میرے ہاتھ میں نہ رہیں، آصف زرداری
  • ☚ گوشوارے جمع نہ کرنے پر،فواد چوہدری اور4وزراء سمیت332ارکان پارلیمنٹ کی رکنیت معطل
  • ☚ آپ لوگ کام نہیں کرسکتے، ملک سے محبت بھی کم ہوگئی، چیف جسٹس اسد عمر پر برہم
  • ☚ قرضے آرمی چیف کی وجہ سے ملے، عمران کا کمال نہیں، فوجی عدالتوں سے دہشت گردی ختم ہوئی، شہبازشریف
  • ☚ شریف فیملی سے ایک اور خاتون کی سیاسی انٹری
  • ☚ ’دوائی نہ دینے والی حکومت نوکریاں کیا دے گی‘
  • ☚ بزم غنیمت وشریف کنجاہی کی نئی تنظیم سازی کردی گی صدرسخی کنجاہی جنرل سیکرٹری ڈاکٹرمحمدعبدالمالک ہونگے
  • ☚ عوام مہنگائی کے سونامی میں ڈوب گئے،اسلام آباد پر چڑھائی کی توحکومتی تابوت میں آخری کیل ہوگی،بلاول بھٹو
  • ☚ ایف اے ٹی ایف نے پاکستانی موقف تسلیم کرلیا
  • ☚ علیمہ خان کی امریکی ریاست نیو جرسی میں بھی جائیداد نکل آئی
  • ☚ یورپ وا مریکہ میں شدید برف باری کا سلسلہ جاری
  • ☚ یوٹیوب نے متنازع ٹامی رابنسن کے اکائونٹ پر اشتہارات معطل کردیئے
  • ☚ برطانوی ڈرائیوروں کو نوڈیل بریگزٹ وارننگ دیدی گئی
  • ☚ 2افرادلوٹ مار کے دوران چاقو گھونپے جانے کے بعد اسپتال میں زیر علاج
  • ☚ یورپی یونین سے نکلنے کے متعلق نیا ریفرنڈم کرایا جائے،نکولا سٹرجن
  • ☚ برطانوی حکومت کو پارلیمنٹ میں شکست،یورپی یونین سے نکلنے کے متعلق نیا ریفرنڈم کرایا جائے،نکولا سٹرجن
  • ☚ تھریسامے اپنی حکومت بچانے میں کامیاب، تحریک عدم اعتماد 19ووٹوں سے ناکام
  • ☚ ویسٹ مڈلینڈز پولیس نے 16 ہزار600 پرتشدد جرائم ریکارڈ ہی نہیں کئے
  • ☚ مانچسٹر،ابوظہی جانے والی پرواز کے کیبن میں سموک پر ایمرجنسی لینڈنگ
  • ☚ بریگزٹ پر حکومت کی ڈیل نامنظور، 3 دن میں پلان B پیش کرنا ہوگا
  • ☚ پاکستانی اداکارہ ایمان علی بھی شادی کی تیاریوں میں مصروف
  • ☚ ملک کے ناموراداکارگلاب چانڈیو انتقال کرگئے
  • ☚ کراچی میں میوزیکل کنسرٹس کا دور واپس آگیا
  • ☚ انوشکا شرما کو تمباکو کے اشتہار میں کام کرنا مہنگا پڑگیا
  • ☚ فلم سے کیوں نکالا؟ تاپسی پنو پھٹ پڑیں
  • ☚ ایشین جونیئر اسکواش، پاکستان کی کامیابی
  • ☚ خواتین کرکٹ ٹیم کا تربیتی کیمپ شروع
  • ☚ کراچی میں کھیلنے کا تجربہ ناقابل یقین تھا، ڈومینی
  • ☚ میراتھن ریس کے روٹ کی منظوری
  • ☚ نئے ہاکی عالمی چیمپئن بیلجیم پر میچز فکس کرنے کا شبہ
  • آج کا اخبار

    گجرات پریس کلب کے زیر اہتمام سیمینار : معاشرے کے تمام طبقات ملکر پاکستانی سماج کو پائیدار ترقی کی راہ پر گامزن کر سکتے ہیں ‘ ڈاکٹر ضیاء القیو

    Published: 16-05-2018

    Cinque Terre

    گجرات (پ۔ر)وائس چانسلر جامعہ گجرات پروفیسر ڈاکٹر ضیاء القیوم نے کہا ہے کہ اعلیٰ انسانی اقدار کا فروغ بہترین نظام تعلیم و تربیت کا مرہون منت ہے ۔ سماج و معاشرہ کے تمام طبقات اپنی مخلصانہ سعی سے پاکستانی سماج کو پائیدار ترقی کی راہ پر گامزن کر سکتے ہیں۔صحافی دیدہ بینا کی حیثیت میں اعلیٰ تعلیم کے فروغ و ترقی میں قابل عمل کردار ادا کرتے ہوئے اپنی سماجی ذمہ داری کو بطریق احسن پورا کر سکتے ہیں۔عصر نو میں سو سائٹی کی صورت گری میں میڈیا کا کردار بے پایاں ہے۔ ڈاکٹر ضیاء القیوم نے ان خیالات کا اظہار گجرات پریس کلب کے زیر اہتمام منعقدہ سمینار’’اعلیٰ تعلیم کافروغ اور میڈیا‘‘ سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔سمینار کی میزبانی صدر گجرات پریس کلب راجہ تیمور طارق نے کی جبکہ مہمانان اعزازی میں معروف سماجی ،صحافتی وکاروباری شخصیات ڈاکٹر طارق سلیم، وحیدزمان ڈوگہ،جاوید بٹ، الحاج امجد فاروق،عبدالستار مرزا،میاں محمد اعجاز اور شیخ عبدالرشید شامل تھے۔اس سمینار کا بنیادی مقصد گجرات کے صحافتی و سماجی حلقوں اور جامعہ گجرات کے مابین دوستانہ تعلقات کو فروغ دیتے ہوئے نسل نو کی تہذیب و تربیت میں جامعہ گجرات کی اعلیٰ تعلیمی و تحقیقی کوششوں کی پذیرائی تھا۔ گجرات پریس کلب آمد پر صحافیوں کی بہت بڑی تعداد نے ڈاکٹر ضیا ء القیوم کو خوش آمدید کہا۔ ڈاکٹر ضیاء القیوم نے مزید کہا کہ عصر حاضر میں اختراع و تخلیق نالج اکانومی کی ترویج کے اہم ذریعے ہیں۔خود احتسابی انفرادی و اجتماعی سطح پر بہترین حکمت عملی ہے۔ موجودہ صدی کے چیلنجوں کے مقابلہ کے لیے اختراعی و تخلیقی ذہنوں کی اشد ضرورت ہے۔ اعلیٰ تعلیمی اداروں اور صحافتی اداروں کو باہمی اشتراک عمل کے ذریعے پالیسی تبدیلی کے لیے جدوجہد کی ضرورت ہے۔ جامعہ گجرات کو سول سوسائٹی اور خصوصاً صحافی برادری کا بھرپور تعاون حاصل ہے ۔راجہ تیمور طارق نے کہا کہ دور حاضر میں صحافت کو باقاعدہ سائنس کا درجہ حاصل ہو چکا ہے۔ گجرات کی صحافتی تاریخ ملکی تاریخ کا روشن باب ہے۔نسل نو بے پناہ صلاحیتوں کی مالک ہے۔ گجرات کی صحافی برادری جامعہ گجرات کیساتھ پرُ خلوص تعاون کے ذریعے طلبہ کی علمی و تعلیمی ترقی کے لیے بہترین کاوشیں بروئے کار لائے گی۔امیر جماعت اسلامی ضلع گجرات ڈاکٹر طارق سلیم نے کہا کہ عصر حاضر میں علم کی اہمیت واضح ہے۔ اعلیٰ علمی اقدار کا احیاء مسلمانوں کو دوبارہ دُنیا کی امامت پر سرفراز کر سکتا ہے۔صحافت اور علمی اقدار کا آپس میں گہرا تعلق ہے۔ڈائریکٹر UoG میڈیا شیخ عبدالرشید نے کہا کہ صحافیانہ عمل معاشرہ کے سدھار کا باعث ہے۔سماج میں دیانتدارانہ صحافتی اقدار کا احیا مثبت علامت ہے۔ گجرات کے صحافیوں نے جامعہ گجرات کی خدمات کو اجاگر کرنے میں کوئی دقیقہ فروگذاشت نہیں رکھا۔ممتاز کارباری شخصیت میاں محمد اعجاز نے کہا کہ جامعہ گجرات کی تعلیمی و سماجی خدمات بے پایاں ہیں۔ جامعہ گجرات کی قیادت علمی شعور کے فروغ کو سماجی فلاح و بہبودکا ذریعہ بنائے ہوئے ہے۔سابق صدر گجرات پریس کلب عبدالستار مرزا نے کہا کہ صحافت کا اصل مطمع نظر سماج کی بے لوث خدمت ہے۔گجرات کے صحافیوں کے لیے جامعہ گجرات علم ا روشن نشان ہے۔ گجرات پریس کلب اور جامعہ گجرات کے مابین باہمی اشتراک کے دائرہ کار کو وسعت دینے کی ضرورت ہے۔ ممتاز سماجی شخصیت جاوید بٹ نے کہا کہ اعلیٰ تعلیم سماج و معاشرہ میں فروغ و آگہی کی شمع کو روشن کرتے ہوئے صحافت کیساتھ گہرے ربط کی حاصل ہے۔ ملکی مسائل کا حل اجتماعی کاوشوں کے ذریعے ممکن ہے۔ جاوید بٹ نے جامعہ گجرات میں ٹریفک نظم و ضبط کے حوالہ سے باقاعدہ کورس کے اجرا کی ضرورت پر توجہ دلائی۔ چیئرمین CPLC الحاج امجد فاروق نے کہا کہ طلبہ کی نسل نو کو علمی شعور و آگہی کے نور سے منور کرنا اہم سماجی خدمت ہے ۔صحافت بھی اصلاً معاشرتی آگہی کا فریضہ سر انجام دیتے ہوئے ترقی کی نئی راہیں دریافت کرتی ہے۔سیکرٹری جمخانہ وحید زمان ڈوگہ نے کہا کہ دور حاضر میں اعلیٰ تعلیم کا فروغ قوم کے روشن و پرُ اُمید مستقبل کا ضامن ہے۔ تعلیم اور تربیت کا چولی دامن کا ساتھ ہے۔ ایک سچے صحافی کو ذمہ دارانہ رویہ اختیار کرتے ہوئے ملک و معاشرہ کی خدمت پر کمر بستہ ہونے کی ضرورت ہے۔