• ☚ لالہ موسی پولیس جرائم پیشہ افراد کیخلاف برسر پیکار‘منشیات فروش اور جواری گرفتار
  • ☚ گولڈ سٹارکرکٹ کلب نے شہابدیوال ٹیم کو9وکٹوں سے شکست دیدی
  • ☚ گجرات ریلوے اسٹیشن پر ڈیمز فنڈ کی غیرقانونی وصولی کا انکشاف
  • ☚ ڈنگہ کے گاؤں خوجہ میں کریانہ سٹور پر ڈاکہ‘ موہلہ گاؤں سے باجرہ کی فصل چوری کاٹ لی گئی
  • ☚ گاؤں لادیاں میں بااثر افراد نے شاہراہ عام پر دیوار تعمیر کر دی
  • ☚ گاڑی میں لفٹ دیکر خواتین کو لوٹنے والا گینگ متحرک ہو گیا
  • ☚ جلالپور جٹاں میں غندہ گردی کی انتہائی ‘ مسلح افراد کا دوکان پر دھاوا
  • ☚ موسمی تبدیلی بیماریاں جنم دینے لگی‘عطائی ڈاکٹروں کی موجیں لگ گئیں
  • ☚ خواص پور: ملک اصغر کے گھر ڈکیتی کی واردات ناکام
  • ☚ ملکی دولت لوٹنے والوں کا بے رحم احتساب ناگزیر ہے: ضیغم رضا شاہ
  • ☚ سانحہ 12 مئی سے جڑے 65 مقدمات کی الگ الگ جے ئی ٹی بنانے کا فیصلہ
  • ☚ ننھی زینب کے قاتل عمران کو آج پھانسی دی جائے گی
  • ☚ کراچی میں پی ٹی آئی کے دو ارکانِ اسمبلی لڑپڑے
  • ☚ کراچی: مبینہ پولیس مقابلہ، 3 ملزمان ہلاک
  • ☚ شہری کے مرنے کے بعد بینک اکاؤنٹ کھل گئے، اربوں روپے کا لین دین
  • ☚ لاہور: نوازشریف شناختی کارڈ نہ ہونے کے باعث ووٹ نہ ڈال سکے
  • ☚ ضمنی انتخابات: پہلی بار بیرون ملک مقیم پاکستانی بھی انتخابی عمل کا حصہ بن گئے
  • ☚ کراچی میں 2 مبینہ پولیس مقابلے، اہلکار زخمی، 3 ڈکیت گرفتار
  • ☚ حکومت کی نیا پاکستان ہاوٴسنگ سکیم میں گھر کی کل قیمت اور ماہانہ قسط کتنی ہو گی؟ غریب عوام کیلئے انتہائی اچھی خبر آ گئی
  • ☚ جسٹس شوکت عزیز صدیقی عہدے سے فارغ
  • ☚ یو اے ای میں برطانوی طالب علم پر حکومت کیلئے جاسوسی کرنے کا الزام عائد
  • ☚ نفرت انگیز جرائم کا خاتمہ کردوں گا، وزیرداخلہ کا دعویٰ
  • ☚ کشمیر سب سے بڑا عالمی تنازعہ، ترجمان پاک فوج
  • ☚ آف شور دولت پر ٹیکس چوری روکنےکے یورپی یونین رولز میں لوپ ہولز کا انکشاف
  • ☚ ٹوری کی ویلفیئر سکیم سے لاکھوں افراد غربت کا شکار ہوجائیں گے،گورڈن براؤن
  • ☚ ٹومی رابنسن کے ساتھ فوجیوں کی تصویر پر آرمی نے تحقیقات شروع کر دی
  • ☚ چیف جسٹس ثاقب نثار مانچسٹر کے ڈیم فنڈ ریزنگ ایونٹ میں شرکت کرینگے
  • ☚ داعش30 ہزار جنونی دہشت گردوں کے سہاریمافیا کی شکل میں واپسی کیلئے تیار
  • ☚ سکاٹ لینڈ یارڈ نے جنید صفدراور زکریا شریف کو کلیئر کردیا
  • ☚ برطانیہ نے داعش سے تعلق رکھنے والے 9 برطانوی شہریوں کو واپس لینے سے انکار کردیا
  • ☚ ماڈل ایان علی کا پاکستان واپس نے کا اعلان
  • ☚ رنویر سنگھ کی تمام تر توجہ کا مرکز کون؟
  • ☚ شرمین عبید چنائے نے’’دی ایلیسن گلوبل لیڈرشپ ‘‘ ایوارڈ جیت لیا
  • ☚ ساجد خان کا رویہ قابل نفرت ہے، دیا مرزا
  • ☚ فرحان سعید کی ’کراچی سے لاہور 3‘ کے ساتھ فلموں میں انٹری؟
  • ☚ ابوظہبی ٹیسٹ میں دوسرے دن کا کھیل ختم،پاکستان کو 281 رنز برتری
  • ☚ کرکٹ بورڈ میں منیجنگ ڈائریکٹر کا عہدہ متعارف کرایاجائے گا
  • ☚ مالدیپ کرکٹ ٹیم لاہور پہنچ گئی
  • ☚ وہاب ریاض اور عثمان صلاح الدین کو وطن واپس بھیجنے کا فیصلہ
  • ☚ ابوظہبی ٹیسٹ کا پہلا دن ختم، آسٹریلیا کے 2 وکٹوں پر 20 رنز
  • آج کا اخبار

    گجرات پریس کلب کے زیر اہتمام سیمینار : معاشرے کے تمام طبقات ملکر پاکستانی سماج کو پائیدار ترقی کی راہ پر گامزن کر سکتے ہیں ‘ ڈاکٹر ضیاء القیو

    Published: 16-05-2018

    Cinque Terre

    گجرات (پ۔ر)وائس چانسلر جامعہ گجرات پروفیسر ڈاکٹر ضیاء القیوم نے کہا ہے کہ اعلیٰ انسانی اقدار کا فروغ بہترین نظام تعلیم و تربیت کا مرہون منت ہے ۔ سماج و معاشرہ کے تمام طبقات اپنی مخلصانہ سعی سے پاکستانی سماج کو پائیدار ترقی کی راہ پر گامزن کر سکتے ہیں۔صحافی دیدہ بینا کی حیثیت میں اعلیٰ تعلیم کے فروغ و ترقی میں قابل عمل کردار ادا کرتے ہوئے اپنی سماجی ذمہ داری کو بطریق احسن پورا کر سکتے ہیں۔عصر نو میں سو سائٹی کی صورت گری میں میڈیا کا کردار بے پایاں ہے۔ ڈاکٹر ضیاء القیوم نے ان خیالات کا اظہار گجرات پریس کلب کے زیر اہتمام منعقدہ سمینار’’اعلیٰ تعلیم کافروغ اور میڈیا‘‘ سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔سمینار کی میزبانی صدر گجرات پریس کلب راجہ تیمور طارق نے کی جبکہ مہمانان اعزازی میں معروف سماجی ،صحافتی وکاروباری شخصیات ڈاکٹر طارق سلیم، وحیدزمان ڈوگہ،جاوید بٹ، الحاج امجد فاروق،عبدالستار مرزا،میاں محمد اعجاز اور شیخ عبدالرشید شامل تھے۔اس سمینار کا بنیادی مقصد گجرات کے صحافتی و سماجی حلقوں اور جامعہ گجرات کے مابین دوستانہ تعلقات کو فروغ دیتے ہوئے نسل نو کی تہذیب و تربیت میں جامعہ گجرات کی اعلیٰ تعلیمی و تحقیقی کوششوں کی پذیرائی تھا۔ گجرات پریس کلب آمد پر صحافیوں کی بہت بڑی تعداد نے ڈاکٹر ضیا ء القیوم کو خوش آمدید کہا۔ ڈاکٹر ضیاء القیوم نے مزید کہا کہ عصر حاضر میں اختراع و تخلیق نالج اکانومی کی ترویج کے اہم ذریعے ہیں۔خود احتسابی انفرادی و اجتماعی سطح پر بہترین حکمت عملی ہے۔ موجودہ صدی کے چیلنجوں کے مقابلہ کے لیے اختراعی و تخلیقی ذہنوں کی اشد ضرورت ہے۔ اعلیٰ تعلیمی اداروں اور صحافتی اداروں کو باہمی اشتراک عمل کے ذریعے پالیسی تبدیلی کے لیے جدوجہد کی ضرورت ہے۔ جامعہ گجرات کو سول سوسائٹی اور خصوصاً صحافی برادری کا بھرپور تعاون حاصل ہے ۔راجہ تیمور طارق نے کہا کہ دور حاضر میں صحافت کو باقاعدہ سائنس کا درجہ حاصل ہو چکا ہے۔ گجرات کی صحافتی تاریخ ملکی تاریخ کا روشن باب ہے۔نسل نو بے پناہ صلاحیتوں کی مالک ہے۔ گجرات کی صحافی برادری جامعہ گجرات کیساتھ پرُ خلوص تعاون کے ذریعے طلبہ کی علمی و تعلیمی ترقی کے لیے بہترین کاوشیں بروئے کار لائے گی۔امیر جماعت اسلامی ضلع گجرات ڈاکٹر طارق سلیم نے کہا کہ عصر حاضر میں علم کی اہمیت واضح ہے۔ اعلیٰ علمی اقدار کا احیاء مسلمانوں کو دوبارہ دُنیا کی امامت پر سرفراز کر سکتا ہے۔صحافت اور علمی اقدار کا آپس میں گہرا تعلق ہے۔ڈائریکٹر UoG میڈیا شیخ عبدالرشید نے کہا کہ صحافیانہ عمل معاشرہ کے سدھار کا باعث ہے۔سماج میں دیانتدارانہ صحافتی اقدار کا احیا مثبت علامت ہے۔ گجرات کے صحافیوں نے جامعہ گجرات کی خدمات کو اجاگر کرنے میں کوئی دقیقہ فروگذاشت نہیں رکھا۔ممتاز کارباری شخصیت میاں محمد اعجاز نے کہا کہ جامعہ گجرات کی تعلیمی و سماجی خدمات بے پایاں ہیں۔ جامعہ گجرات کی قیادت علمی شعور کے فروغ کو سماجی فلاح و بہبودکا ذریعہ بنائے ہوئے ہے۔سابق صدر گجرات پریس کلب عبدالستار مرزا نے کہا کہ صحافت کا اصل مطمع نظر سماج کی بے لوث خدمت ہے۔گجرات کے صحافیوں کے لیے جامعہ گجرات علم ا روشن نشان ہے۔ گجرات پریس کلب اور جامعہ گجرات کے مابین باہمی اشتراک کے دائرہ کار کو وسعت دینے کی ضرورت ہے۔ ممتاز سماجی شخصیت جاوید بٹ نے کہا کہ اعلیٰ تعلیم سماج و معاشرہ میں فروغ و آگہی کی شمع کو روشن کرتے ہوئے صحافت کیساتھ گہرے ربط کی حاصل ہے۔ ملکی مسائل کا حل اجتماعی کاوشوں کے ذریعے ممکن ہے۔ جاوید بٹ نے جامعہ گجرات میں ٹریفک نظم و ضبط کے حوالہ سے باقاعدہ کورس کے اجرا کی ضرورت پر توجہ دلائی۔ چیئرمین CPLC الحاج امجد فاروق نے کہا کہ طلبہ کی نسل نو کو علمی شعور و آگہی کے نور سے منور کرنا اہم سماجی خدمت ہے ۔صحافت بھی اصلاً معاشرتی آگہی کا فریضہ سر انجام دیتے ہوئے ترقی کی نئی راہیں دریافت کرتی ہے۔سیکرٹری جمخانہ وحید زمان ڈوگہ نے کہا کہ دور حاضر میں اعلیٰ تعلیم کا فروغ قوم کے روشن و پرُ اُمید مستقبل کا ضامن ہے۔ تعلیم اور تربیت کا چولی دامن کا ساتھ ہے۔ ایک سچے صحافی کو ذمہ دارانہ رویہ اختیار کرتے ہوئے ملک و معاشرہ کی خدمت پر کمر بستہ ہونے کی ضرورت ہے۔