• ☚ ماضی میں حکومتیں معاشی حب کراچی کو نظرانداز کرتی رہیں، وزیراعظم
  • ☚ اپوزیشن کے تیار ہوتے ہی حکومت کے خلاف تحریک عدم اعتماد لے آئیں گے، بلاول
  • ☚ پی ڈی ایم کا پیپلز پارٹی اور اے این پی کے ساتھ مل کر بجٹ کی مخالفت کا فیصلہ
  • ☚ حکومت نے بجلی 1 روپے 72 پیسے فی یونٹ مہنگی کردی
  • ☚ 9 ماہ کے دوران بیرونی قرضوں میں 7 ارب41 کروڑ 30 لاکھ ڈالر سے زائد کا اضافہ
  • ☚ پاکستان نے پہلے ٹی ٹوئنٹی میں جنوبی افریقا کو شکست دیدی
  • ☚ حکومت نے ملک بھر میں جلسے جلوس پر پابندی عائد کردی
  • ☚ آئی ایم ایف کا بجلی، گیس اور یوٹیلیٹی اسٹورز پر سبسڈیز ختم کرنے کا مطالبہ
  • ☚ وزیراعظم نے گستاخانہ خاکوں کا معاملہ اقوام متحدہ میں اٹھادیا، اسلامو فوبیا کیخلاف یوم منانے کا مطالبہ
  • ☚ پیپلزپارٹی نے زیادتی کیس کے مجرم کو سرعام پھانسی دینے کی مخالفت کردی
  • ☚ ملک ریاض کی آصف زرداری کو عمران خان کا مفاہمت کا پیغام پہنچانے کی مبینہ آڈیو سامنے آگئی
  • ☚ سمندر پار پاکستانی ’امپورٹڈ حکومت‘ کے خلاف مظاہرے اور سوشل میڈیا پر مہم چلائیں، عمران خان
  • ☚ پشاور قصہ خوانی بازار کی مسجد میں نماز جمعہ کے دوران خودکش حملہ، 57 افراد شہید
  • ☚ حکومت کا ملک میں بھارت اور بنگلا دیش سے زیادہ مہنگائی کا اعتراف
  • ☚ وزیر خارجہ کا ڈی جی آئی ایس آئی کے ہمراہ کابل کا اہم دورہ
  • ☚ ’’پینڈورا پیپرز‘‘ سامنے آگئے، 700 پاکستانیوں کی آف شور کمپنیاں نکل آئیں
  • ☚ شمالی وزیرستان میں فورسز کی گاڑی پر حملہ، 5 اہل کار شہید
  • ☚ کورونا وبا؛ مزید 33 افراد جاں بحق، ایک ہزار سے زائد مثبت کیسز رپورٹ
  • ☚ افغانستان میں امن کیلیے عالمی برادری کی امداد ضروری ہے، آرمی چیف
  • ☚ طالبان نے افغانستان میں نئی حکومت کی تشکیل کا اعلان کردیا
  • ☚ اسلام پسندی سے مغرب کو اب بھی خطرہ موجود ہے، سابق برطانوی وزیراعظم
  • ☚ افغانستان کے نئے وزیراعظم ملا حسن اخوند کی زندگی پر ایک نظر
  • ☚ ایران پر حملے کے پلان پر تیزی سے کام جاری ہے، اسرائیلی آرمی چیف
  • ☚ کرونا لاک ڈاؤن، بے گھر افراد کی مدد کے لیے اٹلی کے شہریوں کی زبردست کاوش
  • ☚ ایران میں کورونا وائرس سے خاتون رکنِ اسمبلی ہلاک
  • ☚ کورونا وائرس کے متاثرین 1لاکھ 8 ہزار ہوگئے، اٹلی میں 24 گھنٹوں کے دوران 133ہلاکتیں
  • ☚ دبئی کے حکمراں اہلیہ کو دھمکیاں دینے اور بیٹیوں کے اغوا کے مرتکب ہوئے، برطانوی عدالت
  • ☚ ترکی اور روس کا شام میں جنگ بندی پر اتفاق
  • ☚ تیونس میں امریکی سفارت خانے پر خود کش حملہ
  • ☚ کورونا وائرس؛ سعودی شہریوں کے عمرہ ادائیگی پر بھی پابندی
  • ☚ عالیہ بھٹ کی شوٹنگ کے دوران طبیعت خراب، اسپتال منتقل
  • ☚ عالیہ بھٹ کی شوٹنگ کے دوران طبیعت خراب، اسپتال منتقل
  • ☚ حریم شاہ کی لیک ویڈیو نے مفتی قوی کا اصل چہرہ بے نقاب کردیا
  • ☚ "ارطغرل غازی" کے اداکار کا طیارہ حادثے پر اظہار افسوس
  • ☚ کورونا وائرس؛ فنکاروں کی حکومت سے غریب طبقے کا خیال رکھنے کی درخواست
  • ☚ سری لنکا ٹیم حملے میں زخمی ہونے والے احسن رضا کا بطور ٹیسٹ امپائر ڈیبیو
  • ☚ محمد عامر کی قومی ٹیم میں واپسی کیلیے مشروط رضامندی
  • ☚ پی ایس ایل کا چھٹا ایڈیشن تماشائیوں کی موجودگی میں ہونے کا امکان
  • ☚ پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی نے پب جی گیم پر پابندی ختم کردی
  • ☚ روزانہ 22 گھنٹے گیم کھیلنے سے نوجوان کا بازو اور ہاتھ مفلوج
  • آج کا اخبار

    پاکستانی نژاد شخص پر بچیوں سے زیادتی کے جھوٹے الزام پر برطانوی اخبار کو بھاری جرمانہ

    Published: 02-02-2020

    Cinque Terre

     لندن:پاکستانی نژاد شخص اقبال کو بچوں کے ساتھ جنسی زیادتی کے معاملے میں شریک ملزم ظاہر کرنے پر برطانوی اخبار ’دی میل آن سنڈے’ پر ایک لاکھ 80 ہزار یورو جرمانہ عائد کردیا گیا ہے۔برطانوی خبر رساں ادارے ’دی گارجیئن‘ کے مطابق برطانوی اخبار نے اپنے ایک آرٹیکل میں ٹیکسی لائسنس فراہم کرنے والے سابق پاکستانی نژاد برطانوی افسر اقبال پر جنسی زیادتی کرنے والے گروہ کو کم عمر بچیاں فراہم کرنے کا الزام عائد کیا تھا جس پر پاکستانی شخص نے عدالت سے رجوع کیا تھا اور آج تین سال بعد انہیں انصاف مل گیا۔پاکستانی نژاد اقبال نے موقف اختیار کیا تھا کہ مجھے صرف رنگ اور زبان کی بنیاد پر نشانہ بنایا گیا، جھوٹی رپورٹ نے میری زندگی تباہ کردی اور میری جان کو خطرے میں ڈال دیا گیا۔ میرے اہل خانہ بھی پریشان ہوئے اور ہم سب ڈپریشن کا شکار ہوگئے تھے۔عدالتی حکم پر اخبار ’دی میل آن سنڈے‘ نے ساکھ کو نقصان پہنچانے پر پاکستانی شخص کو ایک لاکھ 80 ہزار یورو ہرجانہ ادا کرنے پر رضامندی کا اظہار کر دیا ہے۔ اخبار نے 2017 میں ایک آرٹیکل شائع کیا تھا جس میں اقبال کو ٹیکسی ڈرائیورز کو کم عمر لڑکیاں فراہم کرنے والا ’فکسر‘ ظاہر کیا گیا تھا۔واضح رہے کہ 2016 میں برطانیہ کی عدالت نے روچ ڈیل میں کم عمر لڑکی کے ساتھ جنسی جرائم کرنے کے جرم میں 10 افراد کو سزا سنائی تھی، ان افراد کا تعلق پاکستان، بنگلا دیش اور افغانستان تھا جنہوں نے درجنوں کم عمر لڑکیوں کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا تھا۔