• ☚ پی ڈی ایم کا پیپلز پارٹی اور اے این پی کے ساتھ مل کر بجٹ کی مخالفت کا فیصلہ
  • ☚ حکومت نے بجلی 1 روپے 72 پیسے فی یونٹ مہنگی کردی
  • ☚ 9 ماہ کے دوران بیرونی قرضوں میں 7 ارب41 کروڑ 30 لاکھ ڈالر سے زائد کا اضافہ
  • ☚ پاکستان نے پہلے ٹی ٹوئنٹی میں جنوبی افریقا کو شکست دیدی
  • ☚ حکومت نے ملک بھر میں جلسے جلوس پر پابندی عائد کردی
  • ☚ آئی ایم ایف کا بجلی، گیس اور یوٹیلیٹی اسٹورز پر سبسڈیز ختم کرنے کا مطالبہ
  • ☚ وزیراعظم نے گستاخانہ خاکوں کا معاملہ اقوام متحدہ میں اٹھادیا، اسلامو فوبیا کیخلاف یوم منانے کا مطالبہ
  • ☚ پیپلزپارٹی نے زیادتی کیس کے مجرم کو سرعام پھانسی دینے کی مخالفت کردی
  • ☚ وفاقی سرکاری تعلیمی اداروں میں ہفتے کی چھٹی ختم کرنے کا فیصلہ
  • ☚ شمالی وزیرستان؛ سیکیورٹی فورسز پردہشت گردوں کے حملے میں افسر سمیت 3 اہلکارشہید
  • ☚ طبی عملہ بھی ڈیلٹا ویرینٹ کی لپیٹ میں آگیا، سول اسپتال میں سرجریز ملتوی
  • ☚ وفاقی کابینہ کی افواج پاکستان کے لئے 15 فیصد خصوصی الاؤنس کی منظوری
  • ☚ اسلام آباد میں ڈیلٹا وائرس کے کیس رپورٹ، سدِباب کے لیےجینوسیکوینسنگ بڑھانے کاپلان تیار
  • ☚ کورونا کی بھارتی قسم؛ حکومت کا عیدالاضحیٰ سے قبل سخت اقدامات کا فیصلہ
  • ☚ لاہور دھماکے کے ماسٹر مائنڈ کا تعلق بھارت اور را سے ہے، مشیر قومی سلامتی
  • ☚ گیس بحران، مقامی ٹیکسٹائل سیکٹر کا صنعتیں بیرون ملک منتقل کرنے کا فیصلہ
  • ☚ پشاور زلمی کو شکست؛ ملتان پی ایس ایل کا نیا سلطان بن گیا
  • ☚ کابینہ اجلاس ؛ 10 لاکھ ٹن گندم درآمد کرنے کی منظوری
  • ☚ عورت مختصر کپڑے پہنے گی تو مردوں پر اثر تو پڑے گا، وزیراعظم
  • ☚ وزیراعظم کا افغانستان میں فوجی کارروائی کیلئے امریکا کو اڈے دینے سے صاف انکار
  • ☚ کرونا لاک ڈاؤن، بے گھر افراد کی مدد کے لیے اٹلی کے شہریوں کی زبردست کاوش
  • ☚ ایران میں کورونا وائرس سے خاتون رکنِ اسمبلی ہلاک
  • ☚ کورونا وائرس کے متاثرین 1لاکھ 8 ہزار ہوگئے، اٹلی میں 24 گھنٹوں کے دوران 133ہلاکتیں
  • ☚ دبئی کے حکمراں اہلیہ کو دھمکیاں دینے اور بیٹیوں کے اغوا کے مرتکب ہوئے، برطانوی عدالت
  • ☚ ترکی اور روس کا شام میں جنگ بندی پر اتفاق
  • ☚ تیونس میں امریکی سفارت خانے پر خود کش حملہ
  • ☚ کورونا وائرس؛ سعودی شہریوں کے عمرہ ادائیگی پر بھی پابندی
  • ☚ امریکا میں چھوٹا طیارہ مرکزی شاہراہ پر گر کر تباہ، 3 افراد ہلاک
  • ☚ امریکا میں طوفانی بگولوں سے 24 افراد ہلاک
  • ☚ ایران نے کورونا وائرس سے 200 افراد کی ہلاکتوں کو جھوٹ قرار دیدیا
  • ☚ عالیہ بھٹ کی شوٹنگ کے دوران طبیعت خراب، اسپتال منتقل
  • ☚ عالیہ بھٹ کی شوٹنگ کے دوران طبیعت خراب، اسپتال منتقل
  • ☚ حریم شاہ کی لیک ویڈیو نے مفتی قوی کا اصل چہرہ بے نقاب کردیا
  • ☚ "ارطغرل غازی" کے اداکار کا طیارہ حادثے پر اظہار افسوس
  • ☚ کورونا وائرس؛ فنکاروں کی حکومت سے غریب طبقے کا خیال رکھنے کی درخواست
  • ☚ سری لنکا ٹیم حملے میں زخمی ہونے والے احسن رضا کا بطور ٹیسٹ امپائر ڈیبیو
  • ☚ محمد عامر کی قومی ٹیم میں واپسی کیلیے مشروط رضامندی
  • ☚ پی ایس ایل کا چھٹا ایڈیشن تماشائیوں کی موجودگی میں ہونے کا امکان
  • ☚ پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی نے پب جی گیم پر پابندی ختم کردی
  • ☚ روزانہ 22 گھنٹے گیم کھیلنے سے نوجوان کا بازو اور ہاتھ مفلوج
  • آج کا اخبار

    حکومتی وفد کی کوشش ناکام، اخترمینگل کا اتحاد میں واپسی سے انکار

    Published: 21-06-2020

    Cinque Terre

     اسلام آباد:حکومتی وفد بلوچستان نیشنل پارٹی (مینگل) کے سربراہ سردار اختر مینگل کو منانے انکی رہائشگاہ پہنچ گیا تاہم انہوں نے حکومت میں واپسی کے کسی فوری امکان سے انکار کرتے ہوئے قومی اسمبلی میں حکومت کی جانب سے پیش ہونے والے مالیاتی(فنانس) بل کی حمایت نہ کرنے کا اعلان کردیا ہے۔

      وزیردفاع پرویز خٹک اور وزیر منصوبہ بندی اسد عمر پر مشتمل وفد نے سردار اختر مینگل سے پارلیمنٹ لاجز میں ان کی رہائش گاہ پر ملاقات کی اور سردار اختر مینگل سے فیصلہ واپس لینے کی درخواست کی ۔

    سردار اختر مینگل سے ملاقات کے بعد پرویز خٹک نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہماری ملاقاتیں تو ہوتی رہتی ہیں۔ بی این پی کے تحفظات کو جلد دور کیا جائے گا، آئندہ بھی سردار صاحب کے ساتھ نشستیں ہوں گی ۔

    اس موقع پر اختر مینگل نے کہا پارٹی کے فیصلے کی خلاف ورزی نہیں کرسکتا، ہم نے اپنے تحفظات حکومتی وفد کے سامنے رکھ دیے ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم نے ان سے اب تک کوئی براہ راست رابطہ نہیں کیا ۔

    اسد عمر نے کہا بلوچستان کے حقوق کی بات کرنا پاکستان کے حقوق کی کرنا ہے، پی ٹی آئی یقین رکھتی ہے کہ پاکستان کے ہر حصہ کو ترقی اور حقوق نا ملے تو ملک ترقی نہیں کرسکے گا ۔

    یہ خبر بھی پڑھیے: حکومت نے بی این پی مینگل کو منانے کی کوششیں شروع کردیں

    واضح رہے کہ 17 جون کو قومی اسمبلی کے اجلاس میں بجٹ پر بحث کے دوران بلوچستان نیشنل پارٹی (مینگل) کے سربراہ سردار اختر جان مینگل نے تحریک انصاف سے اتحاد ختم کرنے کا اعلان کیا تھا۔انہوں نے بلوچستان کے مسائل پر حکومتی عدم توجہی کو اس فیصلے کا سبب قرار دیا تھا۔ اس کے بعد سے حکومت انہیں منانے کی کوششوں میں مصروف ہے۔

    مولانا فضل الرحمن سے ملاقات

    دوسری جانب جمیعت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے بھی سردار اختر مینگل سے ملاقات کی جس کے بعد صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے سربراہ بی این پی کا کہنا تھا کہ حکومت میں واپسی اب ان کے بس میں نہیں، جماعت کی قیادت کے فیصلے کا پابند ہوں۔ انہوں ںے کہا کہ اگر تحریک انصاف بلوچستان کے مسائل حل کردے تو پورا صوبہ اس جماعت میں شامل ہوجائے گا۔

    مولانا فضل الرحمان نے اس موقعے پر کہا کہ وزیر اعظم کے خلاف تحریک عدم اعتماد لانے کا آپشن زیر غور ہے۔ اٹھارہویں ترمیم سے متعلق حکومتی بیانات تشویش ناک ہیں۔ این ایف سی میں کوئی تبدیلی قبول نہیں کی جائے گی۔ احتساب کو حزب اختلاف کے خلاف ہتھیار کے طور پر استعمال کیا جارہا ہے جب کہ دوسری جانب پی ٹی آئی پارٹی فنڈنگ اور بی آر ٹی کے معاملوں پر پیش رفت نہیں ہورہی۔ انہوں ںے کہا کہ ملکی سیاسی قیادت کے ساتھ رابطے شروع کردیے ہیں۔