• ☚ چینی فوج نے کورونا وائرس کی ویکسین تیار کرلی
  • ☚ صوبائی حکومت کی بوکھلاہٹ کا شکار اور مکمل ناکام ہے:ملک نصیر
  • ☚ وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت این سی سی اجلاس
  • ☚ گلیانہ ‘ ٹانڈہ کے دیہی علاقوں میں لڑائی مار کٹائی‘ نصف درجن افراد زخمی
  • ☚ گجرات‘ کھاریاں اور سرائے عالمگیر میں چوری کی پے در پے وارداتیں
  • ☚ پنجاب اسمبلی میں جنت البقیع کی تعمیر کی قرارداد کی منظوری کا خیرمقدم
  • ☚ کالاشاہ کاکو: قومی تاجر اتحاد کے چیئرمین سمیت دوافراد قتل
  • ☚ گجرات:چوکیدار کو رسیوں سے باندھ کر ڈکیتی کرنیوالے ملزمان گرفتار
  • ☚ شہری کیساتھ بدسلوکی کرنیوالا پولیس اہلکار معطل ‘ تحقیقات شروع
  • ☚ ملک ارشد محمود کے ایصال ثواب کیلئے ملک یونس کی رہائشگاہ پر تقریب
  • ☚ پی آئی اے کا فضائی میزبان کینیڈا میں پرسرار طور پر لاپتہ
  • ☚ پاکستان میں تیار کردہ وینٹی لیٹرز کی پہلی کھیپ این ڈی ایم اے کے حوالے
  • ☚ بلدیہ فیکٹری واقعے میں حماد صدیقی اور رحمان بھولا کا ہاتھ تھا، جے آئی ٹی رپورٹ
  • ☚ پنجاب میں مویشی منڈیاں لگانے کے لیے قواعد و ضوابط جاری
  • ☚ نوازشریف کے خلاف فیصلہ دینے والے جج ارشد ملک ملازمت سے برطرف
  • ☚ نوازشریف کے خلاف فیصلہ دینے والے جج ارشد ملک ملازمت سے برطرف
  • ☚ ایل او سی اور گلگت میں فوج کی اضافی نفری کے بھارتی دعوے غلط ہیں، ترجمان پاک فوج
  • ☚ یورپی یونین کے بعد برطانیہ کی بھی پی آئی اے کی پروازوں پر پابندی
  • ☚ اسٹاک ایکسچینج پر حملے میں مارے گئے ایک دہشت گرد کی شناخت
  • ☚ متحدہ عرب امارات نے پاکستان سے آنے والی پروازوں پر پابندی عائد کردی
  • ☚ کرونا لاک ڈاؤن، بے گھر افراد کی مدد کے لیے اٹلی کے شہریوں کی زبردست کاوش
  • ☚ ایران میں کورونا وائرس سے خاتون رکنِ اسمبلی ہلاک
  • ☚ کورونا وائرس کے متاثرین 1لاکھ 8 ہزار ہوگئے، اٹلی میں 24 گھنٹوں کے دوران 133ہلاکتیں
  • ☚ دبئی کے حکمراں اہلیہ کو دھمکیاں دینے اور بیٹیوں کے اغوا کے مرتکب ہوئے، برطانوی عدالت
  • ☚ ترکی اور روس کا شام میں جنگ بندی پر اتفاق
  • ☚ تیونس میں امریکی سفارت خانے پر خود کش حملہ
  • ☚ کورونا وائرس؛ سعودی شہریوں کے عمرہ ادائیگی پر بھی پابندی
  • ☚ امریکا میں چھوٹا طیارہ مرکزی شاہراہ پر گر کر تباہ، 3 افراد ہلاک
  • ☚ امریکا میں طوفانی بگولوں سے 24 افراد ہلاک
  • ☚ ایران نے کورونا وائرس سے 200 افراد کی ہلاکتوں کو جھوٹ قرار دیدیا
  • ☚ "ارطغرل غازی" کے اداکار کا طیارہ حادثے پر اظہار افسوس
  • ☚ کورونا وائرس؛ فنکاروں کی حکومت سے غریب طبقے کا خیال رکھنے کی درخواست
  • ☚ امریکی اداکارہ دیبی مزار کورونا میں مبتلا
  • ☚ احتیاط کیجیئے کورونا مذاق نہیں بلکہ سنگین وائرس ہے، شوبزفنکار
  • ☚ علی ظفر کی منفرد انداز میں کورونا وائرس سے بچاؤ کی آگاہی مہم، ویڈیو وائرل
  • ☚ پی ایس ایل فائیو؛ کس نے کون سا ریکارڈ اپنے نام کیا ؟
  • ☚ پی ایس ایل فائیو کے سیمی فائنلز کل لاہور میں کھیلے جائیں گے
  • ☚ پاکستان اوربنگلا دیش کے درمیان ون ڈے اورٹیسٹ میچ ملتوی
  • ☚ پی سی بی کی کھلاڑیوں کو ہاتھ نہ ملانے کی ہدایت
  • ☚ کوروناوائرس کا خوف؛ آئی پی ایل خالی میدانوں میں کروانے کا فیصلہ
  • آج کا اخبار

    حکومتی وفد کی کوشش ناکام، اخترمینگل کا اتحاد میں واپسی سے انکار

    Published: 21-06-2020

    Cinque Terre

     اسلام آباد:حکومتی وفد بلوچستان نیشنل پارٹی (مینگل) کے سربراہ سردار اختر مینگل کو منانے انکی رہائشگاہ پہنچ گیا تاہم انہوں نے حکومت میں واپسی کے کسی فوری امکان سے انکار کرتے ہوئے قومی اسمبلی میں حکومت کی جانب سے پیش ہونے والے مالیاتی(فنانس) بل کی حمایت نہ کرنے کا اعلان کردیا ہے۔

      وزیردفاع پرویز خٹک اور وزیر منصوبہ بندی اسد عمر پر مشتمل وفد نے سردار اختر مینگل سے پارلیمنٹ لاجز میں ان کی رہائش گاہ پر ملاقات کی اور سردار اختر مینگل سے فیصلہ واپس لینے کی درخواست کی ۔

    سردار اختر مینگل سے ملاقات کے بعد پرویز خٹک نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہماری ملاقاتیں تو ہوتی رہتی ہیں۔ بی این پی کے تحفظات کو جلد دور کیا جائے گا، آئندہ بھی سردار صاحب کے ساتھ نشستیں ہوں گی ۔

    اس موقع پر اختر مینگل نے کہا پارٹی کے فیصلے کی خلاف ورزی نہیں کرسکتا، ہم نے اپنے تحفظات حکومتی وفد کے سامنے رکھ دیے ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم نے ان سے اب تک کوئی براہ راست رابطہ نہیں کیا ۔

    اسد عمر نے کہا بلوچستان کے حقوق کی بات کرنا پاکستان کے حقوق کی کرنا ہے، پی ٹی آئی یقین رکھتی ہے کہ پاکستان کے ہر حصہ کو ترقی اور حقوق نا ملے تو ملک ترقی نہیں کرسکے گا ۔

    یہ خبر بھی پڑھیے: حکومت نے بی این پی مینگل کو منانے کی کوششیں شروع کردیں

    واضح رہے کہ 17 جون کو قومی اسمبلی کے اجلاس میں بجٹ پر بحث کے دوران بلوچستان نیشنل پارٹی (مینگل) کے سربراہ سردار اختر جان مینگل نے تحریک انصاف سے اتحاد ختم کرنے کا اعلان کیا تھا۔انہوں نے بلوچستان کے مسائل پر حکومتی عدم توجہی کو اس فیصلے کا سبب قرار دیا تھا۔ اس کے بعد سے حکومت انہیں منانے کی کوششوں میں مصروف ہے۔

    مولانا فضل الرحمن سے ملاقات

    دوسری جانب جمیعت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے بھی سردار اختر مینگل سے ملاقات کی جس کے بعد صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے سربراہ بی این پی کا کہنا تھا کہ حکومت میں واپسی اب ان کے بس میں نہیں، جماعت کی قیادت کے فیصلے کا پابند ہوں۔ انہوں ںے کہا کہ اگر تحریک انصاف بلوچستان کے مسائل حل کردے تو پورا صوبہ اس جماعت میں شامل ہوجائے گا۔

    مولانا فضل الرحمان نے اس موقعے پر کہا کہ وزیر اعظم کے خلاف تحریک عدم اعتماد لانے کا آپشن زیر غور ہے۔ اٹھارہویں ترمیم سے متعلق حکومتی بیانات تشویش ناک ہیں۔ این ایف سی میں کوئی تبدیلی قبول نہیں کی جائے گی۔ احتساب کو حزب اختلاف کے خلاف ہتھیار کے طور پر استعمال کیا جارہا ہے جب کہ دوسری جانب پی ٹی آئی پارٹی فنڈنگ اور بی آر ٹی کے معاملوں پر پیش رفت نہیں ہورہی۔ انہوں ںے کہا کہ ملکی سیاسی قیادت کے ساتھ رابطے شروع کردیے ہیں۔