• ☚ پی ڈی ایم کا پیپلز پارٹی اور اے این پی کے ساتھ مل کر بجٹ کی مخالفت کا فیصلہ
  • ☚ حکومت نے بجلی 1 روپے 72 پیسے فی یونٹ مہنگی کردی
  • ☚ 9 ماہ کے دوران بیرونی قرضوں میں 7 ارب41 کروڑ 30 لاکھ ڈالر سے زائد کا اضافہ
  • ☚ پاکستان نے پہلے ٹی ٹوئنٹی میں جنوبی افریقا کو شکست دیدی
  • ☚ حکومت نے ملک بھر میں جلسے جلوس پر پابندی عائد کردی
  • ☚ آئی ایم ایف کا بجلی، گیس اور یوٹیلیٹی اسٹورز پر سبسڈیز ختم کرنے کا مطالبہ
  • ☚ وزیراعظم نے گستاخانہ خاکوں کا معاملہ اقوام متحدہ میں اٹھادیا، اسلامو فوبیا کیخلاف یوم منانے کا مطالبہ
  • ☚ پیپلزپارٹی نے زیادتی کیس کے مجرم کو سرعام پھانسی دینے کی مخالفت کردی
  • ☚ وفاقی سرکاری تعلیمی اداروں میں ہفتے کی چھٹی ختم کرنے کا فیصلہ
  • ☚ شمالی وزیرستان؛ سیکیورٹی فورسز پردہشت گردوں کے حملے میں افسر سمیت 3 اہلکارشہید
  • ☚ طبی عملہ بھی ڈیلٹا ویرینٹ کی لپیٹ میں آگیا، سول اسپتال میں سرجریز ملتوی
  • ☚ وفاقی کابینہ کی افواج پاکستان کے لئے 15 فیصد خصوصی الاؤنس کی منظوری
  • ☚ اسلام آباد میں ڈیلٹا وائرس کے کیس رپورٹ، سدِباب کے لیےجینوسیکوینسنگ بڑھانے کاپلان تیار
  • ☚ کورونا کی بھارتی قسم؛ حکومت کا عیدالاضحیٰ سے قبل سخت اقدامات کا فیصلہ
  • ☚ لاہور دھماکے کے ماسٹر مائنڈ کا تعلق بھارت اور را سے ہے، مشیر قومی سلامتی
  • ☚ گیس بحران، مقامی ٹیکسٹائل سیکٹر کا صنعتیں بیرون ملک منتقل کرنے کا فیصلہ
  • ☚ پشاور زلمی کو شکست؛ ملتان پی ایس ایل کا نیا سلطان بن گیا
  • ☚ کابینہ اجلاس ؛ 10 لاکھ ٹن گندم درآمد کرنے کی منظوری
  • ☚ عورت مختصر کپڑے پہنے گی تو مردوں پر اثر تو پڑے گا، وزیراعظم
  • ☚ وزیراعظم کا افغانستان میں فوجی کارروائی کیلئے امریکا کو اڈے دینے سے صاف انکار
  • ☚ کرونا لاک ڈاؤن، بے گھر افراد کی مدد کے لیے اٹلی کے شہریوں کی زبردست کاوش
  • ☚ ایران میں کورونا وائرس سے خاتون رکنِ اسمبلی ہلاک
  • ☚ کورونا وائرس کے متاثرین 1لاکھ 8 ہزار ہوگئے، اٹلی میں 24 گھنٹوں کے دوران 133ہلاکتیں
  • ☚ دبئی کے حکمراں اہلیہ کو دھمکیاں دینے اور بیٹیوں کے اغوا کے مرتکب ہوئے، برطانوی عدالت
  • ☚ ترکی اور روس کا شام میں جنگ بندی پر اتفاق
  • ☚ تیونس میں امریکی سفارت خانے پر خود کش حملہ
  • ☚ کورونا وائرس؛ سعودی شہریوں کے عمرہ ادائیگی پر بھی پابندی
  • ☚ امریکا میں چھوٹا طیارہ مرکزی شاہراہ پر گر کر تباہ، 3 افراد ہلاک
  • ☚ امریکا میں طوفانی بگولوں سے 24 افراد ہلاک
  • ☚ ایران نے کورونا وائرس سے 200 افراد کی ہلاکتوں کو جھوٹ قرار دیدیا
  • ☚ عالیہ بھٹ کی شوٹنگ کے دوران طبیعت خراب، اسپتال منتقل
  • ☚ عالیہ بھٹ کی شوٹنگ کے دوران طبیعت خراب، اسپتال منتقل
  • ☚ حریم شاہ کی لیک ویڈیو نے مفتی قوی کا اصل چہرہ بے نقاب کردیا
  • ☚ "ارطغرل غازی" کے اداکار کا طیارہ حادثے پر اظہار افسوس
  • ☚ کورونا وائرس؛ فنکاروں کی حکومت سے غریب طبقے کا خیال رکھنے کی درخواست
  • ☚ سری لنکا ٹیم حملے میں زخمی ہونے والے احسن رضا کا بطور ٹیسٹ امپائر ڈیبیو
  • ☚ محمد عامر کی قومی ٹیم میں واپسی کیلیے مشروط رضامندی
  • ☚ پی ایس ایل کا چھٹا ایڈیشن تماشائیوں کی موجودگی میں ہونے کا امکان
  • ☚ پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی نے پب جی گیم پر پابندی ختم کردی
  • ☚ روزانہ 22 گھنٹے گیم کھیلنے سے نوجوان کا بازو اور ہاتھ مفلوج
  • آج کا اخبار

    نئے آئی جی پنجاب کی تعیناتی تنازعات کا شکار

    Published: 09-09-2020

    Cinque Terre

    لاہور: پنجاب حکومت نے اپنے تیسرے سال کی ابتدائ میں ہی آئی جی پولیس تبدیل کرنے کی ڈبل ہیٹرک مکمل کرلی ساتھ ہی پنجاب پولیس کی کمانڈ سنبھالنے والے چھٹے آئی جی انعام غنی کی تعیناتی تنازعات کا شکار ہوگئی۔جونیئر افسر کو آئی جی پنجاب تعینات کرکے پنجاب حکومت نے نئی مثال قائم کردی جس کے باعث پنجاب میں انعام غنی سے سینئر ایڈیشنل آئی جیز غیریقینی صورتحال کا شکار ہوگئے جبکہ ایک افسر نے ان کے ماتحت کام کرنے سے انکار کر دیا۔گزشتہ چند دنوں سے سی سی پی او لاہور شیخ محمد عمر اور آئی جی ڈاکٹر شعیب دستگیر کی سرد جنگ کا ڈراپ سین آئی جی کی تبدیلی پر ہوگیا۔ حکومتی ذرائع کے مطابق پنجاب کے چیف سیکریٹری جواد رفیق ملک نے گزشتہ شب ڈاکٹر شعیب دستگیر سے ان کی رہائش گاہ پر ملاقات کی تھی اور انہیں اعلی حکومتی شخصیات کا پیغام دیا جس پر ڈاکٹر شعیب دستگیر نے چیف سیکریٹری پنجاب کو یہ کہہ کر خاموش کر دیا جب میری مرضی سے وسیم سیال کو سی سی سی پی او تعینات نہیں کیا جاسکتا تو پھر مجھے اس پولیس فورس کی کمانڈ کرنے کا کوئی حق نہیں میں سرنڈر کر دو گا جس پر انھوں نے خود اپنی تبدیلی کا کہا۔حکومتی ذرائع کے مطابق چین آف کمانڈ کے حوالے سے ڈاکٹر شعیب دستگیر اور صوبے کی ایک اعلی شخصیت کے درمیان سخت جملوں کا بھی تبادلہ ہوا جس کے بعد شعیب دستگیر کو عہدے سے ہٹانے کا فیصلہ کیا گیا۔ قبل ازیں بھی پی ٹی آئی کی پنجاب حکومت کے دو سال کے دوران ڈاکٹر کلیم امام، محمد طاہر، امجد جاوید سلیمی، کیپٹن (ر) عارف نواز خان بھی حکومت اور پولیس کی مبینہ سرد جنگ کا شکار ہوئے۔پنجاب کے چھٹے آئی جی پولیس انعام غنی کا تعلق مالا کنڈ ایجنسی سے ہے۔ وہ پولیس سروس آف پاکستان گریڈ 21 کے آفیسر ہیں اور گریڈ 21 کی سنیارٹی میں 15 ویں نمبر پر آتے ہیں۔ ان کی ابھی چھ سال سے زائد عرصے کی سروس باقی ہے۔ وہ 27 اپریل 2026ئ کو ریٹائر ہوں گے۔ انعام غنی سے اس وقت صوبے میں تین ایڈیشنل آئی جیز سنیارٹی فہرست میں اوپر ہیں۔ ان میں ایڈیشنل آئی جی پنجاب ہائی وے پٹرول کیپٹن (ر) ظفر اقبال جن کی دو سال کے قریب سروس باقی ہے، وہ آٹھ مارچ 2022ئ کو اپنے عہدے سے ریٹائرڈ ہوجائیں گے۔دوسرے نمبر پر ایڈیشنل آئی جی ویلفیئر اینڈ فنانس ڈاکٹر طارق مسعود یاسین ہیں جن کی سات ماہ سے زائد کی مدت ملازمت باقی ہے وہ یکم اپریل 2021ئ کو ریٹائر ہوں گے۔ سنیارٹی پر موجود تیسرے ایڈیشنل آئی جی ڈسپلن اینڈ انسپکشن اظہر حمید کھوکھر ہیں جن کی بھی سات ماہ سے زائد کی سروس باقی ہے اور وہ 10 اپریل 2020ئ کو ریٹائرڈ ہوں گے۔ایڈیشنل آئی جی ویلفیئر اینڈ فنانس ڈاکٹر طارق مسعود یاسین نے گزشتہ روز ڈی آئی جی ہیڈ کوارٹر کے ذریعے پنجاب حکومت کو ایک خط لکھ دیا ہے جس میں انہوں نے کہا ہے کہ سنیارٹی کے لحاظ سے میں نئے تعینات ہونے والے آئی جی انعام غنی سے سینئر ہوں اس لیے میں ان کے ماتحت کام نہیں کر سکتا مجھے تبدیل کر دیا جائے اگر تبدیلی فوری ممکن نہیں تو مجھے رخصت دیدی جائے۔اس کے برعکس دیگر دو ایڈیشنل آئی جیز نے حکومت کو باضابطہ طو رپر حکومت کو اپنے تحفظات سے تو آگاہ نہیں کیا تاہم انہوں نے بھی نئے تعینات ہونے والے آئی جی کے ماتحت کام کرنے سے انکار کیا ہے۔ پنجاب پولیس کی تاریخ میں پہلی بار ہوا ہے کہ کسی پولیس آفیسر نے حکومت کو خط لکھ کر خود کو تبدیل کرنے کی درخواست کی ہے۔