• ☚ پی ڈی ایم کا پیپلز پارٹی اور اے این پی کے ساتھ مل کر بجٹ کی مخالفت کا فیصلہ
  • ☚ حکومت نے بجلی 1 روپے 72 پیسے فی یونٹ مہنگی کردی
  • ☚ 9 ماہ کے دوران بیرونی قرضوں میں 7 ارب41 کروڑ 30 لاکھ ڈالر سے زائد کا اضافہ
  • ☚ پاکستان نے پہلے ٹی ٹوئنٹی میں جنوبی افریقا کو شکست دیدی
  • ☚ حکومت نے ملک بھر میں جلسے جلوس پر پابندی عائد کردی
  • ☚ آئی ایم ایف کا بجلی، گیس اور یوٹیلیٹی اسٹورز پر سبسڈیز ختم کرنے کا مطالبہ
  • ☚ وزیراعظم نے گستاخانہ خاکوں کا معاملہ اقوام متحدہ میں اٹھادیا، اسلامو فوبیا کیخلاف یوم منانے کا مطالبہ
  • ☚ پیپلزپارٹی نے زیادتی کیس کے مجرم کو سرعام پھانسی دینے کی مخالفت کردی
  • ☚ وفاقی سرکاری تعلیمی اداروں میں ہفتے کی چھٹی ختم کرنے کا فیصلہ
  • ☚ شمالی وزیرستان؛ سیکیورٹی فورسز پردہشت گردوں کے حملے میں افسر سمیت 3 اہلکارشہید
  • ☚ طبی عملہ بھی ڈیلٹا ویرینٹ کی لپیٹ میں آگیا، سول اسپتال میں سرجریز ملتوی
  • ☚ وفاقی کابینہ کی افواج پاکستان کے لئے 15 فیصد خصوصی الاؤنس کی منظوری
  • ☚ اسلام آباد میں ڈیلٹا وائرس کے کیس رپورٹ، سدِباب کے لیےجینوسیکوینسنگ بڑھانے کاپلان تیار
  • ☚ کورونا کی بھارتی قسم؛ حکومت کا عیدالاضحیٰ سے قبل سخت اقدامات کا فیصلہ
  • ☚ لاہور دھماکے کے ماسٹر مائنڈ کا تعلق بھارت اور را سے ہے، مشیر قومی سلامتی
  • ☚ گیس بحران، مقامی ٹیکسٹائل سیکٹر کا صنعتیں بیرون ملک منتقل کرنے کا فیصلہ
  • ☚ پشاور زلمی کو شکست؛ ملتان پی ایس ایل کا نیا سلطان بن گیا
  • ☚ کابینہ اجلاس ؛ 10 لاکھ ٹن گندم درآمد کرنے کی منظوری
  • ☚ عورت مختصر کپڑے پہنے گی تو مردوں پر اثر تو پڑے گا، وزیراعظم
  • ☚ وزیراعظم کا افغانستان میں فوجی کارروائی کیلئے امریکا کو اڈے دینے سے صاف انکار
  • ☚ کرونا لاک ڈاؤن، بے گھر افراد کی مدد کے لیے اٹلی کے شہریوں کی زبردست کاوش
  • ☚ ایران میں کورونا وائرس سے خاتون رکنِ اسمبلی ہلاک
  • ☚ کورونا وائرس کے متاثرین 1لاکھ 8 ہزار ہوگئے، اٹلی میں 24 گھنٹوں کے دوران 133ہلاکتیں
  • ☚ دبئی کے حکمراں اہلیہ کو دھمکیاں دینے اور بیٹیوں کے اغوا کے مرتکب ہوئے، برطانوی عدالت
  • ☚ ترکی اور روس کا شام میں جنگ بندی پر اتفاق
  • ☚ تیونس میں امریکی سفارت خانے پر خود کش حملہ
  • ☚ کورونا وائرس؛ سعودی شہریوں کے عمرہ ادائیگی پر بھی پابندی
  • ☚ امریکا میں چھوٹا طیارہ مرکزی شاہراہ پر گر کر تباہ، 3 افراد ہلاک
  • ☚ امریکا میں طوفانی بگولوں سے 24 افراد ہلاک
  • ☚ ایران نے کورونا وائرس سے 200 افراد کی ہلاکتوں کو جھوٹ قرار دیدیا
  • ☚ عالیہ بھٹ کی شوٹنگ کے دوران طبیعت خراب، اسپتال منتقل
  • ☚ عالیہ بھٹ کی شوٹنگ کے دوران طبیعت خراب، اسپتال منتقل
  • ☚ حریم شاہ کی لیک ویڈیو نے مفتی قوی کا اصل چہرہ بے نقاب کردیا
  • ☚ "ارطغرل غازی" کے اداکار کا طیارہ حادثے پر اظہار افسوس
  • ☚ کورونا وائرس؛ فنکاروں کی حکومت سے غریب طبقے کا خیال رکھنے کی درخواست
  • ☚ سری لنکا ٹیم حملے میں زخمی ہونے والے احسن رضا کا بطور ٹیسٹ امپائر ڈیبیو
  • ☚ محمد عامر کی قومی ٹیم میں واپسی کیلیے مشروط رضامندی
  • ☚ پی ایس ایل کا چھٹا ایڈیشن تماشائیوں کی موجودگی میں ہونے کا امکان
  • ☚ پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی نے پب جی گیم پر پابندی ختم کردی
  • ☚ روزانہ 22 گھنٹے گیم کھیلنے سے نوجوان کا بازو اور ہاتھ مفلوج
  • آج کا اخبار

    اشتہاری ملزم كے پاس سرنڈر کرنے كے سوا كوئی راستہ نہیں، اسلام آباد ہائی کورٹ

    Published: 11-09-2020

    Cinque Terre

      اسلام آباد: اسلام آباد ہائی کورٹ نے نواز شریف کی جانب سے سزا کے خلاف دائر اپیل کی سماعت میں کہا ہے کہ اشتہاری ملزم كے پاس سرنڈر کرنے كے سوا كوئی راستہ نہیں، نواز شریف کو پہلے اشتہاری ملزم قرار دیں گے اس کے بعد اپیلوں کی سماعت ہوگی۔
    جسٹس عامر فاروق اور جسٹس محسن اختر كیانی پر مشتمل بینچ نے نواز شریف كی سزا كے خلاف اپیلوں پر سماعت كی۔ دوران سماعت نیب پراسیكیوٹر جہانزیب بھروانہ، سردار مظفر عباسی، ایڈیشنل اٹارنی جنرل طارق كھوكھر، ڈپٹی اٹارنی جنرل ارشد محمود كیانی، نواز شریف كے وكیل خواجہ حارث، منور اقبال دوگل عدالت كے سامنے پیش ہوئے۔
    جسٹس عامر فاروق نے كہا آج عدالت كے سامنے صرف یہ سوال ہے كہ اشتہاری ہونے كے بعد كیا ہم نواز شریف كی درخواست پر سماعت كر سكتے ہیں؟ ایڈیشنل اٹارنی جنرل طارق كھوكھر نے كہا کہ اشتہاری ملزم كا سرنڈر كرنا ضروری ہے۔ جسٹس محسن اختر كیانی نے ریماركس دیے كیا نواز شریف كسی اسپتال میں داخل ہیں؟ جس ڈاكٹر كا میڈیكل سرٹیفكیٹ جمع كرایا گیا وہ تو خود امریكا میں ہیں جبكہ نواز شریف گزشتہ سات آٹھ ماہ میں سے لندن میں ہیں اور اسپتال میں بھی داخل نہیں ہوئے۔
    خواجہ حارث نے كہا کہ اس متعلق میں پہلے بھی عدالت كو بتا چكا ہوں، ہم چاہتے ہیں كہ نواز شریف كی درخواست اور اپیلیں سنی جائیں۔ جسٹس محسن اختر كیانی نے كہا اس كے لیے ہم پہلے اشتہاری ڈیكلیئر كریں گے اور پھر اپیل سنیں گے۔ خواجہ حارث نے كہا کہ انڈر ٹیكنگ میں واضح لكھا ہے كہ ہائی كمیشن کے نمائندے كے ذریعے صحت كا جائزہ لیا جائے گا۔
    ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے كہا ہم نے معلوم نہیں كیا كیونكہ وہ اسپتال میں داخل نہیں اور علاج ہوا ہی نہیں۔ جسٹس محسن اختر كیانی نے كہا نواز شریف كو موقع دیا تھا كہ وہ سرنڈر كریں، ابھی تک نواز شریف كو حاضری سے استثنی بھی نہیں دیا گیا۔ جسٹس عامر فاروق نے كہا اس نكتے پر عدالت كی معاونت كریں كہ اگر ایک كیس میں كوئی اشتہاری ہوجائے تو كیا دوسرے كیس میں اسے سنا جاسكتا ہے؟ اسی نكتے پر اعلی عدالتوں كے فیصلے بطور حوالہ جات جمع كرا ئیں اور آئندہ سماعت پر دلائل دیں۔
    جسٹس عامر فاروق نے كہا كہ جہاں تک اپیل كی بات ہے اس كے حوالے سے ہم ابھی كچھ نہیں كہہ رہے، نیب پراسیكیوٹر نے كہا توشہ خانہ ریفرنس میں اشتہاری ہونے كے بعد نواز شریف كو كوئی ریلیف نہیں مل سكتا، جسٹس عامرفاروق نے كہا پرویز مشرف كیس میں عدالت قرار دے چكی، مفرور كو سرنڈر سے قبل نہیں سنا جاسكتا۔
    نیب پراسیكیوٹر نے كہا نیب كورٹ نے توشہ خانہ ریفرنس میں نواز شریف كو اشتہاری قرار دیا ہے، احتساب عدالت كے نواز شریف كو اشتہاری قرار دینے كے فیصلے كی كاپی بھی نیب نے پیش كی۔ جسٹس عامرفاروق نے كہا نسیم الرحمان كیس میں سپریم كورٹ بھی مفرور كو ریلیف كے لیے غیر حق دار قرار دے چكی، عدالت نے استفسار كیا كہ فروری كے بعد كیا حكومت نے نواز شریف كی صحت سے متعلق جاننے كی كوشش كی؟
    ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے كہا نہیں ہم نے معلوم نہیں كیا كیونكہ وہ ہسپتال میں داخل ہی نہیں، عدالت نے استفسار كیا كہ نواز شریف كی عدم حاضری پر وفاقی حكومت كا كیا موقف ہے؟
    ایڈیشنل اٹارنی جنرل طارق كھوكھر نے كہا كہ نواز شریف كی میڈیكل رپورٹس نامكمل ہیں، پنجاب حكومت نواز شریف كی ضمانت مسترد كرچكی ہے، خواجہ حارث نے استدعا كی كہ آئندہ ہفتے كے لیے كیس ركھ لیں میں اس حوالے سے اپنی درخواست پر دلائل دوں گا۔
    خواجہ حارث نے كہا انڈر ٹیكنگ میں واضح لكھا ہے كہ ہائی كمیشن كے نمائندے كے ذریعے صحت كا جائزہ لیا جائے گا، جسٹس عامر فاروق نے كہا كہ وفاقی حكومت نے اس متعلق كبھی كوئی كوشش نہیں كی؟ نواز شریف كو مفرور قرار دینے كے حوالے سے ہم قانونی كارروائی آگے بڑھاتے ہیں۔
    جسٹس محسن اختر كیانی نے كہا کہ نواز شریف برطانیہ اور ڈاكٹر امریكا میں ہیں، زبانی علاج كیا گیا، اگر كوئی اسپتال میں داخل ہو تو پھر بات الگ ہوتی ہے، اس كے لیے ہم پہلے مفرور ڈیكلیئر كریں گے اور پھر اپیل سنیں گے۔
    بعد ازاں العزیزیہ ریفرنس مركزی اپیل اور نواز شریف كی استثنیٰ كی درخواست پر سماعت 15 ستمبر تک ملتوی كردی گئی۔
    دریں اثنا اسلام آباد ہائی كورٹ نے نواز شریف كی العزیزیہ ریفرنس اپیل میں آج كی سماعت كا تحریری حكم نامہ جاری كردیا۔ عدالت نے اپنے حكم نامے میں كہا ہے كہ یہ واضح ہے كہ اشتہاری ملزم كے پاس سرنڈر كرنے كے علاوہ كوئی راستہ نہیں۔
    پانچ صفحات پر مشتمل تحریری حكم نامہ جسٹس فاروق اور جسٹس محسن اختر كیانی نے جاری كیا ہے۔ عدالت نے کہا کہ نوازشریف كے وكیل كو گزارشات پیش كرنے كا ایک موقع دے رہے ہیں، نواز شریف كے وكیل اس نکتے پر بالخصوص دلائل دیں كیا نواز شریف كی درخواست سنی جا سكتی ہے؟
    عدالت نے تحریری حكم نامے میں كہا كہ خواجہ حارث نے عدالت كو بتایا كہ نواز شریف ہسپتال میں داخل نہیں، ایڈیشنل اٹارنی جنرل طارق كھوكھر كی جانب سے عدالت كو بتایا گیا کہ وفاقی حكومت نے نواز شریف كی صحت سے متعلق رپورٹ لینے كی كوشش نہیں كی تاہم وفاقی حكومت کے موقف میں انہوں نے بتایا كہ پنجاب حكومت كا ضمانت میں توسیع مسترد كرنے كا فیصلہ كافی ہے۔