• ☚ پیپلزپارٹی نے زیادتی کیس کے مجرم کو سرعام پھانسی دینے کی مخالفت کردی
  • ☚ وفاقی سرکاری تعلیمی اداروں میں ہفتے کی چھٹی ختم کرنے کا فیصلہ
  • ☚ شمالی وزیرستان؛ سیکیورٹی فورسز پردہشت گردوں کے حملے میں افسر سمیت 3 اہلکارشہید
  • ☚ حکومت اسحاق ڈار کو واپس نہ لاسکی نواز شریف کو لانا تو اور مشکل ہے، شیخ رشید
  • ☚ حاجی ناصر محمود کو مسلم لیگ کا ضلعی جنرل سیکرٹری بننے پر مبارکباد
  • ☚ بیوروکریٹس کی جبری ریٹائرمنٹ کے حوالے سے نئی پالیسی تشکیل
  • ☚ عید سے قبل پلازے بند کرنیکی تجویز پر تاجر شدید پریشان
  • ☚ عید الاضحی سر پر آتے ہی ذخیرہ اندوز متحرک‘ عوام کو لوٹنے کی تیاریاں
  • ☚ کورونا پھیلنے کا اندیشہ‘ عید الاضحی سے قبل بازار بند کرنیکی تجویز
  • ☚ صحافی نثار احمد مغل کا شیراز جٹ ‘ شرجیل جٹ سے راضی نامہ ہو گیا
  • ☚ اپوزیشن کی اے پی سی آج ہوگی، حکومت کے خلاف ملک گیر تحریک شروع ہونے کا امکان
  • ☚ سیکنڈری کلاسز شیڈول کے مطابق 23 ستمبر کو ہی کھلیں گی، وفاقی وزیرتعلیم
  • ☚ ریکوڈک کیس میں پاکستان کی بڑی کامیابی، 6 ارب ڈالر جرمانے پر حکم امتناع جاری
  • ☚ دنیا بھر میں کورونا وائرس کے روزانہ کیسز کی تعداد مدنیا بھر میں کورونا وائرس کے روزانہ کیسز کی تعداد میں ریکارڈ اضافہیں ریکارڈ اضافہ
  • ☚ وزیرستان میں سیکیورٹی فورسز کا آپریشن، دہشت گرد کمانڈر 3 ساتھیوں سمیت ہلاک
  • ☚ موٹروے زیادتی کیس؛ ملزمان کی نشاندہی کرنے پر 25لاکھ انعام کا اعلان
  • ☚ موٹر وے واقعہ شرمناک ہے، حکومت ہوش کے ناخن لے، چیف جسٹس
  • ☚ اشتہاری ملزم كے پاس سرنڈر کرنے كے سوا كوئی راستہ نہیں، اسلام آباد ہائی کورٹ
  • ☚ کورکمانڈرز کانفرنس؛ آرمی چیف کی خطے کی صورتحال کے پیش نظرجنگی تیاریاں بڑھانے کی ہدایت
  • ☚ نئے آئی جی پنجاب کی تعیناتی تنازعات کا شکار
  • ☚ کرونا لاک ڈاؤن، بے گھر افراد کی مدد کے لیے اٹلی کے شہریوں کی زبردست کاوش
  • ☚ ایران میں کورونا وائرس سے خاتون رکنِ اسمبلی ہلاک
  • ☚ کورونا وائرس کے متاثرین 1لاکھ 8 ہزار ہوگئے، اٹلی میں 24 گھنٹوں کے دوران 133ہلاکتیں
  • ☚ دبئی کے حکمراں اہلیہ کو دھمکیاں دینے اور بیٹیوں کے اغوا کے مرتکب ہوئے، برطانوی عدالت
  • ☚ ترکی اور روس کا شام میں جنگ بندی پر اتفاق
  • ☚ تیونس میں امریکی سفارت خانے پر خود کش حملہ
  • ☚ کورونا وائرس؛ سعودی شہریوں کے عمرہ ادائیگی پر بھی پابندی
  • ☚ امریکا میں چھوٹا طیارہ مرکزی شاہراہ پر گر کر تباہ، 3 افراد ہلاک
  • ☚ امریکا میں طوفانی بگولوں سے 24 افراد ہلاک
  • ☚ ایران نے کورونا وائرس سے 200 افراد کی ہلاکتوں کو جھوٹ قرار دیدیا
  • ☚ "ارطغرل غازی" کے اداکار کا طیارہ حادثے پر اظہار افسوس
  • ☚ کورونا وائرس؛ فنکاروں کی حکومت سے غریب طبقے کا خیال رکھنے کی درخواست
  • ☚ امریکی اداکارہ دیبی مزار کورونا میں مبتلا
  • ☚ احتیاط کیجیئے کورونا مذاق نہیں بلکہ سنگین وائرس ہے، شوبزفنکار
  • ☚ علی ظفر کی منفرد انداز میں کورونا وائرس سے بچاؤ کی آگاہی مہم، ویڈیو وائرل
  • ☚ پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی نے پب جی گیم پر پابندی ختم کردی
  • ☚ روزانہ 22 گھنٹے گیم کھیلنے سے نوجوان کا بازو اور ہاتھ مفلوج
  • ☚ پی ایس ایل فائیو؛ کس نے کون سا ریکارڈ اپنے نام کیا ؟
  • ☚ پی ایس ایل فائیو کے سیمی فائنلز کل لاہور میں کھیلے جائیں گے
  • ☚ پاکستان اوربنگلا دیش کے درمیان ون ڈے اورٹیسٹ میچ ملتوی
  • آج کا اخبار

    موٹر وے واقعہ شرمناک ہے، حکومت ہوش کے ناخن لے، چیف جسٹس

    Published: 12-09-2020

    Cinque Terre

     لاہور:چیف جسٹس آف پاکستان نے موٹر وے پر خاتون سے زیادتی کو تشویش ناک واقعہ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ واقعہ شرم ناک ہے، حکومت ہوش کے ناخن لے اور محکمہ پولیس میں کسی بھی سیاسی شخص کی مداخلت کا راستہ روکے۔

    وہ پنجاب جوڈیشل اکیڈمی کے زیر اہتمام کمرشل اور اوورسیز کورٹس ججز کے لیے منعقدہ 6 روزہ ٹریننگ ورکشاپ کے اختتامی سیشن سے خطاب کررہے تھے۔

    ملک بھر میں پولیس میں سیاسی مداخلت عام ہوچکی ہے

    چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس گلزار احمد خان نے کہا کہ امن و امان حکومت کی بنیادی ذمہ داری ہے اور اس ضمن میں پولیس کا شفاف نظام وقت کی اہم ضرورت ہے، ملک بھر میں پولیس میں سیاسی مداخلت عام ہوچکی ہے جس کے نتیجے میں عوام کی جان و مال محفوظ نہیں، معصوم مسافروں کو ہائے وے پر سنگین جرائم کا سامنا کرنا پڑتا ہے، حالیہ واقعہ بھی اسی کا نتیجہ ہے۔

    حکومت ہوش کے ناخن لے اور محکمہ پولیس کی ساکھ کو بحال کرے

    چیف جسٹس نے کہا کہ شرمناک ہے کہ ہائے وے پر شہریوں کی حفاظت کا موثر نظام موجود نہیں، حکومت ہوش کے ناخن لے اور محکمہ پولیس کی ساکھ کو بحال کرے۔

    موجودہ پولیس کی کمان غیر پیشہ ورانہ افراد کے ہاتھ میں ہے

    انہوں نے مزید کہا کہ پولیس میں کسی بھی سیاسی شخص کی مداخلت کا راستہ روکے، پنجاب پولیس میں ہونے والے تبادلے اس بات کی علامت ہیں کہ پولیس کے محکمے میں کس قدر سیاسی مداخلت ہے، موجودہ پولیس کی کمان غیر پیشہ ورانہ افراد کے ہاتھ میں ہے۔

    کاروباری معاملات کا عدالتوں میں لٹک جانا مزید مسائل کو جنم دیتا ہے

    چیف جسٹس پاکستان نے کمرشل کورٹس کے حوالے سے بات کرتے ہوئے انہوں ںے کہا کہ کاروباری معاملات کا عدالتوں میں لٹک جانا مزید مسائل کو جنم دیتا ہے، جن ممالک میں بہترین عدالتی نظام موجود ہوتا ہے وہاں سرمایہ کاری بھی زیادہ آتی ہے۔

    کوئی بھی سادہ کمرشل معاملہ زیادہ سے زیادہ 6 ماہ میں حل کردیا جائے

    انہوں نے کہا کہ اگر ہم سرمایہ کاری میں اضافے کے خواہش مند ہیں تو بہترین عدالتی نظام وقت کا اہم تقاضا ہے، کمرشل عدالتوں میں جلد اور معیاری انصاف کی فراہمی کے لیے بہترین کیس مینجمنٹ سسٹم بھی ضروری ہے، ہم چاہتے ہیں کہ کوئی بھی سادہ کمرشل معاملہ زیادہ سے زیادہ 6 ماہ میں حل ہوجائے۔

    پنجاب کے 5 پانچ اضلاع میں کمرشل ماڈل کورٹس قائم کردی ہیں، جسٹس قاسم

    چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ محمد قاسم خان نے کہا کہ چیف جسٹس پاکستان کی رہنمائی میں پہلے مرحلے میں پنجاب کے پانچ اضلاع میں کمرشل ماڈل کورٹس قائم کی گئی ہیں، سرمایہ کاروں اور کاروباری طبقے کو آسان اور معیاری انصاف کی فراہمی سے ہی ملکی ترقی ممکن ہو سکے گی، ہم خوش قسمت ہیں کہ ہم اپنے ملک کی ترقی میں اہم کردار ادا کررہے ہی‍ں۔

    پاکستان جلد دنیا کی بہترین کمرشل کورٹس کی فہرست میں شامل ہو جائے گا، جسٹس جواد حسن

    جسٹس جواد حسن نے کہا کہ پاکستان بین الاقوامی سطح پر کاروباری مقدمات کو نمٹانے میں بہت پیچھے ہے، پاکستانی آئین میں کمرشل کنٹریکٹس کے حوالے سے مکمل قوانین اور تحفظ موجود ہے، پاکستان بہت جلد دنیا کی بہترین کمرشل کورٹس کی فہرست میں شامل ہو جائے گا، پاکستان میں کاروباری معاملات کے لیے بہترین قانون سازی موجود ہے، اوورسیز پاکستانی ہماری معیشت میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتے ہیں اوورسیز پاکستانیوں کے مقدمات کے جلد فیصلوں کے بھی خصوصی عدالتیں قائم کی گئی ہیں جب تک اوورسیز پاکستانیوں کے لیے آسانیاں نہیں ہونگی تو بیرونی سرمایہ کاری کو بڑھایہ نہیں جا سکے گا۔

    کاروباری معاملات میں اے ڈی آر سسٹم خاص اہمیت کا حامل ہے، جسٹس شاہد

    جسٹس شاہد کریم نے کہا کہ کاروباری معاملات میں اے ڈی آر سسٹم خاص اہمیت کا حامل ہوتا ہے، لاہور ہائیکورٹ اس حوالے سے سہولیات فراہم کررہا ہے، شفاف تجارت سے کاروباری حضرات کا اعتماد بڑھتا ہے۔