• ☚ ماضی میں حکومتیں معاشی حب کراچی کو نظرانداز کرتی رہیں، وزیراعظم
  • ☚ اپوزیشن کے تیار ہوتے ہی حکومت کے خلاف تحریک عدم اعتماد لے آئیں گے، بلاول
  • ☚ پی ڈی ایم کا پیپلز پارٹی اور اے این پی کے ساتھ مل کر بجٹ کی مخالفت کا فیصلہ
  • ☚ حکومت نے بجلی 1 روپے 72 پیسے فی یونٹ مہنگی کردی
  • ☚ 9 ماہ کے دوران بیرونی قرضوں میں 7 ارب41 کروڑ 30 لاکھ ڈالر سے زائد کا اضافہ
  • ☚ پاکستان نے پہلے ٹی ٹوئنٹی میں جنوبی افریقا کو شکست دیدی
  • ☚ حکومت نے ملک بھر میں جلسے جلوس پر پابندی عائد کردی
  • ☚ آئی ایم ایف کا بجلی، گیس اور یوٹیلیٹی اسٹورز پر سبسڈیز ختم کرنے کا مطالبہ
  • ☚ وزیراعظم نے گستاخانہ خاکوں کا معاملہ اقوام متحدہ میں اٹھادیا، اسلامو فوبیا کیخلاف یوم منانے کا مطالبہ
  • ☚ پیپلزپارٹی نے زیادتی کیس کے مجرم کو سرعام پھانسی دینے کی مخالفت کردی
  • ☚ سمندر پار پاکستانی ’امپورٹڈ حکومت‘ کے خلاف مظاہرے اور سوشل میڈیا پر مہم چلائیں، عمران خان
  • ☚ پشاور قصہ خوانی بازار کی مسجد میں نماز جمعہ کے دوران خودکش حملہ، 57 افراد شہید
  • ☚ حکومت کا ملک میں بھارت اور بنگلا دیش سے زیادہ مہنگائی کا اعتراف
  • ☚ وزیر خارجہ کا ڈی جی آئی ایس آئی کے ہمراہ کابل کا اہم دورہ
  • ☚ ’’پینڈورا پیپرز‘‘ سامنے آگئے، 700 پاکستانیوں کی آف شور کمپنیاں نکل آئیں
  • ☚ شمالی وزیرستان میں فورسز کی گاڑی پر حملہ، 5 اہل کار شہید
  • ☚ کورونا وبا؛ مزید 33 افراد جاں بحق، ایک ہزار سے زائد مثبت کیسز رپورٹ
  • ☚ افغانستان میں امن کیلیے عالمی برادری کی امداد ضروری ہے، آرمی چیف
  • ☚ طالبان نے افغانستان میں نئی حکومت کی تشکیل کا اعلان کردیا
  • ☚ سید علی گیلانی سری نگر میں سپرد خاک، بھارت نے وادی میں غیر اعلانیہ کرفیو لگادیا
  • ☚ اسلام پسندی سے مغرب کو اب بھی خطرہ موجود ہے، سابق برطانوی وزیراعظم
  • ☚ افغانستان کے نئے وزیراعظم ملا حسن اخوند کی زندگی پر ایک نظر
  • ☚ ایران پر حملے کے پلان پر تیزی سے کام جاری ہے، اسرائیلی آرمی چیف
  • ☚ کرونا لاک ڈاؤن، بے گھر افراد کی مدد کے لیے اٹلی کے شہریوں کی زبردست کاوش
  • ☚ ایران میں کورونا وائرس سے خاتون رکنِ اسمبلی ہلاک
  • ☚ کورونا وائرس کے متاثرین 1لاکھ 8 ہزار ہوگئے، اٹلی میں 24 گھنٹوں کے دوران 133ہلاکتیں
  • ☚ دبئی کے حکمراں اہلیہ کو دھمکیاں دینے اور بیٹیوں کے اغوا کے مرتکب ہوئے، برطانوی عدالت
  • ☚ ترکی اور روس کا شام میں جنگ بندی پر اتفاق
  • ☚ تیونس میں امریکی سفارت خانے پر خود کش حملہ
  • ☚ کورونا وائرس؛ سعودی شہریوں کے عمرہ ادائیگی پر بھی پابندی
  • ☚ عالیہ بھٹ کی شوٹنگ کے دوران طبیعت خراب، اسپتال منتقل
  • ☚ عالیہ بھٹ کی شوٹنگ کے دوران طبیعت خراب، اسپتال منتقل
  • ☚ حریم شاہ کی لیک ویڈیو نے مفتی قوی کا اصل چہرہ بے نقاب کردیا
  • ☚ "ارطغرل غازی" کے اداکار کا طیارہ حادثے پر اظہار افسوس
  • ☚ کورونا وائرس؛ فنکاروں کی حکومت سے غریب طبقے کا خیال رکھنے کی درخواست
  • ☚ سری لنکا ٹیم حملے میں زخمی ہونے والے احسن رضا کا بطور ٹیسٹ امپائر ڈیبیو
  • ☚ محمد عامر کی قومی ٹیم میں واپسی کیلیے مشروط رضامندی
  • ☚ پی ایس ایل کا چھٹا ایڈیشن تماشائیوں کی موجودگی میں ہونے کا امکان
  • ☚ پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی نے پب جی گیم پر پابندی ختم کردی
  • ☚ روزانہ 22 گھنٹے گیم کھیلنے سے نوجوان کا بازو اور ہاتھ مفلوج
  • آج کا اخبار

    پاکستان میرا وطن ہے،تحریر شہزاد اکبر وڑائچ

    Published: 17-02-2018

    Cinque Terre

    کچھ اوورسیز پاکستانی جو خود کئی سالوں تک پاکستان آتے نہیں حتی کہ اپنی جائیدادیں تک بیچ کر یورپ اور امریکہ میں اپنی اولادوں سمیت مستقل طور پر منتقل ہو گئے ہیں،وہ ہمیشہ پاکستان اور اسکےسسٹم کودنیا کا غلط ترین سسٹم قرادیتے ہیں،یہ پاکستانی یورپ اور امریکہ میں کانفرنسز اور پروگرامات کاباقاعدہ انعقاد کرتے ہیں اور وہاں کی مقامی اتھارٹیز کو مدعو کر کے انکے سامنے پاکستان کا انتہائی تاریک اور سیاہ چہرہ پیش کر کے اپنے آپکوانقلابی سمجھتے ہیں۔جوکہ انکی خود فریبی کے سوا کچھ نہیں۔ایسے پاکستانی ترقی یافتہ ملکوں سے سیکھ کر اپنے ملک میں آکر اس سسٹم کو بہتر کرنے اور بہتری کیلیے کوششیں کرنے اور اپنا کوئی مثبت کردار ادا کرنے کی بجائے ہمیشہ پاکستان مخالف پروپیگنڈہ کر کے سستی شہرت اور ذاتی مفادات کیلیے سرگرم رہتے ہیں، پاکستان کے تعلیمی نظام تک کو بنیاد پرستانہ قرار دیتے ہیں اور ایسے کئی الزامات ان کا دن رات کا مشغلہ ہوتے ہیں،الحمدللّٰہ اوورسیز پاکستانی ہونے سے اپنے ملک پاکستان کے مثبت امیج کو اجاگر کرنے کیلیے ایک طرف تو یورپ کے پارلیمینٹرین کو پاکستان کے دوروں کا انعقاد اپنے دوستوں سفیان یونس اور اوگو کلاچو(ابراہیم ) کیساتھ ملکر کیا۔پاکستان میں ہونیوالی دہشت گردی پر اسپین پارلیمنٹ میں مذمتی قرار دیں بھی پاکستان کا دورہ کرنے والے پارلیمنٹیرین نے پیش کی،تاکہ یورپ کے حکومتی ایوانوں میں بھی پاکستان کے مثبت امیج کو ابھارا جا سکے اور دنیا کو بتایا جائے کہ پاکستان دہشت گرد نہیں بلکہ دہشت گردی کا شکار ہے،دہشت گردی کی عالمی جنگ میں پاکستان کے ہزاروں معصوم شہری شہید اور اقتصادی طور پر سب سے زیادہ بڑے پیمانے پر نقصان سے دو چار ہوا ہے۔ دہشت گردی کی عالمی جنگ میں پاکستان وہ واحد ملک ہے جس نے سب سے زیادہ قربانیاں دی ہیں۔میری ان تمام اوورسیز پاکستانیوں سے اپیل ہےکہ وہ ملک جس نے انھیں دنیا بھر میں ایک پہچان دی ہے یہ اپنے ملک پاکستان میں واپس آیا کریں اور ترقی یافتہ ملکوں سے بہتر تجاویز پر عملدرآمد کرکے یہاں کے سسٹم اور ترقی میں اپنا مثبت کردار ادا کریں۔اپنے وطن پاکستان سے اوورسیز پاکستانیوں کی محبت کی ایک مثال ضلع گجرات میں میرے آبائی گاوں خوجیانوالی کی ہے،میرا اور میرے بھائیوں کا شمار بھی اوورسیز پاکستانیوں میں ہوتا ہے اور ہماری ایک مسلسل جدوجہد جو اپنے آبائی گاوں خوجیانوالی میں بہتر تعلیم کے فروغ کیلیے گرلز اور بوائز ہائی اسکولوں کی اپ گریڈیشن ،نئی عمارتوں کی تعمیر،نشے ،لڑائی جھگڑوں کو ختم کرنے اور امن کو قائم کرنے کیلیے بھائی علی شیر کے نام پر ‘بلوشیر پولیس چوکی خوجیانوالی،والد مرحوم کے نام پر زیر تعمیر اکبر میموریل ہلال احمر ہسپتال ،تیرہ ہزار آبادی پر مشتمل گاوں کو صاف پینے کے پانی کی فراہمی واٹر سپلائی پراجیکٹ کی صورت میں ،مسجد عالمیہ کی تعمیر نو،زمینداروں کیلیے گاوں سے انکے ڈیروں پر جانے کیلیے پکے راستوں اور قبرستانوں کی چاردیواری کی تعمیر،بہتر صحت کے حصول کیلیے صفائی کا بندوبست ،انفراسٹرکچر میں بہتری ،اور مزید بہتری کیلیے ایسی کئی ایک جاری کوششیں اوورسیز پاکستانیوں کا اپنے ملک پاکستان سے محبت اور پیار کا منہ بولتا عملی ثبوت ہے